سو لفظوں کی کہانی:۔1947 سے بوتل میں بند جن۔۔۔۔‎

(Sadiq Saba, India)

سارا دن ٹینکروں کے پیچے بھاگنے کے بعد وہ ریت پر اداس بیٹھا ھوا تھا کہ اسے اپنے سے پرے ایک بوتل مل گیا۔۔۔۔شراب کا بوتل جو دھویں سے بھرا ھوا تھا۔اس نے متجسس ھوکر اسے کھولا تو ایک جن اپنے گرجدار قہقوں کے ساتھ نمودار ھوا اور اس سے بولا بول میرے آقا کیا چاہئے؟
تو اس نے بلا تعمل کہا۔۔پانی۔۔۔۔تو جن نے ایک بڑا”ایھ“ کیا اور کہا پتّر رہنے دے ،ستّر سال پہلے خود کو اسی لئے بوتل میں بند کیا تھا۔کہ ھر کوئی پکڑتا پانی دے۔۔۔۔پانی دے۔۔۔۔۔۔جنّ غائب۔۔۔۔

Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: Sadiq Saba

Read More Articles by Sadiq Saba: 7 Articles with 3368 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
19 May, 2018 Views: 330

Comments

آپ کی رائے