سو لفظوں کی کہانی “کٹا“

(Dilpazir Ahmed, Rawalpindi)

ایک مراثی کے بیٹے نے آخر کار بابا جی سے جن قابو کرنے کا علم سیکھ کر ایک جن قابو کر ہی لیا۔ جن کو جو کام بتایا جاتا وہ لمحوں میں مکمل کر کے اں حاضر ہوتا اور کہتا " ہور حکم " بے چارے نےتنگ آ کر بابا جی کی مدد چاہی ، بابا جی نے پوچھا تمھارے گھر میں "مج " ہے کہنے لگا مج تو نہیں ہے کٹا ہے۔ بابا جی نے کہا ہرروز صبح کٹا کھول کر بھگا دیا کرو اور اسے پکڑنے پر لگا دیا کرو تمھارا دن اچھا گزر جائے گا .
 

Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: Dilpazir Ahmed

Read More Articles by Dilpazir Ahmed: 104 Articles with 55011 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
11 Oct, 2018 Views: 234

Comments

آپ کی رائے