روزِ حشر

(Sheeraz Khan, Karachi)

ہوئی گمشدہ میری زندگی، ہوئی گم کہاں یہ خبر نہیں
میری منزلیں کہیں کھو گئیں، کسی انتہا کا سفر نہیں

کبھی دشت ہے کہیں خواب ہے،کہیں الجھنوں کا سراب ہے
ہے گناہ کیا اس کا عذاب ہے، مجھے اس کی کوئی فکر نہیں

کیا صعوبتیں،کیا حادثے،ملے اس قدر مجھے راہ میں
میں تو ان سے اتنا نڈر ہوا،کہ خدا کا بھی مجھے ڈر نہیں

پر تو گیا جب چھوڑ کے، تو ہوئی خبر کہ میں کچھ نہیں
ہیں کئی یہاں، نہ میرا کوئی کہیں یہ تو روزِ حشر نہیں۔

Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: Sheeraz Khan

Read More Articles by Sheeraz Khan: 11 Articles with 2222 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
23 Jul, 2020 Views: 234

Comments

آپ کی رائے