پاکستانی والدین کے بچوں کو ڈرانے کے چند دلچسپ انداز

دیسی والدین بچوں کو نئی اور اہم چیز سکھانے کے لیے انوکھے طریقے رکھتے ہیں- عموماً پاکستانی والدین بچوں کو روکنے یا مخلتف کاموں سے دور رکھنے کے لیے ایسے کہانیاں یا باتیں سنائی جاتی ہیں جن کا حقیقت سے دور کا بھی کوئی واسطہ نہیں ہوتا- درحقیقت یہ افسانوی قصے کہانیاں خود اپنے والدین سے بچپن میں سن رکھے ہوتے ہیں اور اب ہماری ثقافت کا حصہ بن چکے ہیں- اسی حوالے سے ہم یہاں پاکستانی والدین کے چند غیر حقیقی جملے بیان کر رہے ہیں جو وہ اپنے بچوں کو ڈرانے کے لیے استعمال کرتے ہیں-
 

مغرب کے وقت پرفیوم لگانے سے جن چمٹ جاتے ہیں-
 
زیادہ ٹی وی مت دیکھو--- آنکھیں خراب ہوجائیں گی-
 
سو جاؤ ورنہ جن آجائے گا-
 
جھوٹ بولنے سے ناک لمبا ہوجاتا ہے-
 
الٹے سیدھے منہ بناؤ گے تو ہمیشہ کے لیے ایسے ہی ہوجاؤ گے-
 
سوتے ہوئے کے اوپر سے نہیں گزرتے قد چھوٹا رہ جاتا ہے- اس منطق پر تو سائنسدان بھی حیران ہیں-
 
زیادہ شیشہ نہیں دیکھتے نظر لگ جاتی ہے-
 
اگر کوئی جھوٹ بولتا ہے تو اس کی زبان کالی ہوجاتی ہے-
 

Reviews & Comments

mazay ki batain hain
By: fatima, lahore on Sep, 12 2019
Reply Reply
0 Like
Language:    
Desi parents have their own way of making their children new and important things. Some of the methods they adapt are more of myths than a fact or phenomena. Parents tell some of these myths to their kids because their parents told them, and some of them are too famous that they have become part of culture.