ریحام خان کی کتاب اور ایک نیا محاذ

(Ma Tabassum, )

تحریر : مہک سہیل،کراچی
ریحام خان کی مجوزہ آپ بیتی نے مین اسٹریم اور سوشل میڈیا پر تہلکہ مچا دیا ہے، کہا جا رہا ہے کہ یہ کتاب پی ٹی آئی کے قائد عمران خان اور ریحام خان کی شادی کے گرد گھومتی ہے، جو15 ماہ میں ہی طلاق پر ختم ہوئی تھی، ان کی کتاب کا مسودہ آن لائن لیک ہوا تھا جس سے پی ٹی آئی کے بہت سے رہنماؤں کوغصہ آیا اور انہوں نے ٹوئٹر پر انہیں مجوزہ عام انتخابا ت کے ایجنڈے کا حصہ قرار دیا۔ اداکار حمزہ علی عباسی نے ریحام خان کی کتاب میں لکھے گئے ممکنہ مواد کے حوالے سے کئی دعوے کئے جس کے بعد سوشل میڈیا پر ہر کوئی اس بحث میں حصہ لے رہا ہے اور مختلف دعوے و انکشافات سامنے آ رہے ہیں. ریحام خان نے آئندہ ہفتے لندن میں اپنی کتاب لانچ کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے. ایک طرف یہ بھی الزام عائد کیاجارہاہے کہ عمران خان سے طلاق کے بعد ریحام خان نے مبینہ طورپر امیرمقام اور شہبازشریف کے ذریعے مسلم لیگ ن سے رابطے استوار کرلیے ہیں اور تب سے ہی وہ مسلم لیگ ن کے ہاتھوں میں کھیل رہی ہیں، جیسے ہی الیکشن کمیشن نے عام انتخابات کی تاریخ کا اعلان کیاتو ریحام خان نے بھی اپنی کتاب لانے کا اعلان کردیا انگریزی جریدے’مارننگ میل‘ کے مطابق ریحام خان نے اپنی کتاب میں سابق شوہر عمران خان اور ڈاکٹراعجاز خان پر کئی الزامات عائد کیے جبکہ مصنفہ کو بھی میاں بیوی کے درمیان قابل اعتماد تعلقات کو عزت نہ دینے پر تنقید کی جارہی ہے جبکہ ایک پاکستانی تارک وطن نے لندن کی ایک عدالت میں ریحام کی کتاب کے مواد کیخلاف پٹیشن بھی دائرکردی. پی ٹی آئی کی جانب سے میڈیا کو ایک خط جاری کیا گیا جس میں کہا گیا ہے کہ ریحام خان کے سابق شوہر اعجاز رحمان، سابق کرکٹر وسیم اکرم، برٹش پاکستانی تاجر زلفی بخاری اور پی ٹی آئی سے تعلق رکھنے والی برٹش پاکستانی خاتون انیلہ خواجہ نے دعویٰ کیا ہے کہ ریحام خان نے اپنی آنے والی کتاب میں ان کا ذکر توہین آمیز طریقے سے کیا ہے، مغربی لندن کی ایک لا فرم نے، جو ان افراد کی پیروی کررہی ہے، دعویٰ کیا ہے کہ ریحام خان کی کتاب کے مسودے میں ان کے موکلین کے خلاف انتہائی کینہ پرور، جھوٹے، غلط، انتہائی گمراہ کن، سنگ دلانہ، بے قاعدہ، مجرمانہ، متعصبانہ، ضرر رساں، توہینآمیز، ذلت آمیز اور بہتان تراشی پرمبنی الزامات عائد کئے گئے ہیں۔ کی عدالت نے پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کی سابقہ اہلیہ اور اینکر پرسن ریحام خان کی تحریر کردہ کتاب کی رونمائی کے خلاف دائر درخواست پر حکم امتناع جاری کردیا۔ملتان کے سول جج نے دائر درخواست پر ریحام خان، حسین حقانی اور پاکستان الیکٹرنک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹ پیمرا سے 9 جون کو جواب طلب کرلیا درخواست گزار غلام مصطفیٰ نے عدالت سے استدعا کی تھی کہ کتاب کی اشاعت مبینہ طور پر حقائق کے خلاف ہے۔ان کا کہنا تھا کہ پی ٹی آئی چیئرمین کی شخصیت کو تباہ کرنے کے لیے کتاب پبلش کی گئی درخواست گزار نے دعویٰ کیا کہ عمران خان کے کردار پر کیچڑ اچھال کر ان کا سیاسی کیریر برباد کرنے کی کوشش کی گئی ہے. ریحام خان کی کتاب تیار ہے‘ یہ انگریزی اور اردو دونوں زبانوں میں آئے گی‘ کیا اس نے اس کتاب میں عمران خان کے بلیک بیری کے پیغامات‘ تصویریں‘ فوٹیج اور ای میلز بھی شامل کی ہیں.کتاب اور لانچنگ کے اخراجات بھارت کا ایک برطانوی بزنس مین سنجے کیتھوریا برداشت کر رہا ہے۔ریحام خان کے مطابق ان کی پہلی شادی کی ناکامی کے ذمہ داراعجاز رحمان ہیں۔ ریحام خان نے کتاب میں انیلہ خواجہ پر عمران خان کیساتھ تعلقات کاالزام لگاتے ہوئے انہیں چیف آف حرم قراردیا۔اپنی کتاب میں ریحام خان نے عمران خان کے لندن میں قریبی دوست زلفی بخاری پر خاتون کا اسقاط حمل کرانے کا بھی الزام لگایا ہے کتاب کے دو صفحات پر سابق کپتان وسیم اکرم کی مرحوم اہلیہ پربھی سنگین الزامات لگائے گئے۔چاروں افراد نے ریحام خان کو قانونی نوٹس بھجوا کر چودہ جون تک جواب طلب کرلیا ہے. حمزہ علی عباسی نے دعویٰ کیا ہے کہ وہ کتاب پڑھ چکے ہے اور حمزہ نے ایک ٹوئٹ میں لکھا ہے کہ میں نے ریحام خان کی کتاب پڑھی ہے،جس کا خلاصہ یہ ہے کہ عمران خان زمین پر شیطان نما شخص ہے جبکہ ریحام خان تہجد گزار خاتون ہیں اور شہبازشریف بہترین شخص ہیں، میاں نواز شریف کو جنرل اسد درانی کی کتاب کے بعد ریحام خان کی کتاب کا ٹھیک ٹھاک سیاسی فائدہ ہو گا تاہم یہ حقیقت ہے یہ کتاب نواز شریف اور شہباز شریف نے نہیں لکھوائی یہ ریحام خان کا اپنااینی شیٹو ہے-

Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: Ma Tabassum

Read More Articles by Ma Tabassum: 6 Articles with 1723 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
06 Jun, 2018 Views: 324

Comments

آپ کی رائے