عادل کس کا نوکر تھا ؟

(ن سے نعمان صدیقی, Karachi)

عادل پر تنقید جاری تھی کہ وہ غلط فیصلے کر رہا ہے مجھے اس پر ترس آرہا تھا کہ وہ بیچارہ ملازم آدمی ہے اُسے تو جو حکم مل رہا ہے وہ بجا لا رہا ہے اب یہ اور بات ہے کہ اس نے ضمیر کی بادشاہت کو چھوڑ کر کسی کی ملازمت کو ترجیہ دی یہ معلوم نہیں ہو سکا تھا کہ وہ کس کی نوکری کر رہا تھا مگر اتنا کہا جا سکتا تھا کہ وفا دار تھا جس کا بھی تھا مگر عوام سے وفاداری نہ کر سکا اُس کا قصور بھی شائد نہ ہو کیونکہ کوی شہابِ ثاقب اس کا پیچھا کرتے کرتے اُس کا مالک بن بیٹھا تھا اور وہ اپنے مالک پر نثار ہو رہا تھا وہ ایک اعلی اور شان و شوکت والی نوکری تھی اور اختیارات لا محدود مگر فیصلہ کا اختیار کہیں اور تھا
میں خیال ہوں کسی اور کا
مجھے سوچتا کوئی اور ہے-

ن سے نا معلوم

 

Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: ن سے نعمان صدیقی

Read More Articles by ن سے نعمان صدیقی: 28 Articles with 11356 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
05 Mar, 2018 Views: 290

Comments

آپ کی رائے