عدنان صدیقی کی اصلی زندگی کی کہانی

عدنان صدیقی کی شہرت اور کامیابیوں کو ڈرامہ “ میرے پاس تم ہو “ میں شہوار کے کردار نے نئی اٹھان دے دی اگرچہ یہ کردار منفی ہے- مگر اس کے باوجود لوگ نہ صرف ان کی اداکاری کو سراہا رہے ہیں بلکہ اس کے ساتھ ساتھ ان کو اپنی محبتوں سے بھی نواز رہے ہیں- اور ان کے بارے میں زیادہ سے زیادہ جاننا چاہ رہے ہیں- آج ہم آپ کو عدنان صدیقی کی زندگی کے کچھ ایسے رازوں سے آگاہ کریں گے جو کہ بہت کم لوگ جانتے ہیں-

1: خاندانی پس منظر
عدنان صدیقی کا تعلق ایک قدامت پرست گھرانے سے تھا- اپنے بہن بھائیوں میں سب سے چھوٹے ہونے کے باوجود انہیں بھی اپنے والد کی جانب سے بہت سختیوں کا سامنا کرنا پڑا- ان کے والد ڈسپلن کے حوالے سے بہت سخت تھے ۔ عدنان صدیقی کا اس حوالے سے یہاں تک کہنا تھا کہ کھانے کی ٹیبل پر ہمیں کسی بھی کھانے کی چیز کو کھانے سے انکار کرنے کی اجازت نہ تھی ۔ اور اگر کسی چیز کی ضرورت ہوتی تھی تو اس کی درخواست ہمیں اپنے والد سے تحریری طور پر کرنی پڑتی تھی-


2: شوبز میں آمد
عدنان صدیقی نے اپنے کیرئیر کا آغاز ماڈلنگ سے کیا تھا- اس دوران وہ ایک بنک میں بھی اپنی جاب جاری رکھے ہوئے تھے- مگر اسکرین پر ان کو متعارف کروانے کا سہرا انور مقصود کے سر جاتا ہے جن کو وہ آج بھی انور ماموں کے نام سے پکارتے ہیں- انور مقصود نے فاطمہ ثریا بجیا کے ڈرامے عروسہ میں ان کو پہلی بار متعارف کروایا تھا-


3: بالی وڈ کے ساتھ ہالی وڈ میں بھی کام کر چکے ہیں
عدنان صدیقی کو یہ بھی اعزاز حاصل ہے کہ وہ ایک بین الاقوامی اداکار ہیں اور انہوں نے بالی وڈ کی فلم ممی میں بھی اپنی اداکاری کے جوہر دکھائے ہیں- اس کے ساتھ ساتھ ہالی وڈ کی فلم مائٹی ہارٹ میں مشہور اداکارہ انجلینا جولی کے مقابل بھی اداکاری کر چکے ہیں-


4: محبت میں ناکام ہوئے
حالیہ دنوں میں اپنے ایک دیے گئے انٹرویو میں عدنان صدیقی نے بتایا کہ ان کی شادی ارینج تھی اور ان کے گھر والوں کی پسند سے کی گئی تھی- جبکہ وہ کسی اور خاتون کو پسند کرتے تھے اس حوالے سے انہوں نے یہ بھی تسلیم کیا کہ وہ ایک اچھے شوہر ثابت نہیں ہو سکے-


5: وہ ایک بہترین باپ ہیں
اپنے والد کے برعکس عدنان صدیقی بچوں کے لیے ایک ایسے والد ہیں جو ان کے بہترین دوست ہیں- ان کو اللہ نے دو بیٹیوں اور ایک بیٹے سے نوازا ہے جن سے وہ یکساں محبت کرتے ہیں اور اپنا فارغ وقت ان کے ساتھ گزارنے کو ترجیح دیتے ہیں-

Rate it:
Share Comments Post Comments
Total Views: 3553 Print Article Print
 Previous
NEXT 

YOU MAY ALSO LIKE:

Most Viewed (Last 30 Days | All Time)

Comments

آپ کی رائے
Language: