بھارت میں عالمی سطح پر میڈیکل سیاحت کی سہولیات

(Falahuddin Falahi, India)

پیشکش۔گیان بھدر
تین دہائی قبل، معروف قلبسرجن اور گڑگاؤں میں واقع میدانتا-میڈی سیٹی ہسپتال کے صدر اور انتظامی ڈائریکٹر ڈاکٹر نریش تریہن نے امریکہ میں موجودسین ڈیگو شہر میں منعقد کارڈیالوجی کانفرنس میں اپنے خطاب میں کہا تھا: ’’آنے والے سالوں میں، جدید طبی تراکیب اور علاج سے متعلقہ اخراجات میں سرمایا کاری کے باعث کم لاگت خرچ کی وجہ سے مغرب اور دیگر ممالک کے لوگ اپنا علاج کرانے بھارت آئیں گے۔‘‘

موجودہ تناظر میں، ڈاکٹر تریہن کی مندرجہ بالا بیان حقائق پر مبنی ہے۔ دوسرے لفظوں میں، یہ کہا جا سکتا ہے کہ طبی سیاحت کے بارے میں ان کی پیشن گوئی سچ ثابت ہوئی ہے۔

دراصل، طبی سیاحت کا مطلب ہے: ایک شخص اپنے ملک سے باہر جاتا ہے اور دوسرے ملک میں واقع جدید طبی سہولیات سے لیس ہسپتال میں علاج کراتا ہے۔اور اس کے ملک کے ہسپتالوں کے مقابلے میں، دوسرے ملک کے ہسپتال میں علاج سے متعلق اخراجات بہت کمپڑتا ہے۔اس عمل کو میڈیکل ٹورزم کے ذریعہمتعارف کیا جاتا ہے۔

میدانتا ۔میڈی سیٹی ہسپتال میں، جو دنیا میں پانچ اہم ہسپتالوں میں شمار ہوتا ہے، دنیا کے مختلف ممالک کے لوگوں کو ان کا علاج ملتا ہے۔

اہم ممالک یہ ہیں: عراق، بحرین، اومان، زیادہ ترافریقی ممالک؛ نائجیریا، گھانا، روانڈا، یوگنڈا، کینیا، کانگو، سوڈان،کامن ویلتھ آف انڈیپنڈینٹ امریکہ یعنی کہ آزاد ممالک کا راشٹریہ دل (سوویت یونین کے بکھراؤ کے بعد) ممالک میں اہم ہیں: ازبکستان،تاجکستان،کرگزستان، ترکمانستان اور روس۔ اور بنگلہ دیشی، میانمار، نیپال، افغانستان جیسے سارک ممالک جیسے بین الاقوامی مریض ہندوستان آتے ہیں۔

ڈاکٹر تریہن کا کہنا ہے کہ ’’یہ عام طور پر دیکھا گیا ہے کہ مندرجہ بالا ممالک میں دل کی بیماری سے متاثرہ افراد کی تعداد انتہائی زیادہ ہے‘‘۔ ڈاکٹر تریہن آگے بتاتے ہیں کہ مختلف قسم کے دل-بیماریوں اور دل-ٹرانسپلانٹ کی بیماری والے لوگوں کا یہاں علاج کیا جاتا ہے۔‘‘اس کے علاوہ ہڈی-بون میرو (استھمجا) ٹرانسپلانٹ، جگر کے ٹرانسپلانٹ، کولہوں اور گھٹنوں کی تبدیلی، تمام قسم کے ٹیومربیماریوں کے لئے سرجیکل سہولیات، کینسر کی بیماریوں کے لئے تازہ ترین سرجیکل سہولیات، تازہ ترین کیموتھریپی سہولیات، عالمی تابکاری سینٹر سے منسلک تمام طبی سہولیات بین الاقوامی مریضوں کو فراہم کی جاتی ہیں۔
ڈاکٹر تریہن کا کہنا ہے اب یہ ضروری ہے کہ دوسرے ممالک کے لوگوں کو دوسرے ممالک میں کیسے ہسپتال سے رابطہ کیا جائے۔

اس تناظر میں ہسپتال کے انٹرنیشنل پیشنٹ سروس ڈپارٹمنٹ میں سینئر نائب صدر کے طور پر کام کر رہے نونیت ملہوترا کہتے ہیں کہ: سب سے پہلے آپ کی بیماری کا علاج کرانے کے لیے مائل شخصیت ہسپتال کی ویب سائٹ کی سرفنگ کرتا ہے۔پھر وہ اپنی ویب سائٹ پر علاج سے متعلقہ رپورٹ آن لائن بھیجتا ہے۔ہمارے ہسپتال کی طبی ٹیم اس شخص کو مشورہ دیتے ہیں کہ وہ اس رپورٹ کو مطالعہ کرکے ہندوستان کا دورہ کریں۔

اس تناظر میں، ڈاکٹرز نے کہا کہ مذکورہ شخص کے لئے ممکنہ ’’علاج منصوبہ‘‘تیار ہکی جاتی ہے۔اس کے بعد مذکورہ شخص کے ذریعے ہسپتال کے حکام سے ’’ویزا دعوت نامہ‘‘کا مطالبہ کیا جاتا ہے۔ ویزا دعوت نامہ خط مریض کے خاندان اور اس ملک میں واقع ہندوستانی سفارتخانے کے حکام کے ساتھ شریک کیا جاتا ہے۔

ویزا دعوت نامہ کی بنیاد پر، بھارتی سفارت خانے نے مذکورہ شخص کو طبی ویزا جاری کرتا ہے۔طبی ویزا حاصل کرنے کے بعد،مذکورہ شخص نے اپنے سفر سے متعلقہ منصوبوں کے ساتھ ہسپتال کو اطلاع کراتا ہے۔
اس کے مطابق، ہسپتال کے افسران مذکورہ شخص کو، ہسپتال میں قیام کے دوران، رہائش، کھانا، زبان-(لینگویج انٹرپریٹر)، ایمرجنسی سروس، ایئر-ایمبولینسوں سروس، ہوائی اڈے آنے جانے کے لئے گاڑی-سہولت مہیا کراتے ہیں۔

ملہوترانے مزید کہا کہ اس ہسپتال میں25.000 سے 30,000تک کی تعداد میں بین الاقوامی مریض اپنا علاج کرانے آتے ہیں۔

بھارت میں عالمی درجے طبی ٹورزم کی خصوصیات کے نتیجے ملک کے غیر ملکی-کرنسی ریزرو دکانوں میں کافی اضافہ ہوا ہے۔ایک اعداد و شمار کے مطابق، ملک میں طبی سیاحت کے مسلسل ترقی کے نتیجے میں، طبی سیاحت سے پیدا آمدنی 2020 تک 8 بلین ڈالر ہوجائے گی۔اس حقیقت کے مد نظر ، ہندوستانی حکومت نے کم از کم میڈیکل ویز سے متعلقہ قوانین کی پیچیدگیوں کو آسان بنا دیا ہے۔ یہ دیکھا گیا ہے کہ 2014 میں طبی ویزا کے ذریعے بھارت آنے والی تعداد 66254 تھی۔ جس میں 2015 میں 122،121 تک اضافہ ہوا اور 2016 میں یہ تعداد 177،972 تھی۔

اس حقیقت میں دو رائے نہیں ہیکہ طبی ویزا کو ترجیح دینے کی ضرورت ہے۔اور ساتھ ہی، طبی ویزا کے ذریعے سفر کرنے والے افراد کے لئے ایئر پورٹ پر زیادہ تعداد میں کاؤنٹر کی سہولت ہو تاکہ ان لوگوں کی سفر سے متعلق رسم جلد مکمل کی جا سکیں۔

خط و کتابت کا پتہ
گھیان بھدر
مکان نمبر57،دوسری منزل
گرودوارہ کے پیچھے
منیرکا،نئی دہلی۔1100-067
موبائل نمبر:09871208435

Rate it:
Share Comments Post Comments
Total Views: 226 Print Article Print
About the Author: Falahuddin Falahi

Read More Articles by Falahuddin Falahi: 135 Articles with 51704 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language: