انٹربینک، اوپن مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت میں مسلسل اضافہ

image

انٹر بینک مارکیٹ میں ڈالر69 پیسے اضافے کے بعد تاریخ کی بلند ترین سطح 173.47 روپےاور اوپن مارکیٹ میں ڈالر 50 پیسے اضافے کے بعد 173.80 روپے پر آگیا۔

تجزیہ کاروں کے مطابق ڈالر کی قیمت میں مسلسل اضافے کی وجہ پاکستان کے آئی ایم ایف سے مذاکرات ہیں اور آئی ایم ایف کی شرائط پر عمل درآمد کرنے کی غرض سے حکومت پاکستانی کرنسی کی قدر میں کمی کر رہی ہے تاکہ پاکستان کے آئی ایم ایف سے مذاکرات کامیابی سے اختتام پذیر ہوسکیں۔

تجزیہ کار فیضان احمد نے پیر کو سماء ڈیجیٹل سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کے آئی ایم ایف کے ساتھ مذاکرات کا ڈالر پر کوئی اثر نہیں ہوا کیونکہ مذاکرات مثبت انداز میں آگے بڑھ رہے ہیں تاہم اس وقت درآمدات پر دباؤ کافی ہے جس کی وجہ سے ڈالر کی طلب میں بھی اضافہ ہوگیا ہے۔

تجزیہ کار نے کہا کہ عالمی مارکیٹ میں کموڈیٹیز کی قیمتوں میں بھی اضافہ ہوا ہے،عالمی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمت تاریخ کی بلند ترین سطح 85 ڈالر فی بیرل ہوگئی ہے جس کے باعث درآمدی بل میں بھی اضافہ ہوا ہے۔

 جبکہ ایکسچینج کمپنیز ایسوسی ایشن کے جنرل سیکریٹری ظفر پراچہ کا کہنا تھا کہ انٹر بینک مارکیٹ اور اوپن مارکیٹ میں فی الحال ڈالر کی طلب نہیں ہے تو ڈالر کی قیمت 155 روپے سے زیادہ نہیں ہونی چاہیے تھی۔


News Source   News Source Text

WATCH LIVE NEWS

مزید خبریں
خبریں
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.