درد زندگی ۔۔۔۔۔پہلی قسط

(ایمن شاہ بنگش, Islamabad)

حیا اٹھو صبح ہوگی ہے تمہیں اسکول بھی تو جانا ہے۔۔۔ حیا بہت پر سکون نیند سو رہی تھی ۔۔پری آپی نے کھڑکی سے پردہ ہٹایا ۔ سورج کی کرنیں حیا کے چہرے پر پڑھنے لگی ۔۔۔

کیا ہے آپی سونے دیں نہ تھوڑی دیر ۔۔۔حیا نے کمبل اوڑھ لیا ۔۔۔تا کہ سورج کی روشنی سے اس کی نیند خراب نہ ہو ۔۔حیا کو سب سے زیادہ نیند پیاری تھی ۔۔۔

دیکھو بابا تمہارا ویٹ کر رہے ہیں ۔۔۔اٹھو شاباش اور سب کے ساتھ آکر ناشتہ کرو تمہیں پتہ ہے نہ بابا ہمارے بغیر ناشتہ نہیں کرتے ۔۔۔
پری آپی نے کمبل کھینچ لیا ۔۔۔

بابا آ گئے ہے واپس ۔۔۔۔حیا یکدم اٹھی۔۔۔۔

۔پری ہاں جی۔۔۔۔بابا آگئے ہیں ۔۔۔۔۔۔اور میڈم آپ بھی آجائیں ۔۔۔ ورنہ بابا ناراض ہوجائیں گے ۔۔۔۔۔۔

!! تو پہلے کیوں نہیں بتایا ۔۔۔حیا نے منہ بناتے ہوۓ کہا ۔۔۔۔ٹھیک ہے آپی آپ جائیں میں تھوڑی دیر میں ریڈی ہو کر آتی ہوں ۔۔۔

نہیں مجھے پتہ ہے تم نے پھر سے سو جانا ۔۔۔۔۔ آپی نے اپنا موبائل سائیڈ ٹیبل سے اٹھاتے ہوۓ کہا ۔۔۔۔۔

آپی بس پانچ منٹ پلیز ۔۔۔۔۔حیا نے
معصوم سا چہرہ بناتے ہوۓ کہا ۔۔۔۔

حیا ۔۔۔۔پری آپی حیا کو گھورنے لگیں ۔۔

اچھا اٹھ رہی ہوں ۔۔۔۔گھور کیوں رہی ہیں آپ ۔۔۔۔ حیا بیڈ سے دوپٹہ اٹھاتے ہوۓ منہ بنا کر بولی ۔۔۔۔۔ ویسے اگر پانچ منٹ اور سو لیتی تو کیا ہو جاتا . ۔۔۔۔ لیکن نہیں ۔۔۔ مجھے تو ایسے اٹھایا جاتا جیسے بارڈر پار حملہ ہوگیا ہو ۔۔۔ اور سارے معاملے کو میں نے ہی ہینڈل کرنا ہو ۔۔حد ہے ویسے آپی ۔۔۔۔۔

اچھا اچھا جاؤ جلدی سے ریڈی ہوجاؤ دیر ہو رہی ہے ۔۔۔۔۔پری آپی کو حیا کی بات پر ہنسی آگئی

جا رہی ہوں آپی ۔۔خوش ہوجائیں
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

حیا کا ایک بھائی تھا علی جو کے سیکنڈ ایئر میں پڑھتا تھا ۔۔ حیا کی دو بہنیں تھیں . بڑی بہن کا نام حبیبہ تھا جسے سب پیار سے پری بلاتے تھے ۔۔۔وہ یونیورسٹی میں پڑھتی تھی ۔۔۔۔دوسری بہن کا نام فاطمہ تھا۔۔وہ کالج میں پڑھتی تھی ۔۔۔ پھر حیا تھی چونکہ حیا سب سے چھوٹی تھی اس لئے گھر بھر کی لاڈلی تھی۔۔۔ حیا کو پیار سے ہنی بھی کہتے تھے ۔۔۔حیا میٹرک کلاس میں پڑھتی تھی ۔۔۔حیا کے والد عالیان عاید بزنس مین تھے اور والدہ فلک عالیان ہاؤس وائف تھیں ۔۔۔۔۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
گڈ مارننگ ایوری ون۔ ۔۔۔۔۔گڈ مارننگ بابا جانی ۔۔۔حیا نے بابا کو پیار کیا ۔۔۔۔اور بدلے میں اپنے گال آگے دیئے بابا جانی نے بھی حیا کو پیار کیا ۔۔۔۔۔۔۔حیا نے فاطمہ کے ساتھ والی کرسی سمبھالی ۔۔۔۔۔۔

بیٹا کتنی دفعہ کہا ہے گڈ مارننگ نہیں کہتے سلام کرتے ہیں ۔۔۔۔۔۔

اوہ سوری بابا جانی ۔۔۔حیا نے بریڈ اٹھاتے ہوۓ کہا ۔۔۔۔۔

بابا جانی آپ کو نہیں پتہ ہم تو اس کو امریکا سے لائیں ہیں ۔۔۔۔۔۔فاطمہ نے حیا کو تنگ کرتے ہوۓ کہا ۔۔۔ .

بابا جانی دیکھیں نہ فاطمہ ہمیشہ مجھے تنگ کرتی رہتی ہے ۔۔۔۔حیا نے معصوم سی شکل بنا کر بابا سے شکایت کی ۔۔۔۔۔۔

اچھا اچھا اب ناشتہ کر لو سکون سے بابا مسکرا کر بولے ۔۔۔۔۔

آج حیا کا اسکول میں تیسرا دن تھا کلاس میں حیا کی صرف ایک ہی دوست تھی انعم ۔۔۔۔باکی سب بوائز تھے ۔۔۔۔حیا کی پہلی کلاس کیمسٹری کی تھی۔۔۔۔۔

۔۔۔۔۔۔۔

۔۔۔گڈ مارننگ۔۔۔۔۔

تھنک یو آل۔۔ بیٹا آج آپ لوگوں کا ٹیسٹ ہے یاد کیا ہے نہ ۔۔۔سر پڑھائی کے معملے میں بہت سخت تھے ۔۔۔۔اگر کبھی وہ اسکول نہ آئیں تو کسی ٹیچر کو میسج کر دیتے آج میں نے بچوں کو ٹیسٹ دیا ہوا ہے لے لینا یاد سے اور کل آکر میں ٹیسٹ چیک کر لونگا ۔۔۔۔۔۔

سب سٹوڈنٹس خاموشی سے ایک دوسرے کی طرف دیکھ رہے تھے کیوں کے ٹیسٹ کسی کو بھی یاد نہیں تھا ۔۔۔۔

۔۔سر نے باری باری سب سے ٹیسٹ سننا سٹارٹ کیا کیسی کو یاد نہیں تھا سر کو غصہ آگیا ۔۔۔۔سر نے سب سے وجہ پوچھی ٹیسٹ کیوں نہیں یاد کیا ۔۔۔

۔سب کا ایک جواب تھا سر طبعیت خراب تھی ۔۔۔۔۔سب کیا ایک ہی دن بیمار تھے سر کو بہت غصہ آیا سر غصے میں گرلز کی طرف آئے


انعم تم سناؤ ٹیسٹ ۔۔۔۔۔۔

س۔ ۔۔س۔۔سر۔ ۔۔مجھے بھی یاد نہیں انعم نے سہم کر دھیمی آواز میں کہا

ٹیسٹ یاد نہیں کر سکتی تم۔۔۔۔اور کہتی ہو کے میں ڈاکٹر بنوگی جب پڑھو گی نہیں تو کہاں سے ڈاکٹر بنو گی سر غصے میں بڑ بڑاتے ہوۓ حیا کی جانب گئے ہاں حیا تم سناؤ یا تمہیں بھی یاد نہیں ہے
۔

۔حیا کی دل کی دھڑکن
بہت تیز ہوگی تھی ڈر سے ۔۔۔۔حیا سے سوال پوچھا تو حیا نے گھبرا کے معصوم چہرے کے ساتھ بولا کے سر آج مجھے بھی نہیں یاد ۔۔۔ حیا کی آنکھوں میں آنسوں آگئے ۔۔۔۔۔

دیکھو حیا مجھے اب غصہ آرہا ہے ۔۔۔۔۔

جوشخص غصے کی کیمسٹری کو سمجھتا ہو وہ بڑی آسانی سے غصہ کنٹرول کر سکتا ہے سر حیا معصوم سی شکل بنا کر بولی ۔۔۔۔۔پوری کلاس ہنس پڑی ۔۔۔۔حیا پر ۔۔

اچھا حیا بیٹا غصے کی کیمسٹری کیا ہے؟ سر نے مسکرا کر پوچھا سر کو غصہ میں ہنسی آگئی تھی

سر ہمارے اندر سولہ کیمیکلز ہیں یہ کیمیکلز ہمارے جذبات ہمارے ایموشن بناتے ہیں ۔۔ہمارے ایموشن ہمارے موڈز طے کرتے ہیں اور یہ موڈز ہماری پرسنیلٹی بناتے ہیں۔۔۔۔سر خاموشی سے حیا کی طرف دیکھتے رہے ۔۔ وہ بولی ۔۔سر۔ ۔۔۔ہمارے ہر ایموشن کا دورانیہ بارہ منٹ ہوتا ہے. ۔۔۔

سر نے پوچھا مثلا۔۔؟

حیا بولی مثلاً۔۔۔۔۔ غصہ ایک جذبہ ہے یہ جذبہ کیمیکل ری ایکشن سے پیدا ہوتا ہے۔۔۔۔مثلاً ہمارے جسم نے انسولین نہیں بنائی یا یہ ضرورت سے کم تھی ۔۔۔ہم نے ضرورت سے زیادہ نمک کھا لیا۔۔۔۔
ہماری نیند پوری نہیں ہوئی یا پھر ہم خالی پیٹ گھر سے باہر آ گئے۔۔۔ ہمارے اندر کیمیکل ری ایکشن ہو گا یہ ری ایکشن ہمارا بلڈ پریشر بڑھا دے گا اور یہ بلڈ پریشر ہمارے اندر غصے کا جذبہ پیدا کر دے گا ہم بھڑک اٹھیں گے لیکن ہماری یہ بھڑکن صرف بارہ منٹ طویل ہو گی ہمارا جسم بارہ منٹ بعد غصے کو بجھانے والے کیمیکل پیدا کر دے گا اور یوں ہم اگلے پندرہ منٹوں میں کول ڈاؤن ہو جائیں گے۔۔۔۔۔۔حیا سر جھکا کر بولی ۔۔۔۔۔۔۔

فلحال تو تم لوگ غصہ دلاتے ہو اب سب یاد کرو ٹیسٹ ۔۔۔۔۔۔اور شاباش حیا ۔۔۔۔۔

(جاری ہے )

Rate it:
Share Comments Post Comments
Total Views: 278 Print Article Print
About the Author: ایمن شاہ بنگش

Read More Articles by ایمن شاہ بنگش: 6 Articles with 983 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Zabardast behna keep it up
By: Shafaq kazmi, Karachi on Nov, 12 2019
Reply Reply
0 Like
Language: