ایم پی اے حلقہ پی پی 7راجہ صغیر احمد حقیقی معنوں میں عوامی نمائندے

(Muhammad Ashfaq, Rawalpindi)

 ایم پی اے حلقہ پی پی 7راجہ صغیر احمد حقیقی معنوں میں عوامی نمائندے ، اسسٹنٹ کمشنر کلرسیداں ناصر ولائیت اعلی صلاحیتوں کے مالک

ترقیاتی کام حکومتی پالیسیوں کا حصہ ہوتے ہیں حکومت اگر فنڈز فراہم کرے گی تو منتخب نمائندے اپنے اپنے حلقوں میں ترقیاتی کام کرواتے ہیں لیکن اگر حکومت فندز فراہم نہ کرے تو ان کو اپنے عوام کی باتیں سننا اور برداشت کرنا پڑتی ہیں ایم پی اے حلقہ پی پی 7راجہ صغیر احمد جنہوں نے دو نامورسیاسی جماعتوں کے ٹکٹ یافتہ امیدواروں کو شکست دے کر ایم منتخب ہوئے ہیں جس سے یہ بات ثابت ہوئی کہ ان کی کامیابی میں عام عوام نے سیاسی سوچ کو پس پشت ڈال کر صرف یہ سوچ سامنے رکھی کہ ان کے امیدوار میں ایسی خصوصیات موجود ہیں جو ایک لیڈر میں ہونی چاہیئں عوام نے راجہ صغیر کو ن لیگ ، پی ٹی آئی اور دیگر سیاسی جماعتوں کے حمایت یافتہ امیدواروں پر ترجیح دی اور ان کو کامیابی دلوائی ہے راجہ صغیر کو بھی اس بات کا احساس ہے کہ عوام نے ان کو بڑی عزت سے نوازا ہے وہ بھی اپنی بساط سے بڑھ کر کچھ کرنے کی کوشش میں مصروف ہیں ایم پی تو اس سے قبل بھی منتخب ہوتے چلے آ رہے ہیں لیکن وہ ایک ایسے ایم پی اے ہیں جو دن رات عوام میں موجود ہیں عوام کے ہر دکھ درد میں شرکت کو یقینی بنائے ہوئے ہیں جنازہ ہو یا کوئی ولیمہ وہ اس میں شریک نظر آ تے ہیں ان جیسے متحرک ایم پی اے بہت کم دیکھے گئے ہیں دوسری ان میں سب سے بڑی خوبی یہ موجود ہے کہ وہ غریبوں کی بہت مدد کرتے ہیں خواہ وہ مدد کسی بھی طرح کی ہو حتی کہ وہ ایسے سرکاری ادارے جو انتظامی امور چلا رہے ہیں جن میں ٹی ایم اے اور اے سی آفس وغیرہ شامل ہیں کو کہتے ہیں کہ غریبوں ریڑھی بانوں کو ناجائز تنگ نہ کیا جائے ان کے روز گار نہ ختم کیئے جائیں یہی کام ان کی مقبولیت کا باعث بنے ہوئے ہیں ان کے حلقے کا ہر غریب بندہ ان کو اپنا ساتھی سمجھتا ہے انہوں نے اپنی بہترین حکمت عملی کی وجہ سے کلرسیداں اور کہوٹہ کی سرکاری انتظامیہ پر مکمل گرفت حاصل کر لی ہے اور تمام سرکاری ادارے ان کی پالیسیوں کو فالو کر رہے ہیں اور یہ بات بھی بلکل واضح ہے کہ سرکاری اداروں کے سربراہان ان کی پالیسیوں سے خائف نہیں ہیں بلکہ وہ ان سے خوش ہیں وہ حقیقت میں ایک عوامی نمائندے ثابت ہو رہے ہیں ان کا ہر قدم عوام کی بہتری و بھلائی کیلیئے اٹھ رہا ہے ان کے حلقے میں اب ترقیاتی کام بھی زوروں پر ہیں حال ہی میں انہوں نے گورنمنٹ بوائے ہائی سکول اور گرلزہائی سکول چوہا خالصہ کیلیئے ایک ایک کروڑ کی گرانٹ جاری کی ہے جس سے سکولوں کی حالت بہتر بنائی جائے گی جبکہ بہت سی سڑکوں کی تعمیر و مرمت کے کام بھی تیزی سے جاری ہیں عوام نے ان پر جس اعتماد کا اظہار کیا ہے وہ اس پر پورا اترنے کیلیئے بھر پور جدو جہد میں مصروف عمل ہیں ،اسسٹنٹ کمشنر کلرسیداں ناصر ولائیت لنگڑیال کی کلرسیداں میں تعیناتی بہت خوش آئند ثابت ہوئی ہے وہ کلرسیداں کی تاریخ کے متحرک ترین اسسٹنٹ کمشنر ثابت ہوئے ہیں وہ ایک نوجوان محنتی اور کام کرنے والے آفیسر ہیں کلرسیداں میں ا س سے قبل بھی بہت سے اسسٹنٹ کمشنر رہ چکے ہیں لیکن ایسا بہت کم دیکھنے یا سننے کو ملا ہے کہ وہ باہر فیلڈ میں نکلے ہوں زیادہ تر اے سی اپنی سیٹوں پر بیٹھ کر ہی کام چلاتے رہے ہیں ناصر ولائیت واحد اے سی ہیں جو دفتر پہنچے سے قبل ہی راستے میں کئی اہم سرکاری امور نمٹا چکے ہوتے ہیں اس کے ساتھ ساتھ وہ اپنے دفتری امور بھی بہت احسن طریقے سے سنبھالے ہوئے ہیں منگائی کا رونا تو اس وقت پورے ملک میں رویا جا رہا ہے انہوں نے مہنگائی کے حوالے سے اپنی تحصیل کا چپہ چپہ چھان مارا ہے وہ ایسے چھوٹے شہروں قصبوں میں بھی چیکنگ کیلیئے دورے کیئے ہیں جہاں کبھی کسی سرکاری آفیسر نے جانے کا سوچا بھی نہ ہوگا انہوں نے تحصیل کے ایک کونے سے لے کر دوسرے کونے تک دکانداروں کو چیک کیا ہے ناجائز منافو خوروں اور مہنگائی کا سبب بننے والے عناصر کو بھاری جرمانے عائد کیئے ہیں ان کے خلاف دیگر ضرورری کاروائیاں بھی کی ہیں وہ اب بھی معمول کے مطابق مہنگائی کے خلاف اپنے فرائض زمہ داری کے ساتھ ادا کر رہے ہیں جہاں ان کے بہت سارے کام قابل تعریف ہیں وہاں پر سب سے بڑھ کر یہ ہے کہ انہوں نے تحصیل میں موجود سرکاری اداروں کے حالات بہت بہتر کروا دیئے ہیں آئے روز سرکاری سکولوں کے دورے اور چیکنگ کے نظام کی وجہ سے اب صورتحال یہ بن چکی ہے کہ سرکاری سکولوں کے سربراہان اپنے اپنے سکولوں میں تزئین و آرائش کے کاموں کو اپنی اولین ترجیح سمجھ کر کروا رہے ہیں حاضری کا نظام بھی کافی بہتر ہو گیا ہے طلبہ و طالبات کے پڑھائی اور نظم و ضبط میں بھی بہت زیادہ تبدیلیاں رونما ہو گئی ہیں وہاں پر سرکاری رولز کی پاسداری ہو رہی ہے تمام سٹاف متحرک ہو چکا ہے اور ہر کوئی یہ سمجھ رہا ہے کہ کوئی پتہ نہیں اسسٹنٹ کمشنر کب کس سکول میں پہنچ جائیں ان کی طرف سے سکولوں کے اچانک دوروں کی وجہ سے حالات اب پہلے کی نسبت بہت بہتر دکھائی دے رہے ہیں شجر کاری مہم ہو پولیو یا دیگر کوئی بھی سرکاری مہم وہ ہراول دستے میں شامل ہوتے ہیں ٹی ایچ کیو و بنیادی مرکز صحت میں ان کی دلچسپی کی وجہ سے ان اداروں کی حالت زار اب بہت بہتر ہو چکی ہے ان میں صفائی ستھرائی اور تزئین و آرائش کے کام بہت تیزی سے جاری ہیں وہ تمام سرکاری اداروں میں پنجاب حکومت کی پالیسیوں پر بہترین طریقے سے عملدرآمد کروا رہے ہیں عوام اسسٹنٹ کمشنر کی کارکردگی سے بہت مطمئن ہیں اگر وہ اپنی فرائض منصبی اسی طرح دیانتداری سے ادا کرتے رہے تو وہ دن دور نہیں جب کلرسیداں کا ہر سرکاری ادارہ عوامی فلاح و بہبود کا دارہ بن جائے گا عوام سرکاری اداروں کا رخ کرتے ہوئے گھبراہٹ نہیں بلکہ خوشی محسوس کریں گئے

Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: Muhammad Ashfaq

Read More Articles by Muhammad Ashfaq: 143 Articles with 45232 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
16 Mar, 2020 Views: 160

Comments

آپ کی رائے