چھے سال کی بیٹی بھی کرونا کا شکار ۔۔۔شوبز انڈسٹری میں کرونا تیزی سے پھیل گیا


کہتے ہیں کہ خود بھی وہی کرو جس کی ہدایت دیتے ہو ورنہ کہیں خود ہی نا پھنس جاؤ۔۔۔کچھ ایسا ہی ہوا ہماری شوبز انڈسٹری کے ساتھ۔۔۔تاجروں کا نقصان ہوتا رہا کیونکہ دکانیں بند تھیں، اسکول بند تھے تو بچوں کی پڑھائی کا نقصان، لاک ڈاؤن نے سب کچھ ختم کردیا لیکن صرف اس لئے کہ لوگوں میں یہ وبا نا پھیلے۔۔۔لیکن بھلا ہو اس میڈیا کا جہاں اینٹرٹینمنٹ کی دنیا نے اپنے پنجے گاڑھ کر رکھے۔۔۔اور ان کی اس غلطی کا خمیازہ ان کے پورے گھر کو ہی بھگتنا پڑا۔۔۔بلکہ ساتھ ساتھ ارد گرد کے لوگوں کو بھی۔۔۔کرونا نے ڈرامہ انڈسٹری اور مارننگ شو پر حملہ کردیا۔۔۔

ندا یاسر
ندا یاسر نے ہر حال میں مارننگ شوز کا سلسلہ جاری رکھا اور اس دوران عید کی ریکارڈنگز اور پرومو کی ریکارڈنگز بھی کرواتی رہیں۔۔۔انہیں کچھ زیادہ تو محسوس نہیں ہوا تھا لیکن ہلکا بخار، جسم میں درد کی شکایت اور تھکان تھی۔۔۔لیکن یہ سوچ کہ مجھے کیا ہوگا کہ مصداق وہ کام پر آتی رہیں۔۔۔نتیجہ یہ کہ انہیں تو کرونا ہوا ہی ساتھ کام کرنے والے بھی نہ بچے۔۔۔ان کی ٹیم کے بھی ٹیسٹ کروائے گئے اور ان میں سے کچھ کو علامات بھی ظاہر ہوئیں۔۔۔


علیزے شاہ
بڑی بڑی آنکھوں والی علیزے شاہ کو بھی کرونا نے گھیر لیا اور ان کی بھی طبیعت خراب ہوئی۔۔۔ٹیسٹ کروانے پر پازیٹو آیا اور یوں وہ آئسولیشن میں چلی گئی ہیں جہاں فی الحال ان کی کوئی خبر نہیں آئی۔۔۔


نعمان سمیع
اداکار نعمان سمیع اور علیزے شاہ دونوں ہی ’’ میرا دل ، میرا دشمن‘‘ کے سیٹ پر موجود تھے اور اس ڈرامہ کی تقریباً ساری ہی کاسٹ کو کرونا نے جکڑ لیا۔۔۔تکلیف دہ بات یہ ہے کہ یہ کرونا ان کے گھروں تک بھی پہنچ گیا ۔


نوید رضا
اداکار نوید رضا کے ساتھ ساتھ ان کی فیملی کے بھی کچھ ممبرز کو اس بیماری نے جکڑا اور ان کی چھے سال کی بیٹی بھی اس بیماری کی لپیٹ میں آگئی ہے۔۔۔بظاہر تو انہیں کوئی ظٓاہری علامات نہیں۔۔۔ہلکا بخار اور تھکن کا احساس۔۔۔لیکن ٹیسٹ کا پازیٹو آنا بھی ایک خوف ہے۔۔۔


یاسر نواز
اداکار اور ہدایتکار یاسر نواز بھی اس کرونا کی زد میں آگئے اور یہ کہا جارہا ہے کہ گھر میں ان کی موجودگی کے سبب بھی ندا یاسر کو اس بیماری نے جکڑا۔۔۔ابھی تک یہ پتہ نہیں چل پایا کہ آخر یہ وبا ان تک پہنچی کہاں سے۔۔۔


یاد رکھیں !
اگر آپ اس وبا سے محفوظ ہیں اور آپ کے اردگرد کے لوگ اس سے محفوظ ہیں اور اللہ تعالیٰ نے آپ کو رمضان کے روزے رکھنے کی توفیق عطا کی تو آپ خوش قسمت ہیں اس وجہ سے اللہ کا شکر ادا کریں اور کوشش کریں کہ اس عید کو مختلف انداز میں گزارنے کی پلاننگ کریں ۔اپنے تمام عزیز و اقارب کو آن لائن عید کی مبارکباد دیں اور عیدی کے بجائے ان کو ایسے تحائف دیں جو کہ اس کے لیے یادگار ہوں ۔ اس کے ساتھ ساتھ اس عید پر ان غریب گھرانوں کے لیے نئے کپڑوں اور اچھے کھانوں کا اہتمام کریں جو کہ اس سے محروم ہیں اور اس کے ساتھ ساتھ اللہ کا شکر ادا کریں-

Rate it:
Share Comments Post Comments
Total Views: 180185 Print Article Print
 Previous
NEXT 

YOU MAY ALSO LIKE:

Most Viewed (Last 30 Days | All Time)

Comments

آپ کی رائے
Language: