زوار دار تھپڑ

(Maria, Rawalpindi)
جب کوئ آپ کو آپ کی اوقات میں رکھے تو آپ کو بھی خدا ایسا وقت ضرور نوازتا ہے کہ آپ بھی اس کو یاد دلاے کہ اب اس کی اوقات کیا ہے۔۔۔

کومل کی آج دعا ئے خیر تھی کومل کی شرط تھی کہ لڑکے کے گھر والوں کہ علاوہ کوئی شریک نہیں ہو گا۔اور یہی شرط کومل نے اپنی طرف بھی رکھی۔سب لوگ پہنچ گئے ۔
کومل تم ابھی تک تیار نہیں ھوئی ۔۔ کومل کی ہو نے والی ساس نے بہت حیرت سے کہا ۔
آنٹی میں ایسے ہی ٹھیک ہوں بس آپ چلیں میں آتی ہوں۔
کمرے میں سب خو ش گپیوں میں مصروف تھے۔ عمران، کومل کے سامنے والے صوفے پربیٹھا ہوا تھا ۔
کومل کی ساسں نے اّٹھ کر انگوٹھی پہنانی چاہی تب کومل بولی ۔۔۔ آنٹی ایک منٹ مجھے آپ کے بیٹے سے کچھ کہنا ہے
ہاں بیٹا بولو۔۔۔
عمران میں سننا چاہتی ہوں کہ آپ مجھ سے محبت کرتے ہیں ۔۔سب کے سامنے۔۔
کومل یہ وقت ہے ان باتوں کا؟؟؟
یہی وقت ہے ۔۔ آپ بتا ئیں۔
سناٹا چھا گیا۔۔۔
عمران کی ماں حیرت سے عمران کی طرف دیکھتے ہوۓ ۔۔۔
عمران کےبھائی نے اس کی طرف اشارہ کیا ۔۔
تب عمران کومل کے پاس جا کر بولا ۔۔۔ میں تم سے بہت محبت کرتا ہوں ۔۔۔۔۔
ایک زور دار تھپٹر کی آواز ۔۔۔ جو کومل نے عمران کو رسید کیا۔۔۔
This is the ans to that love whom you cheated me in student life…..
جاؤ یہاں سے ۔۔۔۔۔۔۔اور آئندہ اپنی شکل میرے سامنے مت لانا ۔۔۔نفرت ہے مجھے تم سے ۔۔
بہیوش ہوتی کومل کو اس کی بہن نے سنبھالا ۔۔۔ عمران شرمندہ اور حیران ہوتے کمرے سے باہر جانے لگتا ہے کہ عمران کی ماں بولی
یہ تماشا تم نے ہمارا بنوایا تمھاری رنگ رلیوں کا یہ انجام ہو نا تھا تو ہمیں یہاں لاۓ ہی کیوں؟؟
عمران بغیر کچھ کہے کمرے سے باہر چلا گیا۔
 

Rate it:
Share Comments Post Comments
Total Views: 196 Print Article Print
About the Author: Maria
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language: