سسرال والے نہیں چاہتے تھے کہ بہو فلموں میں کام کرے۔۔ کاجول کی ماں کے بیٹی کے سسرال سے متعلق انکشافات

image

1990 میں منظر عام پر آتے ہی چھا جانے والی بالی وڈ اداکارہ کاجول کا جادو آج بھی سر چڑھ کر بولتا ہے۔ کاجول نے اپنے کیریئر کے عروج پر ہی اداکار اجے دیوگن سے شادی کر کے سب کو چونکا دیا تھا کیوں کہ اس زمانے میں شادی کو اداکاراؤں کے کیرئیر کا اختتام سمجھا جاتا تھا۔ کاجول نے شادی کے بعد فلموں میں اداکاری تو کی لیکن حال ہی میں مشہور فلم ساز سنیل درشن کے انکشاف سے ظاہر ہوتا ہے کہ کاجول کے لئے اداکاری کا سفر جاری کرنا کچھ اتنا آسان بھی نہیں تھا۔

“کاجول کے ہونے والے سسرالی یعنی اجے دیوگن کے گھر والے نہیں چاہتے تھے کہ ان کی بہو فلموں میں اداکاری کرے۔ یہ بات مجھ سے کاجول کی والدہ تنوجا نے خود کہی۔ کاجول میری فلم میں کام کرنے والی تھیں لیکن پھر مجھے کاجول کی جگہ شلپا شیٹھی کو فلم میں لینا پڑا“

کاجول کی والدہ نے کہا کہ میری بیٹی کو فلم سے نکال دو

سنیل درشن نے اس حوالے سے بات کرتے ہوئے مزید بتایا کہ ماضی کی اداکارہ اور کاجول کی والدہ تنوجا نے سنیل درشن کو اپنے گھر بلایا اور کہا کہ “تم جانتے ہو کاجول کی شادی ہونے والی ہے اور اجے کے گھر والے نہیں چاہتے کہ ان کے گھر کی بہو اداکاری کرے اس لئے تم کاجول کو فلم سے نکال دو۔ جس پر میں نے انھیں تسلی دی اور کہا کہ میں ان کے فیصلے کی عزت کرتا ہوں“

کاجول اور ساس کے تعلقات

واضح رہے کہ کاجول اور اجے کی شادی 24 فروری 1999 میں ممبئی میں ہوئی۔ کاجول کا تعلق مہاراشٹر اور بنگال سے ہے جبکہ اجے کا تعلق پنجاب سے ہے۔ اجے کی والدہ وینا دیوگن بھی فلم پروڈیوسر ہیں اور اپنی بہو کاجول سے ان کے مثالی تعلقات ہیں۔


مزید خبریں
آرٹ اور انٹرٹینمنٹ
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.