پاکستان کا نقشہ (حصہ پنجم)

(Naila Rani, Lahore)
جبکہ میں تو یہ ہی کہوں گی کہ حکومت کو اب بد ترین تاریخ دھرانے کا موقع نہیں دینا چاہیٸے۔۔۔۔۔۔ہمیں دوبارہ اس ملک میں جنگی حالات پیدا نہیں کرنے چاہیٸے۔۔۔۔۔بلکہ ہمیں اپنے اس جنگی جنون کو اپنوں کے بجا ۓ کفار یعنی کہ امن و محبت کا انکار کرنے والی جما عت حزب الشیطان کے نظام کے خلاف استعمال کرنا چاہیٸے۔۔۔۔۔تا کہ ہم نہ صرف اپنے نیک مقاصد میں کا میابی حاصل کر سکیں بلکہ اپنے دل کی اس تمناَّ کو جو برس ہا برس سے مسلمانو ں کے دل میں دبی ہو ٸ ہے۔۔۔۔۔۔عملی جامہ پہنانا چا ہیٸے۔۔۔۔۔اور اس مقصد میں کا میا بی کے لیٸے ہم دنیا والوں کو بھی یہ یقین دلانے کے لیٸے تیار ہیں ۔۔۔۔۔۔کہ اسلام ایک امن پسند دین و مذ ہب ہے۔۔۔۔۔۔۔اور صرف اور صرف یہ ہی اللہ کا واحد دین ہے جو کہ اس دنیا کو امن کا گہوارہ بنا نے اور ایک پر سکون ماحول میسر کر نے میں ہمارا اور آپکا مدد گار ثابت ہو سکتا ہے۔۔۔۔۔۔جو لوگ ہماری شر یعیت اور ہماری تا ریخ و ثقافت پر انگلیاں اٹھا تے ہیں ہم ان کو چیلنج کر تے ہیں آپ لوگ اسلام سے بہتر اگر کو ٸ دوسرا نظام لے آٸیں ہم تمہارے پیچھے کھڑے ہو جا ٸیں گے۔۔۔۔۔۔ورنہ سے دوسری صورت میں لا زمی طور پر اس دنیا کے تمام جن و انس کو ہمارے سا منے سر نڈر کر کےایک اللہ کے سامنے سجدہ ریز ہو جا نا چاہیٸے۔۔۔۔۔۔اور اس کا ٸینات کا ذرہ ذرہ گواہ ہے کہ دین اسلا م سے زیادہ بہتر مذ ہب اس سے زیادہ قدرت سے میچ کرتا ہوا اور اس سے زیادہ نیچرل اور ما ڈرن نظا م نہ تو تم اس دھرتی پر قا ٸم کر پا ٶ گے۔۔۔۔۔۔اور نہ ہی آسما نوں میں تم کو اس کے علا وہ کو ٸ دوسرا نظام نظر آۓ گا ۔۔۔۔۔۔۔اور یہ ایک ہما ری زندگی کا حقیقت حق ہے ۔۔۔۔۔کہ مسلمان ظلم کی تلوار سے ہر گز نہیں ڈرتا ۔۔۔۔نہ جانے کتنی ظلم کی ایسی تلوا ریں ہم نے توڑ ڈالی۔۔۔۔۔اور نہ جا نے کتنے اسلام کے سوداگروں کو خرید کر اپنی غلا می کے قا بل بھی نہیں سمجھا۔۔۔۔۔تو جناب قار ٸین اکرام یہ ہے مسلما نوں کی تا ریخ کیایک ہلکی سی جھلک۔۔۔۔۔۔اور یہ ہے مسلما نوں کا فلسفہ اسلام ۔۔۔۔۔۔۔۔اور یہ ہے ہمارا فلسفہ حیات ۔۔۔۔۔ایک سچا مسلمان اپنی جان تو اسلا م کی راہ میں قر بان کر سکتا ہے۔۔۔۔۔۔مگر جب ایک دفعہ اسلام کو کسی خطہ میں نا فذ کر نے کا عہد کر لے تو پھر اپنے مقا صد حا صل کیٸے بغیر پیچھے نہیں ہٹتا۔۔۔۔۔۔کیو نکہ اب ہم نے بھی اپنی گردنوں میں نظا م محمدی ﷺ کا طوق پہنا ہوا ہے۔۔۔۔۔اب جو بھی ہمیں ہمارے مقصد سے ہٹا نے کے لیٸے ہماری راہ میں آۓ گا وہ یا تو مصلحت کے تحت منہ کی کھا ۓ گا ۔۔۔۔۔۔یا پھر ہما ری طاقت کے آگے ہار کر پچھتا ۓ گا۔۔۔۔۔
Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: naila rani riasat ali

Read More Articles by naila rani riasat ali: 104 Articles with 110378 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
27 Apr, 2020 Views: 233

Comments

آپ کی رائے