خلیجی ممالک میں زیر تعمیر بلند و بالا عمارتیں - حصہ اول

خلیجی ممالک اپنے سیاحتی مراکز ، شاندار شاپنگ مالز اور حسین ساحلوں کی وجہ سے تو دنیا بھر کے سیاحوں کے لئے کشش کا باعث ہیں ہی۔۔ اب وہاں کی بلند و بالا خوبصورت عمارتیں بھی سیاحوں کو بھرپور انداز میں اپنی جانب متوجہ کررہی ہیں۔ وائس آف امریکہ کی ایک رپورٹ کے مطابق اس وقت خلیجی ممالک میں انیس یا بیس ایسی بلندو بالا عمارتیں زیر تعمیر ہیں جو مستقبل قریب میں اس خطے کی دلکشی میں مزید اضافہ کردیں گی۔ یہ عمارتیں تعمیر سے قبل ہی دنیا بھر کے لئے دلکشی کا باعث ہیں۔ آئیے ان عمارتوں سے متعلق کچھ تفصیلات پر نظر ڈالیں۔
 

مرینہ ون او ون ،دبئی
ہوٹل اور رہائشی کمپلیکس پر مشتمل 101منزلہ اور141فٹ اونچی عمارت دبئی مرینہ اپریل 2014میں مکمل ہو جائے گی۔عمارت کی تعمیر 2010میں روک دی گئی تھی لیکن اب اس پر دوبارہ کام کا آغاز کردیا گیا ہے۔ عمارت میں 516 اپارٹمنٹس اور 324 رومز ہوں گے۔


ڈائمنڈ ٹاور ،جدہ
جدہ میں ”ڈائمنڈ ٹاورز“ کی تعمیر اسی سال شروع ہوئی ہے۔ 432 میٹر اونچی 93 منزلہ ”ڈائمنڈ ٹاورز“ تکمیل کے بعد سعودی عرب کی دوسری سب سے بلند بلڈنگ ہوگی۔ اس کا اوپری حصہ ہیرے کی شکل کا ہے اور توقع کی جارہی ہے کہ اپنے منفرد ڈیزائن کی وجہ سے یہ بلڈنگ دنیا بھر کے سیاحوں کی توجہ کا مرکز بنے گی۔


کیپٹل مارکیٹ اتھارٹی ہیڈکوارٹرز، ریاض
سعودی عرب کے دارالحکومت ریاض میں زیر تعمیر 77 فلورز پر مشتمل 1263 فٹ بلند عمارت کی تعمیر اگلے سال مکمل ہو جائے گی۔اس کا شمار دنیا کی بلند ترین عمارتوں میں ہوگا۔ ٹاور کے بالائی فلورز 300,000اسکوائر فٹ پر محیط ہوں گے جس میں 76 فلورز دفاتر کے لئے مخصوص ہوں گی۔


ورلڈ ٹریڈ سینٹر، دبئی
دبئی میں تعمیر ہونے والی ورلڈ ٹریڈ سینٹر کی عمارت 1251فٹ بلند ہے اور اس میں 88منزلیں ہوں گی۔ تعمیر مکمل ہونے کے بعد اس میں 474 اپارٹمنٹس ہوں گے ،اس کے علاوہ متعدد ریٹیل، انٹرٹینمنٹ اور بزنس آفسز بھی اس شاندار عمارت کا حصہ ہوں گے۔


دی ایڈریس، دی بی ایل وی ڈی، دبئی
اس رہائشی اور ہوٹل کمیپلیس میں 72 فلورز ہوں گے اور یہ 1214 فٹ بلند ہوگی۔” دی ایڈریس ، دی بی ایل وی ڈی 72منزلہ عمارت ہوگی جو 2015میں مکمل کی جائے گی اور یہاں سے ”برج خلیفہ“،”برج لیک“ ،”دبئی فاوٴنٹین“ اور” دبئی مال“ کا نظارہ کیا جاسکے گا۔


احمد عبدالرحیم العطار ٹاور،دبئی
76منزلہ رہائشی اسکائی اسکریپر کی لمبائی 1122 فٹ ہوگی اور یہ 2014 میں مکمل ہوگی۔یہ عمارت دبئی کے شیخ زید روڈ پر زیر تعمیر ہے۔


ایڈ نوک ہیڈکوارٹرز، ابو ظہبی
ایڈنوک کے ہیڈکوارٹرز کی نئی عمارت 69منزلہ ہوگی اور اس کی لمبائی 1122فٹ ہوگی۔ اس عمارت کی تعمیر 2014میں مکمل ہوگی ۔عمارت کی اندورنی آرائش کے لئے انتہائی جدید ٹیکنالوجی استعمال کی جائے گی۔


ڈی اے ایم اے سی آر دبئی
دبئی میں زیر تعمیر یہ عمارت 1099فٹ بلند ہوگی اور اس میں 86 فلورز ہوں گے۔ 2016میں مکمل ہونے والی یہ عمارت دبئی کی بلند ترین اور دنیا کی چوتھی بلند رہائشی عمارت ہوگی۔


گیٹ آف کویت ٹاور، کویت سٹی
گیٹ آف کویت سٹی 2015 میں مکمل ہوگی۔ 1083 فٹ بلند اور 80 فلورز پر مشتمل اس عمارت میں ہوٹل، دفاتر، کنونشن سینٹر، ملٹی اسٹوری کار پارکنگ اور ریٹل شاپس ہوں گی۔


دی اسکائی اسکریپرز، دبئی
دبئی کے بزنس بے میں بننے والی ”دی اسکائی اسکریپرز“ کی لمبائی 1083فٹ ہوگی اور اس میں 66 فلورز ہوں گے۔


VIEW PICTURE GALLERY
 

Most Viewed (Last 30 Days | All Time)
15 Jul, 2013 Views: 7494

Comments

آپ کی رائے
Buildings serve several needs of society – primarily as shelter from weather and as general living space, to provide privacy, to store belongings and to comfortably live and work. This time GCC's 20 tallest towers are under construction.