آپکو کیسا مددگار ملا۔۔۔

(Sana, Lahore)
یہ وہ مدد گار ہیں جو آپکو جب مدد کی ضرورت ہو تب کبھی نہیں دکھیں گے مگر ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ جب مدد کی ضرورت نہ ہو تب ضرور دکھ جائیں گے۔ جب انکو مدد کر ضرورت ہو اور آپ انکی مدد کر سکیں تو پھر یہ آپکے سر پر ہی نہیں گھر اور کمرے میں بھی ضرور چکرائیں گے۔

انکا ہاتھ آپکے گریبان یا فریج تک بھی پہنچ سکتا ہے مگر آپکبھی مروت میں اور کبھی کبھی مجبوری میں کبھی کبھی ، کبھی دنیا داری میں ان کو کچھ کہ نہیں سکتے صرف ایک عدد مسکراہٹ سےنواز سکتے ہیں۔

مدد کا جزبہ ایک نیک جزبہ ہے اور مختلف لوگوں کا مختلف اوقات میں یہ پروان چڑھتا ہے۔ جب خاتون مدد کی خواہاں تو عین ممکن ہے ذیادہ تیزی سے جزبہ مدد اُبل اُبل جائے۔ اگر خاتون بیگم کے عہدے پر فائز ہوں تو بھی ضرور نہیں کہ اُبلے ذیادہ امکان یہی ہے کہ سرد پڑ جائے گا۔

ہم جہاں معاشرے میں ہیں یہاں لوگوں کا روئیہ اور رسوم و رواج انسان کو اس طرح سے بنا رہے ہوتے ہیں کہ انسان جتنا مرضی ہم آزاد ہیں آزاد ہیں کی رٹ لگا لیں۔ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ آزاد نہیں ہیں۔

مدد کرنے کا نیک اور بد خیال بھی انھی رسموں کے ساتھ ہی جڑا ہوتا ہے۔ اب اگر بات کی جائے کہ کتنی اقسام کے مددگار ہوتے ہیں تو آپ بھی پڑھئیے آپ کو بھی بے حد آرام سے آتے جاتے کہیں نہ کہیں مل جائِیں گے اور اگر نہ ملے تو سمجھ لیں آپ ہی۔۔۔۔۔۔۔۔

نمائشی مدد گار
یہ وہ مدد گار ہیں جو آپکو جب مدد کی ضرورت ہو تب کبھی نہیں دکھیں گے مگر ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ جب مدد کی ضرورت نہ ہو تب ضرور دکھ جائیں گے۔ جب انکو مدد کر ضرورت ہو اور آپ انکی مدد کر سکیں تو پھر یہ آپکے سر پر ہی نہیں گھر اور کمرے میں بھی ضرور چکرائیں گے۔

جب انکو قرض چاہئے ہو تو آپ انکی مدد کا نظارہ جو کہ یہ آپکی جیب سے یا سیف سے پیسہ نکالنے میں کریں گے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ بخوبی دیکھ سکتے ہیں۔ پیسے وصولی کے لئے آپ انکو کبھی بھی نہیں دیکھیں گے۔

عارضی مدد گار
یہ وہ مدد گار ہیں جو آپکی زندگی میں آپکی چیزوں اور نعمتوں کی دستیابی پر منحصرہوتے ہیں۔ جب تک آُپکی زندگی میں نعمتیں کی بہاریں ہوں گی۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ آپکی پلیٹ پر نعمتیں ہوں گی۔ یہ ان نعمتوں کو ٹھکانے لگانے کے لئے آپکا ساتھ دیں گے اور جب نمعتیں اپنے اختتام کو پہنچیں گی تو یہ خود بھی کسسی ایسے ٹھکانے پر ہوں گے کہ آپ چاہ کر بھی ڈھونڈ نہیں سکیں گے۔

آپکے موبائل لوڈ سے لے کر الماری میں پڑے کپڑوں تک کچھ بھی انکے ہاتھ لگ سکتا ہے۔ انکی نعمتوں میں اگر آپ حصہ دار بننا چاہیں تو انکو ڈھونڈنا مشکل ہی نہیں ناممکن ہے۔

غیر عارضی/ دائمی مددگار
یہ وہ مدد گار ہیں جو اکثر ہی آپکے دروازے پر یا کچن کی کھڑکی میں خوشبو سونگھتے موجود ہوں گے ۔ آپ ان سے جتنا بچنا چاہیں مگر ان سے رہائی پانا ویسے ہی ہے جیسے انسان ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ سوشل میڈیا سے رہائی پالے۔ جیسے ۔۔۔۔۔۔۔۔انسان ہر ہر موقع پر سوشل میڈیا اپڈیٹینگ جاری رکھتا ہے ویسے ہی یہ مددگار بھی ہر اپ ٹو ڈیٹ پر آپکے ہمراہ ہوں گے۔

انکا ہاتھ آپکے گریبان یا فریج تک بھی پہنچ سکتا ہے مگر آپکبھی مروت میں اور کبھی کبھی مجبوری میں کبھی کبھی ، کبھی دنیا داری میں ان کو کچھ کہ نہیں سکتے صرف ایک عدد مسکراہٹ سےنواز سکتے ہیں۔

تماش بینی مددگار
ایک مشہور فیس بک پوسٹ ہے کہ جب بھی کسی محلے میں لڑائی ہو تو پیچھے سے باقی خواتین ۔۔۔ آہو نی آہو ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ کا ساؤنڈ ضرور دیتی ہیں۔

یہ بھی ایسے ہی مددگار ہوتے ہیں جو کہ کلاس میں ڈانٹ پڑتے، گھر میں ڈانٹ پڑتے، کسی سے لڑتے، آپ سے کچھ چھینتے ہوئے، آپ کی پٹائی ہوتے ہوئے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ پوری آنکھیں کھولے اور قریب کی عینک لگائے آپکو دیکھتے ضرور ہیں۔ مزہ بھی ضرور لیں گے، چٹخارے بھی ضرور لیں گے۔ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ مگر مدد صرف اتنی ہی کریں گے کہ آپ کو دیکھیں گے اور وکٹری کا سائن بنا بنا کر یا مسکرا مسکرا کر دل جلائیں گے۔


جنونی مددگار
یہ مددگاروں کی وہ قسم ہے جو آپکا کام اگر ٹھیک بھی ہو رہا ہو تب بھی بگاڑ ضرور دیں گے۔ انکے لئے ہی کہا جاتا ہے

مدعی سست ، گواہ چست
اگر آپکا کام کم بگڑا ہو یا ٹھیک ہو رہا ہو تو انکی انٹری پر آپ "جل تو جلال تو" ضرور پڑھنا چاہیں گے۔ یہ ہوتے ہی ایسے ہیں جدھر بھی جائیں اپنے ہونے کے نشان چھوڑ کر ضرور آتے ہیں۔

ہمارے معاشرے میں ہر کلاس میں، ہر بہن بھائی میں کوئی ایک، ہر گھر میں ایک کزن ، ہر آفس میں ایک کولیگ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ایسا ضرور ہوتا ہے جو کہ اپنی دانست میں آپکو کامیاب کرتے کرتے چند قدم پیچھے ضرور دھکیل جاتا ہے۔

سچا مددگار
اگر آپکو ایسا مددگار نہ ملے تو آپ خود ایسا ضرور بنیں۔
کبھی کسی کی جزباتی مدد کرکے، کبھی کسی کی اخلاقی مدد کرکے، کبھی مالی، کبھی دل سے سمجھا کے اور دماغ سے سن کے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ کبھی کبھی بس ایسے ہی مسکرا کے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

 
Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: sana

Read More Articles by sana: 231 Articles with 179500 views »
An enthusiastic writer to guide others about basic knowledge and skills for improving communication. mental leverage, techniques for living life livel.. View More
20 Apr, 2017 Views: 620

Comments

آپ کی رائے
nice article
By: shehla khan, multan on May, 29 2017
Reply Reply
0 Like