تو پھر رشتہ پکا۔۔۔شوبز کے سمدھیانے

 
شوبز میں کام کرنے والے اکثر ایک دوسرے کو بہت بہتر جانتے ہیں اور ایسا ہی ہوتا ہے جب بات بچوں کی شادی کی آتی ہے تو اکثر کسی شوٹ پر ہی رشتہ پکا ہوجاتا ہے اور دو فنکار گھرانے ایک ہوجاتے ہیں۔۔۔ایسے کئی فنکار ہیں جو آپس میں سمدھی ہیں اور یہ رشتہ بھی بہت خوبصورت ہے۔۔۔
 
کاظم پاشا اور مرحوم فرید نواز بلوچ
گو کہ کاظم پاشا ایک مشہور ڈائریکٹر اور فرید نواز بلوچ ایک کامیاب ترین اداکار تھے لیکن حیرت انگیز بات یہ تھی کہ ان کے بچوں کی کبھی آپس میں ملاقات نہیں ہوئی تھی۔۔۔کاظم پاشا نے اپنی بیٹی ندا کو شوبز میں کام کرنے کی اجازت دی اور وہاں ان کی سرسری ملاقات ہوئی یاسر نواز سے۔۔۔وہاں ایسی کوئی بات نہیں ہوئی۔۔۔لیکن پھر ان کی پہلی ٹیلی فلم ایک ساتھ ہوئی جس کا نام تھا ’’محبت‘‘ ۔۔پندرہ دن کی شوٹ کے دوران دونوں کا ساتھ رہا اور آخری دن یاسر نے ندا کو کہہ دیا کہ میں رشتہ بھیجنا چاہتا ہوں۔۔۔شروع میں تو ندا کافی گھبرائیں لیکن پھر ان کی والدہ نے کہا کہ اس میں کوئی حرج نہیں۔۔۔پھر فرید نواز بلوچ کی فیملی نے ندا کا ہاتھ مانگ لیا۔۔۔افسوس کی بات یہ ہے کہ شادی سے پہلے ہی فرید نواز بلوچ اس دنیا سے جا چکے تھے ۔۔۔لیکن یہ دو فنکار گھرانوں کا سمدھیانہ ہے جو آج بھی ہنسی خوشی ایک ساتھ ہے۔۔۔
 
رؤف لالہ اور شکیل صدیقی
کامیڈی گھرانے کے دو بادشاہ بہت پرانے ساتھ ہیں اور ایک دوسرے کے ساتھ زمانوں سے کام کر رہے تھے۔۔۔مزے کی بات یہ ہے کہ ایک دوسرے کے گھروں میں بھی آنا جانا تھا لیکن کبھی یہ نہیں سوچا تھا کہ ایک دن یہ دونوں گھرانے ایک ہوجائیں گے۔۔۔شکیل صدیقی کے گھر میں تین بیٹیاں ہیں اور چار بیٹے۔۔۔جب ان کی بیٹی بڑی ہوئیں تو اس کے رشتے آنا شروع ہوئے لیکن شکیل صدیقی کسی اچھے رشتے کے انتظار میں تھے اور اس کا تذکرہ انہوں نے رؤف لالہ سے بھی کیا۔۔۔دوسری طرف رؤف لالہ بھی اپنے بیٹے کے لئے رشتہ ڈھونڈ رہے تھے۔۔۔وہ سوچ میں پڑگئے کہ کیسے کہوں شکیل سے کہیں برا ہی نا مان جائے۔۔۔تو انہوں نے شکیل صدیقی کے سالے سے کہا اور پھر دونوں گھرانوں کی اس سلسلے میں چائے پر ملاقات ہوئی اور اسی وقت مٹھائی آئی اور بات پکی ہوگئی۔۔۔رؤف لالہ اور شکیل صدیقی کی دوستی جو چھتیس سال پرانی تھی رشتہ داری میں بدل گئی اور دونوں سمدھی بن گئے۔۔۔
 
روحانی بانو اور سیمی راحیل
روحانی بانو فلم کی اداکارہ تھیں جو گذشتہ سالوں سے اسکرین سے جدا ہیں اور سیمی راحیل بڑی اور چھوٹی اسکرین پر آج بھی جلوہ گر ہیں۔۔۔روحانی بانو کی بیٹی فریال محمود اور سیمی راحیل کے بیٹے دانیال راحیل کے درمیان دوستی ہوئی اور یہ دوستی پیار میں بدل گئی۔۔۔فریال نے اپنی ساس کو پہلی ملاقات میں ہی اپنا گرویدہ کرلیا اور یوں یہ دونوں گھرانے سمدھیانے میں بدل گئے۔۔۔
Most Viewed (Last 30 Days | All Time)

Comments

آپ کی رائے
Language: