زرخیز مٹی۔۔۔۔

(Muhammad Anwaar, )

کسی بیٹی کے کھلونے خواب بن کر آنکھوں میں مر رہے ہیں
کسی ماں کے بالوں کی سفیدی ، آنسووں سے تر ہے
کوئی باپ بند کمرے میں تنہائی کا سہارا لیے سسکتا ہے
کسی بہن کی رخصتی ،،،، بھائی کے بنا ہی
وہ بھائی جومٹی کی خاطر ، مٹی کی گود میں جا سویا
جسکا ہر رشتہ ، ہر محبت ۔۔۔وطن کی محبت سے کم تر ہے
اسی رشتے میں پروئے ، ،،،لاکھوں شہید کو سلام
یاد رکھنا
مٹی صرف وہ زرخیر ہوتی جوشہیدوں کے لہو سے ”لال” ہوتی ہے

 

Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: muhammad anwaar

Read More Articles by muhammad anwaar: 19 Articles with 5334 views »
H m anwaar, more than 15 years experience of TV journalism. Reporting,scripting, copy editing, idea generation, packaging, assignment, worked with Tel.. View More
11 Sep, 2019 Views: 255

Comments

آپ کی رائے