تم پکڑے گئے ہو ---- گھر سے کام کے دوران کی جانے والی 6 سنگین غلطیاں

کرونا وائرس کی وبا کے اس دور میں متعدد ملازمین اپنے پیشہ ورانہ امور گھر سے سرانجام دے رہے ہیں- بالخصوص آن لائن کی دنیا سے وابستہ افراد اپنی کمپنیوں کے احکامات کے بعد اپنے گھر سے ہی تمام دفتری کام سرانجام دیتے ہیں- اس کے لیے کمپنیوں کی جانب سے اپنے ملازمین کو آفس کے لیپ ٹاپ گھر لے جانے کی اجازت فراہم کی جاتی ہے- لیکن گھر سے کام کے دوران ملازم کی ذمہ داری مزید بڑھ جاتی ہے کیونکہ اسے اب اس لیپ ٹاپ کا بھی بہت خیال کرنا ہوتا ہے کیونکہ یہ آفس کی امانت ہوتا ہے- لیکن بعض اوقات ایک چھوٹی سی غلطی بھی آپ کی نوکری کو خطرے میں ڈال سکتی ہے-
 
غیر محفوظ انٹرنیٹ کنکشن
اس وقت ہیکرز گھریلو نیٹ ورکس کو نشانہ بنا رہے ہیں اور ایسے میں اگر آپ گھر سے اپنے پیشہ ورانہ امور سرانجام دے رہے ہیں تو آپ کے لیے کمپیوٹر میں موجود اپنی دستاویز کو محفوظ بنانا ضروری ہے- ایسے میں آپ کی پہلی ترجیح محفوظ ترین انٹرنیٹ کنکشن اور نیٹ ورک ہونا چاہیے- کوشش کیجیے کہ صرف کام کی ویب سائٹس اوپن کریں اور کسی غیر ضروری فائل کو ڈاؤن لوڈ نہ کریں-
 
ذاتی گوگل ڈرائیو یا ای میل
کہا جاتا ہے کہ اپنے آفس ورک کو گھر سے دور رکھو لیکن آجکل کی صورتحال میں یہ ممکن نہیں- لیکن آپ اتنا ضرور کرسکتے ہیں کہ اپنے آفس کی فائلیں یا کام وغیرہ اپنی ذاتی گوگل ڈائیو یا ای میل اکاؤنٹ پر ہرگز محفوظ نہ کریں- اس سے حادثاتی طور پر بھی آپ کی آفس کی اہم فائلیں یا ڈیٹا لیک ہونے کا خطرہ ہوتا ہے-
 
ایک ہی براؤزر پر ساری سرفنگ
یہ آپ کے لیے انتہائی اہم ہے کہ اپنی ذاتی انٹرنیٹ سرفنگ کے لیے کوئی دوسرا براؤزر یا پھر پرائیوٹ براؤزنگ موڈ استعمال کریں- آئی ٹی سے وابستہ ادارے بہت منظم ہوتے ہیں اور یہ اپنے آفس کے سسٹم سے مسلسل ڈیٹا حاصل کرتے رہتے ہیں اور اسے چیک کرتے رہتے ہیں- اس لیے ایسے میں کوئی ایسی صورتحال بھی پیدا ہوسکتی ہے جو آپ کے لیے شرمندگی کا باعث ہو-
 
ذاتی ڈیٹا آفس کے لیپ ٹاپ پر
یہ تجویز بھی بہت اہم ہے کہ آپ اپنا ذاتی ڈیٹا کسی صورت بھی آفس کے لیپ ٹاپ میں محفوظ نہ کریں- اس بات کا امکان موجود ہے کہ جب آپ آفس پہنچ کر اپنا لیپ ٹاپ واپس رکھیں تو آئی ٹی ڈپارٹمنٹ کی طرف سے اس کی جانچ کا آغاز کردیا جائے- اگر کوئی بہت زیادہ ضروری ڈیٹا ہے بھی تو اسے ایک الگ فولڈر میں محفوظ کر کے اس پر ذاتی ڈیٹا کا ٹیگ لگا دیں-
 
لاک نہ کرنا
اگر آپ کے گھر میں بچے موجود ہیں تو آپ کو بہت زیادہ احتیاط کی ضرورت ہے- اگر آپ چاہتے ہیں کہ آپ کے بچے آپ کے آفس کے کمپیوٹر سے کوئی خالی ای میل نہ بھیجیں یا کچھ الٹا سیدھا ٹائپ کر کے میسج نہ کریں یا پھر کیمرہ آن نہ کریں تو ضروری ہے کہ جب بھی کہیں جائیں تو اپنا کمپیوٹر لاک کرنا ہرگز نہہ بھولیں- بصورت دیگر یہ آپ کی زندگی کی سب سے بڑی غلطی ثابت ہوگی-
 
فیملی ممبرز
آفس کے لیپ ٹاپ کو اپنے کسی بھی فیملی ممبر کے ساتھ ہرگز شئیر نہ کریں چاہے وہ کوئی بھی ہو اور چاہے کوئی بھی وجہ ہو- آپ کے سسٹم میں کئی ایسی اہم فائلیں ہوتی ہیں جو صرف آپ کے لیے ہی ہوتی ہیں اور ان کے نقصان کی صورت میں آپ کو کسی سزا کا سامنا بھی کرنا پڑ سکتا ہے-
Most Viewed (Last 30 Days | All Time)

Comments

آپ کی رائے
Very useful information.
By: Shahid Ch., Rahim Yar Khan on Jun, 30 2020
Reply Reply
0 Like
Language: