سری لنکن شہری کا قتل شرم ناک ہے، وزیراعظم اور آرمی چیف کی مذمت

image
پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان اور آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے ملک کے صنعتی شہر سیالکوٹ میں مشتعل ہجوم  کے ہاتھوں ایک مقامی فیکٹری کے غیرملکی منیجر کے توہین مذہب کے الزام میں قتل کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔

پاکستانی فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کی جانب سے جاری بیان کے مطابق آرمی چیف کا کہنا تھا کہ سیالکوٹ میں ہجوم کے ہاتھوں سری لنکن شہری کا بیہمانہ قتل نہ صرف قابل مذمت بلکہ شرم ناک ہے۔

’ہجوم کے ہاتھوں اس طرح ماورائے عدالت قتل سے کسی طرح سے بھی صرف نظر نہیں کیا جاسکتا ہے۔‘

آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف نے واقعے میں ملوث ملزمان کی گرفتاری اور انہیں کٹہرے میں لانے کے لیے سول انتظامیہ کی ہر طرح سے مدد کرنے کا حکم دے دیا۔

سری لنکن منیجرکو زندہ جلانے کا واقعہ پاکستان کے لیے شرم کا دن ہے: عمران خانقبل ازیں وزیراعظم عمران خان  نے سیالکوٹ واقعے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا تھا کہ کہ سری لنکن منیجرکو زندہ جلانے کا واقعہ پاکستان کے لیے شرم کا دن ہے۔

سیالکوٹ میں مشتعل گروہ کا ایک کارخانے پر گھناؤنا حملہ اور سری لنکن منیجر کا زندہ جلایا جانا پاکستان کیلئے ایک شرمناک دن ہے۔میں خود تحقیقات کی نگرانی کر رہا ہوں اور دوٹوک انداز میں واضح کر دوں کہ ذمہ داروں کو کڑی سزائیں دی جائیں گی۔گرفتاریوں کا سلسلہ جاری ہے۔

— Imran Khan (@ImranKhanPTI) December 3, 2021

ان کا کہنا تھاکہ واقعے کی تحقیقات کی خود نگرانی کررہا ہوں اور واقعے میں ملوث افراد کو قانون کے مطابق سخت سزا دی جائے گی۔ ’واقعے میں ملوث افراد کی گرفتاری کا عمل جاری ہے۔‘

پاکستان میں سری لنکا کے سفارت خانے نے اپنی ٹویٹ میں وزیراعظم عمران خان کا شکریہ ادا کیا۔

Thank you Hon Imran Khan pic.twitter.com/f6ziVRNn1R

— Sri Lanka High Commission in Pakistan (@SLinPakistan) December 3, 2021

ادھر پنجاب پولیس کے ایک ٹویٹ کے مطابق اس واقعے کے مرکزی ملزم سمیت ایک سو افراد کو گرفتار کیا گیا ہے ’سیالکوٹ واقعہ میں پولیس نے تشدد کرنے اور اشتعال انگیزی میں ملوث ملزمان میں سے ایک مرکزی ملزم فرحان ادریس کو گرفتار کر لیا ہے۔ 100سے زائد افراد کو حراست میں لےلیا ہےآئی جی پنجاب سارے معاملہ کی خود نگرانی کر رہے ہیں باقی ملزمان کی گرفتاری کےلیے چھاپے مارے جارہے ہیں۔‘

سیالکوٹ واقعہ میں پولیس نے تشدد کرنے اور اشتعال انگیزی میں ملوث ملزمان میں سے ایک مرکزی ملزم فرحان ادریس کو گرفتار کر لیا ہے۔ 100سے زائد افراد کو حراست میں لےلیا ہےآئی جی پنجاب سارے معاملہ کی خود نگرانی کر رہے ہیں باقی ملزمان کی گرفتاری کیلیے چھاپے مارے جارہے ہیں@UsmanAKBuzdar pic.twitter.com/v7YOpQxwXs

— Punjab Police Official (@OfficialDPRPP) December 3, 2021

سیالکوٹ واقعہ بہت ہی افسوسناک اور شرمناک ہے: صدر مملکتدوسری جانب صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہا ہے کہ سیالکوٹ واقعہ بہت ہی افسوسناک اور شرمناک ہے اور اس کا کسی بھی صورت مذہب سے کوئی تعلق نہیں۔

سرکاری خبر رساں ادارے اے پی پی صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہا ہے کہ اسلام نے بلا تخصیص انصاف کی فراہمی کا نظام قائم کیا ہے۔

وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد کا کہنا تھا کہ سیالکوٹ واقعہ بہت دلخراش اور قابل مذمت ہے۔ ’وفاقی حکومتی ادارے واقعے کی تحقیقات میں پنجاب حکومت کی معاونت کر رہے ہیں۔‘ 

وزیر داخلہ شیخ رشید احمد کے مطابق نیشنل کرائیسس سیل واقعے کے محرکات کا جائزہ لے رہا ہے۔ ’واقعے میں ملوث افراد کو قانون کی عدالت میں لائیں گے۔‘

مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف نے اس واقعے کی مذمت کرتے ہوئے اپنی ٹویٹ میں لکھا کہ ’سیالکوٹ میں آج اندوہناک واقعہ پیش آیا۔ اس طرح کے واقعات کی مذمت اور حوصلہ شکنی کرنی چاہیے اور ذمہ داروں کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی ہونی چاہیے۔‘

خیال رہے جمعے کو سیالکوٹ میں حکام کے مطابق وزیرآباد روڈ پر ایک نجی فیکٹری کے ورکرز نے توہین مذہب کے الزام میں ایک فیکٹری کے غیر مسلم غیر ملکی مینیجر کو تشدد کرکے قتل کیا اور آگ لگا دی۔

جمعے کو سوشل میڈیا پر شیئر ہونے والی فوٹیج میں ایک شخص کی جلتی ہوئی نعش کو دیکھا جاسکتا ہے جس کے اردگرد بڑی تعداد میں لوگ نظر آرہے ہیں۔

شہری انتظامیہ کے ایک افسر نے اردو نیوز کو بتایا تھا کہ ’غیر ملکی مینیجر کو توہین مذہب کا الزام لگا کر قتل کیا گیا اور پھر ان کی نعش کو آگ لگادی گئی۔

انہوں نے بتایا تھا کہ ’ہلاک ہونے والے فیکٹری کے غیر ملکی مینیجر کا تعلق سری لنکا سے تھا۔‘ 


News Source   News Source Text

WATCH LIVE NEWS

مزید خبریں
پاکستان کی خبریں
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.