ایمپلائی کو کیسے کام کرنا چاہیے (چند بنیادی پوائنٹس)

(Muhammad Abdul Muneem, )

کام کا فالو اپ ایسا ہونا چاہیے کہ نہ صرف خود غلطی سے بچے بلکہ لُوپ میں آنے والے دوسروں کو بھی ان کی غلطیوں سے آگاہ کرتا رہے-

مقصد صرف یہ نہ ہو کہ میں نے اپنا کام پورا کر دیا ہے بلکہ مقصد یہ ہو کہ کام مکمل ہونا چاہیے اس لیے کام مکمل ہونے تک دوسروں کے کام کو بھی کراس چیک کرتا رہے-

ہر کام میں سیلری کو ہی مدِّ نظر نہ رکھے بلکہ اگر کچھ کام بے لوث بھی کر دے گا تو کوئی قیامت نہیں آ جائے گی۔اپنے کام کو محدود رکھنے کی بجائے ان لمیٹڈ ہو کر کرنے کی کوشش کرے -

سال گزر جانے پر صرف یہ نہ سوچے کہ کمپنی نے میری تنخواہ بڑھائی یا نہیں بلکہ یہ بھی سوچے کہ میں نے اس سال اپنی قابلیت اور محنت میں کتنا اضافہ کیا -

باس کی ہر بات پر یس سر یس سر کہنے والے کبھی آگے نہیں بڑھتے۔ آگے وہی بڑھتے ہیں جو صحیح کو صحیح اور غلط کو غلط کہنا جانتے ہوں-

اوپر والے ڈیزینیشن کی تمنا کرنے سے پہلے یہ ضرور سوچے کہ میں نے اپنی ذمہ داریوں اور سوچ کو کتنا اوپر کیا ہے-

اگر بڑا بننے کا شوق ہو جو کہ ضرور ہونا چاہیے تو دوسروں کی ٹانگیں مت کھینچو ۔ دوسروں کی لکیر کو مٹا کر چھوٹا کرنے کی بجائے اپنی لکیر کو بڑا کرنا سیکھو دوسروں کی لکیر خود بخود چھوٹی ہو جائے گی۔ اس ٹیچر نے کیا خوبصورت بات سمجھائی کہ کلاس میں بلیک بورڈ پر ایک لکیر کھینچ کر کہا کہ کیا کریں کہ مٹائے بغیر یہ لکیر چھوٹی ہو جائے۔کسی نے کہا بغیر مٹائے اس کو چھوٹا کرنا نا ممکن ہے کسی نے سوچا شاید استاد پاگل ہو گیا ہے کیسی باتیں کر رہا ہے مگر پھر استاد نے ساتھ ہی ایک بڑی لکیر کھینچ کر کہا یہ دیکھو وہ لکیر چھوٹی ہو گئی کہ نہیں۔

ایمپلائی کو چاہیے کہ اپنے کام کی بنیاد سچ پر رکھے۔جہاں غلطی ہو مان لے ۔

جب وہ سمجھے کہ اس سے زیادہ کی مجھ میں صلاحیت نہیں ہے تو صاف صاف خود بتا دے کہ سر میری لیمٹ اس سے زیادہ کی نہیں ہے خوامخواہ ادھر اُدھر کی باتوں میں نہ گھمائے -

Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: Muhammad Abdul Muneem

Read More Articles by Muhammad Abdul Muneem: 20 Articles with 11652 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
04 Mar, 2017 Views: 863

Comments

آپ کی رائے
Very nice article,
By: Alina, Islamabad on Mar, 07 2017
Reply Reply
0 Like