چین کا امریکہ کو طالبان کے ساتھ مذاکرات جاری رکھنے کا مشورہ

اسلام آباد — 

چین نے امریکہ کو مشورہ دیا ہے کہ وہ افغانستان میں پائیدار امن اور افغان تنازع کے مستقل حل کے لیے طالبان کے ساتھ مذاکرات جاری رکھے۔

چین کی وزارتِ خارجہ کی ترجمان خوا چن ینگ نے منگل کو معمول کی میڈیا بریفنگ کے دوران کہا کہ امریکہ اور طالبان کے درمیان امن مذاکرات میں پیش رفت ہو رہی تھی اور فریقین سمجھوتے کے قریب تھے۔

ان کا کہنا تھا کہ افغانستان میں امن و مصالحت کی صورتِ حال غیر یقینی ہے۔ لیکن اس کے باوجود افغانستان کے عوام جنگ کے خاتمے اور امن کے خواہاں ہیں۔

چین کی وزارتِ خارجہ کی جانب سے یہ بیان ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اچانک مرحلہ وار ٹوئٹس کے ذریعے طالبان کے ساتھ مذاکرات منسوخ کر دیے تھے۔

امریکہ کے صدر کا کہنا تھا کہ طالبان ایک طرف مذاکرات کر رہے ہیں جب کہ دوسری جانب افغانستان میں قتل عام جاری رکھے ہوئے ہیں۔ ایسے میں ان کے ساتھ مذاکرات کا کوئی فائدہ نہیں ہے۔

مبصرین کا خیال ہے کہ صدر ٹرمپ نے مذاکرات منسوخی کا فیصلہ بعض وجوہات کی بنا پر کیا ہو گا۔ کیوں کہ طالبان افغانستان سے امریکی اور نیٹو افواج کے مکمل انخلا تک جنگ بندی پر متفق نہیں تھے۔

اسلام آباد کے ’انسٹی ٹیوٹ آف اسٹرٹیجک اسٹڈیز‘ کے ڈائریکٹر نجم رفیق کا کہنا ہے امریکہ کا یہ اصرار تھا کہ طالبان جنگ بندی کر کے کابل حکومت سے مذاکرات کریں۔ لیکن ان کے بقول طالبان ان دونوں مطالبات پر رضا مند نہیں ہو رہے تھے۔ طالبان اور امریکہ کے درمیان امن سمجھوتے کی راہ میں یہی دو معاملات رکاوٹ بن رہے ہیں۔


 

WATCH LIVE NEWS

Samaa News TV PTV News Live Express News Live 92 NEWS HD LIVE Pakistan TV Channels

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.