bbc-new

نیوزی لینڈ: نیلامی میں خریدے گئے سوٹ کیس سے انسانی لاش کی باقیات برآمد

پولیس نے معاملے کو قتل کی واردات قرار دیتے ہوئے باقیات کی شناخت کا عمل شروع کر دیا ہے اور سوٹ کیس خریدنے والوں کو بے قصور تصور کیا جا رہا ہے۔
پرانے سوٹ کیس
Getty Images
پرانے سوٹ کیسوں کی فائل فوٹو

نیوزی لینڈ کی پولیس سوٹ کیس سے انسانی باقیات برآمد ہونے کی تفتیش کر رہی ہے۔ یہ سوٹ کیس ایک فیملی نے ایک سٹوریج کمپنی سے نیلام میں خریدا تھا۔

یہ خاندان جنوبی آکلینڈ میں رہتا ہے اور اس پر یہ ہولناک انکشاف اس وقت ہوا جب اس نے نیلامی میں خریدا گیا سوٹ گھر لا کر کھولا۔

پولیس نے معاملے کو قتل کی واردات قرار دیتے ہوئے باقیات کی شناخت کا عمل شروع کر دیا ہے۔

مذکورہ خاندان کے بارے میں خیال ہے کہ اس کا اس واردات سے کوئی تعلق نہیں ہے۔

خیال ہے کہ اس خاندان نے جمعرات کو ایک مقامی سٹوریج کمپنی سے ٹریلر بھر کر سامان خریدا تھا جس میں یہ سوٹ کیس بھی شامل تھا۔

تفتیشی افسر انسپکٹر ٹوفیلا فامینویا وائلوا کا کہنا ہے کہ سوٹ کیس کے اندر انسانی باقیات کی موجودگی کا انکشاف اس وقت ہوا جب وہ خاندان تمام اشیا گھر لایا۔

مقامی اخبار سٹف کے مطابق پولیس کے پہنچنے سے پہلے کئی پڑوسیوں نے بھی اس گھر سے ’بدبو‘ آنے کی شکایت کی تھی۔

کریمیٹوریم (شمشان) میں کام کرنے والے ایک پڑوسی کا کہنا تھا کہ وہاں سے اٹھنے والی بو کو پہچاننا مشکل نہیں تھا۔

انھوں نے کہا، ’مجھے فوراً پتا چل گیا اور سمجھ گیا کہ یہ کہاں سے آ رہی ہے۔‘

ایک دوسرے پڑوسی نے بتایا کہ ان کے بیٹے نے ایک سوٹ کیس دیکھا جسے ٹریلر سے اتار کر پولیس کے خیمے میں لے جایا جا رہا تھے، جو وہاں پر پولیس نے تفتیش کے لیے لگایا تھا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ اس کی ترجیح ’متوفی کی شناخت ہے، تاکہ ہم سارے معاملے سے متعلق حقائق و شواہد کا تعین کر سکیں۔‘

پولیس کا مزید کہنا تھا کہ ’اس انکشاف کے حالات‘ کو مد نظر رکھتے ہوئے کہا جا سکتا ہے کہ یہ باقیات جس شخص کی بھی ہیں اس کے لواحقین کو مطلع کرنے میں وقت لگے گا۔


News Source   News Source Text

BBC
مزید خبریں
تازہ ترین خبریں
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.