بخار، کھانسی، پٹھوں میں تکلیف ۔۔ چین میں کورونا کے بعد نئے وائرس نے تباہی مچادی، درجنوں افراد متاثر

image

بیجنگ: چین میں کورونا وائرس کے بعد نئی وباء نے تباہی مچادی، درجنوں افراد لانگیا وائرس کی لپیٹ میں آگئے، سائنسدانوں نے مانیٹرنگ شروع کردی۔

سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ یہ وائرس ممکنہ طور پر جانوروں سے انسانوں میں منتقل ہوا ہے، اس وائرس کو لانگیا ہینی پا یا لے وی وائرس کا نام دیا گیا ہے۔ اس وائرس کو سب سے پہلے شانگ ڈونگ اور ہینان میں 2018 میں دریافت کیا گیا تھا مگرسائنسدانوں نے باضابطہ طور اس کی شناخت گزشتہ ہفتے ایک تحقیق میں کی۔

تحقیق میں چین، سنگاپور اور آسٹریلیا کے ماہرین نے حصہ لیا اور یہ بتایا کہ وائرس سے متاثر افراد میں بخار، تھکاوٹ، کھانسی، کھانے کی خواہش ختم ہونا اور مسلز میں تکلیف جیسی علامات سامنے آتی ہیں۔ اس وائرس سے بیمار ہونے والے تمام افراد کو بخار کا سامنا ہوا جو کچھ دن بعد ٹھیک ہوگیا۔

اس وائرس سے کوئی مریض ہلاک نہیں ہوا اور اب تک کوئی بہت زیادہ بیمار بھی نہیں ہوا، تو ابھی تشویش کی ضرورت نہیں۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ ابھی یہ واضح نہیں کہ یہ وائرس ایک سے دوسرے فرد میں منتقل ہوسکتا ہے یا نہیں۔ اب تک اس وائرس کے 35 کیسز کو دریافت کیا گیا ہے جن میں سے بیشتر کاشتکار تھے جبکہ باقی مریض فیکٹری ورکرز تھے۔

لے وی وائرس موجیانگ وائرس سے کافی ملتا جلتا ہے جسے جنوبی چین میں دریافت کیا گیا تھا۔ محققین کا کہنا تھا کہ چونکہ تعداد بہت کم ہے تو ایک سے دوسرے فرد میں بیماری کے پھیلنے کا تعین کرنا آسان نہیں۔


مزید خبریں
عالمی خبریں
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.