مسلمانوں ...کیا تم اب بھی نہیں اٹھو گے ؟

(MUHAMMAD HASNAIN KHAN, )

سرزمین انبیاء بيت المقدس ، مسجد اقصیٰ مسلمانوں کا قبلہ اول اور تیسرا حرم پاک جس کی طرف رخ کرکے ہمارے پیارے نبی صلي الله عليه وسلم نے 14.5 سال نماز پڑھی اور جہاں امام الانبیاء نبی آخر الزمان صلّي الله عليه وسلم نے ایک لاکھ چوبیس ہزار انبیاء کی امامت ف
جس سر زمین پاک پر سرکار دو عالم صلي ال وسلم نے سجدہ مبارک فرمایا اور حضور سرکار کائنات صلي الله عليه وسلم اللہتعالیٰ سے شرف ملاقات کےلئے میراج پر تشریف لے گئے
جو دنیا بھر کے مسلمانوں کے ایمان کا حصّہ ہے اور جو سرزمین ھزاروں سال سے مسلمانوں اور عربوں کی سرزمین ہے وہاں امریکا نے طاقت کے ذريعے بالجبر یہودیوں کی ناجائز "اسرائیلى" ریاست قائم کردی
لیکن دنیا بھر کے مسلمانوں اور باضمیر انسانوں نے اس ناپاک وجود کو کسی صورت قبول نہیں کیا . امریکیوں نے اپنی طاقت کے نشے میں چور ہوکر بیت المقدس کو اسرائیلى درالحکومت کا درجہ دیتے ہوۓ امریکی سفارتخانہ منتقل کرنے کا شیطانی علان تو کردیا لیکن امریکا کو اس بات کا علم نہیں ہے کے دین اسلام در حقیقت تو پیار اور محبت والا دین ہے لیکن اگر بات آجاۓ اسکے دفع کرنے کی تو مسلمانوں سے زیادہ ٹھوس لشکر کسی اور کا نہیں ہوتا جو کہ اپنی جان کا نذرانہ پیش کرنے سے کبھی نہیں گھبراتے جس کی مثالیں تاریخ کا حصّہ ہیں.
امریکا کی اس دہشتگردی کو پوری امّت مسلمہ سمیت دوسرے مذاہب نے بھی اس عمل کی شدید مذمت کرتے ہوئے غصّے کا اظہار کیا اور برطانیہ، فرانس ، جرمنی سمیت تمام یورپی ممالک نے یکسر مسترد کردیا ہے ساری دنیا امریکا کے اس گھناؤنے فیصلے کے خلاف سراپا احتجاج بن گئے ہیں .
مسلمانو ! یہودیت کے علم برداروں نے خدا اور اسکے آخری رسول صلي الله عليه وسلم اور تمہاری غیرت ایمانی کو چیلنج کرتے ہوئے بیت المقدس پر حملہ کردیا ہے .
مسلمانو ! کیا تم اب بھی نہیں اٹھو گے ؟

Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: MUHAMMAD HASNAIN KHAN

Read More Articles by MUHAMMAD HASNAIN KHAN: 5 Articles with 2099 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
23 Dec, 2017 Views: 578

Comments

آپ کی رائے

مزہبی کالم نگاری میں لکھنے اور تبصرہ کرنے والے احباب سے گزارش ہے کہ دوسرے مسالک کا احترام کرتے ہوئے تنقیدی الفاظ اور تبصروں سے گریز فرمائیں - شکریہ