درد جدائی ۔۔قسط 23

(Shafaq kazmi, Karachi)

درد جدائی .۔۔۔ قسط 23 ۔۔۔۔۔مصنفہ شفق کاظمی

نوٹ رائیٹر کی اجازت کے بغیر کہیں پوسٹ کرنا منع ہے

۔۔۔۔۔۔۔۔
ہیلو سونیتا ڈارلنگ !! کیسی ہو ۔۔۔۔۔۔۔کسی اجنبی نے ۔۔۔۔۔میجر غازان کو میسنجر پر میسج کیا ۔۔۔۔۔

اففف اللّه ایک تو یہ لڑکے بھی نہ کسی لڑکی کی آئی ڈی دیکھ لیں ۔ تو پیچھے ہی پڑ جاتے ہیں ۔۔ڈارلنگ ۔۔۔مائی لو اور بھی پتہ نہیں کیا کیا ۔۔۔۔۔حد ہے ویسے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔میجر غازان عجیب سا منہ بنا کر باس سے بولا ۔۔۔۔۔۔۔میجر غازان کی بات سن کر باس بے ساختہ ہنسے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔

غازان بیٹا ان کو کیا پتا کے یہ تمہاری آئی ڈی ہے ۔۔۔۔یہ جو نشیلی آنکھوں والی ڈی پی پر فدا ہوکر ۔۔۔تمہیں جانو ۔۔۔۔مانو ۔۔۔شونو ۔۔۔۔کہ رہے ہیں ۔۔۔۔انہوں نے ایک دفع تمہیں دیکھ لیا نہ۔ پھر میرا بچہ ایک منٹ نہیں لگے گا تمہیں بلاک ہونے میں ۔۔۔۔تم ان سب کی بلاک لسٹ میں ہو گے پھر ۔۔۔۔۔۔۔

باس آپ میرا مذاق اڑا رہیں ہیں نہ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ . میجر غازان معصوم سا منہ بنا کر بولا ۔۔۔۔۔۔۔

نہیں میرا۔ بچہ میں کیوں اڑاؤں تمہارا مذاق ۔۔۔۔۔اتنے میں ایک اور میسج آیا میسنجر پر ۔۔۔۔۔۔۔۔میری جانو سونیتا نے تھانہ تھایا (کھانا کھایا ) ۔۔۔۔۔۔۔باس دیکھیں نہ حد ہوگئی ہے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ہاہاہاہا میجر غازان مشن پر توجہ دیں یہ فضول میسج تو آتے رہیں گے ان کے میسج اگنور کریں ۔۔۔۔۔۔۔۔ہمیں اپنا ٹارگٹ پورا کرنا ہے بس ۔۔۔۔۔۔ کچھ دشمنوں کی آئی ڈی ہے ۔۔۔۔۔۔ان لوگوں کو پیار کے جال میں پھنسا کر راز نکلواوّ ۔۔۔۔۔

راجر سر ۔۔۔۔۔۔۔۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

اللّه کرے عدن مر جائے ۔۔۔۔۔۔۔حبیبہ رابیہ سے بولی .۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

یہ کیا بکواس ہے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ایسے کیوں کہ رہی ہو ؟؟؟

کیوں کے عدن جب سے منیب سر کی لائف میں آئ ہے ۔۔۔۔۔سر اس کے پیچھے پڑھ گئے ہیں ۔۔۔۔۔۔۔۔سر سے میں پیار کرتی ہوں ۔۔۔۔۔۔لیکن عدن آگئی پتانہیں کہاں سے ۔۔۔۔۔۔

۔......
میری محبت ہے منیب۔۔۔میں منیب کو حاصل کرنا چاہتی ہوں ۔۔۔۔۔۔۔

کسی کو حاصل نہیں کیا جاتا حبیبہ ۔۔۔۔۔۔۔جب ہم کسی سے محبت کرتے ہیں ۔۔۔۔ہم اس کو آزاد چھوڑ دیتے ہیں ۔۔۔۔۔۔کیوں کے اس کی خوشی میں ہی ہماری خوشی ہوتی ہے ۔۔۔۔۔۔۔وہ جہاں بھی رہے جس کے ساتھ بھی رہے بس خوش رہے ۔۔۔۔۔یہ کرنا آسان نہیں ہوتا ۔۔۔۔بہت مشکل ہوتا ہے جب آپ کسی سے بے انتہا محبت کرتے ہو اور وہ آپ سے نہیں کسی اور سے محبت کرتا ہو ۔۔۔۔انسان ٹوٹ کر بکھر جاتا ہے ۔۔۔۔۔۔۔ ۔۔اور رہی بات منیب کی تو وہ تم سے نہیں عدن سے پیار کرتا ہے ۔۔۔۔رابیہ حبیبہ کو سمجھانے لگی ۔۔۔۔۔۔

ویسے رابیہ کیا خوب کہا ہے کسی نے ۔۔۔۔۔۔جنہیں ہم کچھ نہیں سمجھتے انکے لئے ہم سب کچھ ہوتے ہیں اور جنہیں ہم اپنا سب کچھ سمجھتے ہیں وہ ہمیں کچھ نہیں سمجھتے...

ہممممم۔ ۔۔۔۔۔

۔....۔۔۔۔۔. . ۔۔۔۔

پتہ نہیں میری بچی کس حال میں ہوگی کون ہوں گے وہ لوگ ۔۔۔۔۔۔تمہارے بابا بتانے کا نام ہی نہیں لے رہے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔عفاف کے سامنے کھانا پڑا ہوا تھا پر کھانے کا دل نہیں کر رہا تھا ۔۔۔۔ماں تو ماں ہوتی ہے نہ اولاد تکلیف میں ہو تو ماں سے کیسے برداشت ہوسکتا ۔۔۔۔۔۔

ماما آپ تھوڑا کھانا کھا لیں ۔۔۔۔آپ کو دوائ بھی کھانی ہے ۔۔۔۔۔۔۔۔میرب نے روٹی کا نوالہ توڑ کر عفاف کو کھلانے لگی ۔۔۔۔۔

نہیں بیٹا میرا دل بہت گھبرا رہا ہے ۔۔۔۔۔۔۔۔جیسے میری بچی ٹھیک نہیں ہے ۔۔۔۔۔۔۔تم اس نمبر پر کال کرو جس سے عدن نے تم سے بات کی تھی ۔۔۔۔۔۔

ماما عدن کی کال پرائیوٹ نمبر سے آئ تھی ۔۔۔۔۔میں کال بیک نہیں کر سکتی ۔۔۔۔۔۔۔۔

یا اللّه میری بچی کو اپنی حفاظت میں رکھنا ۔۔۔۔۔۔۔عفاف رو رو کر دعا کر رہی تھی ۔۔۔۔۔

آمین ۔۔۔۔۔ماما تھوڑا سا کھالیں ۔۔۔۔۔۔دل تو میرب کا بھی نہیں تھا کھانے کا پر مجبوری تھی عفاف کو دوائی بھی کھلانی تھی ۔۔۔۔۔۔۔۔

نہیں بیٹا ابھی دل بہت گھبرا رہا ہے میرا ۔۔۔۔۔۔ابھی نہیں ۔۔۔۔۔۔۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
۔
منیب عدن کے پاس بیٹھ کر اونچی آواز میں قرآن پاک سنا رہا تھا ۔۔۔۔۔

ماشاء اللّه ماشاء اللّه ۔۔۔آپ قرآن پاک پڑھ رہے ہیں ۔۔۔۔۔۔ڈاکٹر عدن کو چیک کرنے آیا ۔۔۔منیب کو قرآن پاک پڑھتے دیکھ کر بولے ۔۔۔۔۔

جی ۔۔۔۔ڈاکٹر صاحب کہتے ہیں ۔۔۔مریض کو قرآن پاک سناؤ تو وہ جلد ٹھیک ہو جاتا ہے ۔۔۔۔۔اللّه تعالیٰ کسی وقت تو میری پکار سن لے گا ۔۔۔۔اور میری عدن بلکل ٹھیک ہوجاۓ گی پہلے جیسی ۔۔۔۔۔۔۔مجھے نہیں پتہ اللّه کی آواز سننا کیسا ہوگا ۔۔۔۔۔۔مگر مجھے اتنا پتہ ہے کہ جب میں قرآن سنتا ہوں میرے لئے وہی میرے رب کی آواز ہوتی ہے ۔۔۔۔۔اور یہ الفاظ میرے لئے بعض دفع میری استطاعت سے زیادہ وزنی بن کر میرے دل پہ اترتے ہیں ۔۔۔۔۔میرے لئے یہ قرآن اور اس سے جوڑی ہر شے با برکت ہے ۔۔۔۔۔کیوں کے یہ قرآن مجھے بتاتا ہے کے اللّه کون ہے ۔۔۔۔۔۔
ماشاء ماشاء اللّه ۔۔۔۔۔آپ بے فکر ہوں عدن انشااللّه جلد ٹھیک ہو جاۓ گی ۔۔۔۔۔۔۔۔ڈاکٹر صاحب عدن کو چیک کر کے واپس جاتے ہوئے بولے ۔۔۔۔۔

انشااللہ ڈاکٹر صاحب دعا کیجیۓ گا آپ بھی ۔۔۔۔۔۔۔۔

جی جی ضرور ۔۔۔۔یہ کہ کر ڈاکٹر صاحب چلے گئے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔

عدن تم ٹھیک ہو جاؤ پلیز جلدی سے ۔۔۔۔میں وعدہ کرتا ہوں میں روز تمہیں ایسے ہی قرآن سنایا کروں گا ۔۔۔۔۔تم سنو گی نہ مجھ سے قرآن پاک ۔۔۔۔عدن تم رہو گی نہ میرے ساتھ ۔۔۔۔۔یہ کہتے ہوئے منیب کی آنکھوں سے آنسوں آنے لگے ۔۔۔۔عدن تو مجھ سے اتنی نفرت کرتی ہے ۔۔۔اس کو لگتا ہے میں نے اسے اغوا کیا ہے ۔۔۔۔عدن کو میری محبت کہاں سے قبول ہوگی ۔۔۔۔۔پر عدن کو جب سارا سچ پتہ چل جاۓ گا ۔۔۔۔عدن بھی مجھ سے پیار کرے گی ۔۔۔۔۔۔ہے نہ عدن ۔۔۔۔۔عدن کچھ بولو نہ پلیز ۔۔۔۔۔۔۔

(جاری ہے )
 

Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: Shafaq kazmi

Read More Articles by Shafaq kazmi: 84 Articles with 48353 views »
Follow me on Instagram
Shafaq_Kazmi
Fb page
Shafaq kazmi-The writer
.. View More
16 Nov, 2019 Views: 432

Comments

آپ کی رائے