سانحہ نیوزی لینڈ اور لمحہ فکریہ۔۔۔!!

(جاوید صدیقی‎, Karachi)

گزشتہ دنوں مسلمان نیوزی لینڈ میں دوران نمازدہشتگردی کی نظر ہوگئے،گزشتہ سالوں میں بدھ ایسٹ نے برمامیں لاکھوں نہتے مسلمان بچے، عورتیں، بوڑھے اور جوانوں کو بڑی بے دردی سے قتل کیئے،امریکی عیسائیوں نے افغانستان میں سترہ سال سے زائد جنگ میں لاکھوں مسلمانوں کو ہلاک کیا ، بھارت کے انتہا پسندہندؤں اور ریاستی اداروں نے مقبوضہ کشمیر میں نہتے کشمیریوں کو شہید کرتا رہا ہے ،یہودیوں نے ستر سے زائد سالوں سےفلسطینیوں کا قتل عام جاری رکھا ہوا ہے، بدھ مت، ہندو، عیسائی اور یہودی مذہب سے تعلق رکھنے والے دہشت گردی کریں تو ذہنی بیمار کہ کر دہشتگردی کے لیبل سے ہٹادیا جاتا ہے اور خود کی پلاننگ کردہ اپنے ایجنٹوں، مہروں، کرائے کے قاتلوں کو مسلمان کا گیٹ اپ دیکر دنیا بھر میں دہشتگردی کروا کر مذہب اسلام کو بدنام کرنے کی ناکام کوششیں کرتے رہے ہیں ، ان تمام منفی عوامل میں یہودی خفیہ ایجنسی موساد، امریکی خفیہ ایجنسی سی آئی اے، بھارتی خفیہ ایجنسی را اور برطانوی خفیہ ایجنسی ایم سکس کی مشترکہ کاروائیاں کئی سالوں سے جاری ہیں، خود دہشتگردی کراکر مسلمانوں کو دہشتگرد قرار دیتے ہیں ، نائن الیون کا سانحہ جوکہ یہودیوں نے تیار کیا تھا جس کا تمام ترمسلمانوں پر الزام ٹھہرایا اس کے بعد امریکہ نے عراق، اردن، افغانستان اور فلسطین کو تباہ و برباد کرکے رکھ دیا، دنیا بھر میں اسرائیلی خفیہ ایجنسی موساد، امریکی خفیہ ایجنسی سی آئی اے، برطانوی خفیہ ایجنسی ایم سکس، بھارتی خفیہ ایجنسی را کی مشترکہ دہشتگردیاں دنیا بھر میں مسلمانوں کے خلاف، جنگی اور میڈیائی حملوں اور،این جی اوز کے ذریعے مسلمانوں کا قتل عام اور بدنام کرنے کیلئے کوئی کسر نہ چھوڑتے ،دنیا جانتی ہے مگر پھر بھی خاموش؟؟سب سے زیادہ دہشتگردی سےدنیاکے مسلمانوں کو نقصان پہنچا ہے اور دنیا جانتی ہے کہ دہشتگردی کے خلاف مسلمانوں نے ہی مقابلہ کیا ہے پھر بھی یونائیٹڈ نیشن آرگنائزیشن (یو این او) کی خاموشی بھی مسلمانوں کیلئے لمحہ فکریہ ہے۔معزز قارئین!! سانحہ نیوزی لینڈ کوئی معمولی سانحہ نہیں ،اس کے پیچھے جو پلاننگ ہے اس کی جانب خاص توجہ دینے کی ضرورت ہےکیونکہ اس سانحہ سے دنیا بھر کے مسلمانوں کو بہت بڑا پیغام دیدیا گیا ہے،یہودی، بت پرست اور عیسائی ملکوں نے اپنے آقا دجال کیلئے حالات بنانے شروع کردیئے ہیں ، دنیا کی تباہی کا آغاز ہوچکا ہے ،تمام مذاہب دین اسلام سے شدید مخالفت اور نفرت کرتے ہیں کہیں کفار و مشرکین نے کھلے عام اظہار کیا تو کہیں خاموشی سے مسلمانوں کے خلاف منفی کارفرمائی میں مصروف ہیں ۔۔۔۔معزز قارئین!! میری اس تحریر کے وقت 1440 ہجری، مہینہ رجب المرجب ہے ،اس کا مطلب ہے کہ 15 ویں صدی ہجری کے چالیس واں سال گزر رہا ہے، آپ ﷺ نے قرب قیامت کی نشانیاں 14 صدی ہجری تک بیان کی تھیں اور 15 صدی پر خاموشی اختیار کرلی تھی، اب مطالعہ اور حالات پر نظر ڈالتے ہوئے واضع طور پر کہ سکتے ہیں کہ یہ دو فتن ہے اور اس دور میں عجیب عجیب فتنے ہونگے، کئی فتنے جاری ہیں اور کئی آنے والے ہیں ، مسلمان جانتے ہیں کہ ہر فتنہ دین اسلام کے منافی ہوتا ہے اوروہ ایمان کو ضائع کرنے کیلئے دنیا کی کشش اور محبت کو پروان چڑھاتا ہے۔ ۔۔ معزز قارئین!! رسول اللہ ﷺنے فرمایا جب اہل شام تباہی و بربادی کا شکار ہو جائیں تو پھر تم میں کوئی خیر باقی نہ رہے گی، ملک شام کے متعلق اِسرائیل، روس و امریکہ جو بھی جھوٹے بہانے بنائےلیکن ان سب کا اصل ہدف جزیر العرب ہے کیونکہ کفار کا عقیدہ ہے کہ دجال مسیحا ہے اس وجہ سے یہ لوگ دجال کے اِنتظامات مکمل کر رہے ہیں جس کے لیے عرب ممالک میں عدمِ اِستحکام پیدا کرنا ہے کیونکہ حضرت مہدی کے ظہور سے قبل یہود و نصاریٰ ملک شام پر قبضہ کرنا چاہتے ہیں اور یہ ہو کر رہے گاآخری زمانے میں جب مسلمان ہر طرف سے مغلوب ہوجائیں گے مسلسل جنگیں ہوں گی شام میں بھی عیسائیوں کی حکومت قائم ہو جائے گی ہند وستان اور پاکستان کی بڑھتی رنجشیں اور کشمکش سے لگتا ہے کہ حالات غزوہ ہند کی طرف رخ کر رہے ہیں کیونکہ حضرت ابو ہریرہ رضِی اللہ تعالیٰ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہﷺ نے ارشاد فرمایامیری قوم کا ایک لشکر وقت ِآخر کے نزدیک ہند پر چڑھائی کرے گا اور اللہ اس لشکر کو فتح نصیب کرے گا یہاں تک کہ وہ ہند کے حکمرانوں کو بیڑیوں میں جکڑ کر لائیں گے اللہ اس لشکر کے تمام گناہ معاف کر دے گا پھر وہ لشکر واپس رخ کرے گا اور شام میں موجود عیسیٰ ابن مریم علیہ السلام کے ساتھ جا کر مل جائے گاآنے والے ادوار بڑے پرفِتن نظر آتے ہیں اور اس کے متعلق بھی نبی کریم صلی اللہ علیہ وآلہٖ و سلم نے فرمایا تھا کہ میری امت پر ایک دور ایسے آئے گا جس میں فِتنے اتنی تیزی سے آئیں گے جیسے تسبیح ٹوٹ جانے سے تسبیح کے دانے تیزی سے زمین کی طرف آتے ہیں،حضرت انس رضی اللہ عنہ مزید روایت کرتے ہیں کہ فتنوں میں سے ایک فتنہ یہ ہو گا کہ ایک زمانہ آئے گا کہ پورا دور اخلاقی برائیوں سے بھر جائے گا،آپﷺ کو فرماتے ہوئے سنا کہ قیامت کی نشانیوں میں سے یہ بھی ہے کہ علم اُٹھا لیا جائے گا جہالت پھیل جائے گی، زنا اور شراب پینے کی کثرت ہو جائے گی، مرد کم ہو جائیں گے، عورتیں بڑھ جائیں گی، اُن علامتوں میں سے جن کو فتنہ قرار دیا جا رہا ہے ایک یہ ہے کہ علم اٹھا لیا جائے گا،اس ذات کی قسم جس کے قبضہ قدرت میں میری جان ہے دنیا اس وقت تک ختم نہیں ہو گی جب تک کہ لوگوں پر ایسا دن نہ آجائے جس میں نہ قاتل کو یہ علم ہو گا کہ اس نے کیوں قتل کیا اور نہ مقتول کو یہ خبر ہو گی کہ وہ کیوں قتل کیا گیا، عرض کیا گیایارسول اﷲﷺ! یہ کیسے ہو گا؟ آپ ﷺنے فرمایا بکثرت کشت و خون ہو گا، قاتل اور مقتول دونوں اپنی بدنیتی اور ارادے کی وجہ سے دوزخ میں ہوں گے،نہ قاتل کو معلوم ہو گا کہ میں اس کو قتل کیوں کر رہا ہوں، نہ مرنے والے کو پتہ ہو گا کہ مجھے قتل کیوں کیا گیا، نہ اس کے ورثاء کو پتہ ہو گا، اس کا مطلب اجرتی قاتل، پیسے دے کر قاتلوں کے ٹولے خریدے جائیں گے، اجرت پہ قاتل ہوں گے، دھڑوں کے دھڑے اور ملک میں، معاشرے میں، اسلامی دنیا میں، عوام میں بدامنی پھیلانے کے لیے قتل عام ہو جائے گا، یہ سارا سلسلہ آپ کے سامنے ہے۔ ۔۔۔ معزز قارئین!!اس وقت دنیا بھر میں یہودیوں نے دنیا بھر میں فتنے فساد پھیلانے کا عمل تیز کردیا ہے ،اسرائیل اپنے آقا دجال کی آمد کیلئے راستہ سنوار رہا ہے اسی لیئے دنیا بھر میں یہودی کفار و مشرکین کیساتھ ملک کر سب سے زیادہ مسلمانوں کو نقصان پہنچانے کیلئے ہر قسم کا طریقہ اختیار کر رہا ہے، خاص کر ان بت پرست اور دیگر مذاہب کیساتھ قادیانیوں کے ذریعے مسلمانوں بلخصوص پاکستان کو نا تلافی نقصان پہنچانے کیلئے اپنی منفی کاروائیاں تیز کردی ہیں، پاکستان عالم اسلام میں واحد ایٹمی ملک ہے اور پاکستان کی افواج دنیا کی بہترین افواج میں سر فہرست ہے ، یہودیوں کو گوارا نہیں کہ پاکستان کیونکر مضبوط اور مستحکم رہے اسی سبب وہ ہمارے اندر سے ہی بے ضمیر، بے غیرت، غداروں کا متلاشی رہا ہے اس سلسلے میں کفار و مشرکین کو کوئی مشکل پیش نہیں آتی کیونکہ ہمارے درمیان مولانا فضل الرحمان، میاں نواز شریف، آصف علی زرداری، اسفندیار ولی، محمود خان اچکزئی اور الطاف حسین جیسے لوگ اور ان کی جماعتیں موجود ہیں تو نہ بھارت کو پھرکوئی خوف ہے اورنہ ہی یہودیوں کو، کیونکہ جب تک سہولت کاروں کی موجودگی ہوگی اس وقت تک یہودی اپنی منفی کاروائی کرنے میں مشکل سے دوچار نہیں ہوگی، یہودیوں کے ساتھ جس قدر بھارتی خفیہ ایجنسی را اور امریکی خفیہ ایجنسی سی آئی اے مسلسل پاکستان میں دراندازی کرتے چلے آرہے ہیں ان کی تمام کاروائیوں کا خاتمہ جہاں ہماری بہادر فوج اور بہترین خفیہ ایجنسی آئی ایس آئی مقابلہ کررہی ہے اور کامیابی سے دوچار ہورہی ہے اس پر پاک فوج کو سلام اور آئی ایس آئی کے گمنام بہادروں کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں لیکن اس کے ساتھ ساتھ ہماری عوام کو اپنی ذمہ داری سمجھ لینی چاہیئے کہ وہ اپنے درمیان دشمنانان پاکستان کے سہولت کاروں کو بے نقاب کرنے کیلئے اپنی افواج اور آئی ایس آئی کی مدد کرنی ہوگی ، پاکستان اور قوم کی بقا کیلئے اپنے اندر اتحاد، یقین، محکم، بھائی چارگی، اخوت، ایثار و قربانی کے جذبے کو ابھارنے کی ضرورت ہے، پاکستان حالات جنگ میں ہے ہر کوئی جنگی صورت حال سے باہر نہیں ، یہ بات بھی سمجھ لینی چاہیئے کہ چین، عرب، ترکی پاکستان کیساتھ کھڑے ہیں اور امید کی جاتی ہے کہ ایران بھی دنیا کے حالات کو سمجھتے ہوئے پاکستان کے ساتھ کھڑا ہوجائےگا۔۔۔معزز قارئین!!پاکستانیوں کو ہوش کے ناخن لینے ہونگے کیونکہ وقت فوقت اسرائیل اور بھارت پاکستان کو نقصان پہچانے کیلئے کوئی نہ کوئی منفی کاروائی کرتا رہے گا یہ بھی ممکن ہوسکتا ہے کہ پاکستان مخالف قوتیں پاکستان میں انار کی پھیلانے کی کوشش کرینگے، یا پھر مصنوعی زلزلے پیدا کرینگے، اسرائیل بھارت کیساتھ پاکستان کی ترقی کو روکنے کیلئے چھیڑ چھاڑ کرتا رہے گا تاکہ پاک چائنا کولیڈور متاثر ہوجائے لیکن انشا اللہ یہودیوں کی یہ سازشیں بھی ناکام ہوجائیں گی، درحقیقت اسرائیل نے دنیا بھر مے مسلمانوں کےخلاف جنگ کا اعلان کر رکھا ہے وہ چاہتا ہے کہ دنیا اس کی مغلوب ہوجائے، اپنی دولت اور طاقت کے بل بوتے پر امریکہ سمیت تمام غیر ملکیوں کو یکجا کرکے مسلمانوں کی نسل کشی پر اترا ہوا ہے، اسرائیل کے مسلمان مخالف مشن میں کئی ایسے مسلم ممالک اور مسلم لوگ بھی ہیں جنہیں اسرائیل کی ان عزائم کا عمل نہیں ، اسرائیلی وقت اپنے تابع ہونے والوں کو نظر انداز کررہی ہےلیکن یہ عارضی ہے، دجال کی آمد کیلئے حالات استوار کرنے میں اسرائیل کسی حد تک جاسکتا ہے، پاکستانی عوام کو یاد ہوگا کہ نوازریف سے لیکر آصف زرداری، الطاف حسین سے لیکر محمود اچکزئی اور مولانا فضل الرحمان سے لیکر اسفند یار ولی تک انھوں نے جس قدر پاکستانی کو معاشی طور پر کمزور کیا وہ مکمل غداری کے زمرے میں آتے ہیں، بے ضمیر، بے غیرت اور وطن فروشوں کا ساتھ بھی ایسے ہی لوگ دے رہیں ہیں جن کو اپنی ماں کا تقدس کا احساس نہیں ہوتا ، کیونکہ ملک بھی ماں سے کم نہیں۔۔معزز قارئین!! اسرائیلی قوتیں مسلمانوں کیلئے معاشی، اقتصادی ،مذہبی اور معاشرتی طور پر بدنامی کی زنجیر وں میں قید کرنا چاہتا ہے، اسرائیل کو گوارا نہیں کہ یورپین ممالک میں مسلم کمونیٹی کا رہنا محال بنانے کیلئے سازشوں کا عمل تیز کردیا ہے، اسرائیل بھول گیا ہے کہ اس کے فتنوں سے ایمان والے مسلمان قطعی گھبرانے والے نہیں ، اسرائیل بھول گیا ہے کہ مسلمان شہادت کو اپنے لیئے باعث افتخار اور خوش نصیبی جانتا ہے، اسرائیل بھول گیا ہے کہ مسلمانوں کے خلاف وہ جس قدر منفی کاروائیوں میں جتھ جائے لیکن ناکامی و نامرادی اس کا مقدر رہے گی کیونکہ دین اسلام واحد مذہب ہے جو بعد موت کی زندگی کا پتہ بتاتی ہے ، جس میں موت نے بعد ہی اصل زندگی کی روشنی بتائی گئی ہے ،دین اسلام میں بتایا گیا ہے کہ دنیا اللہ سبحان اللہ تعالیٰ کی عبادت اور اس کے حبیب ﷺ کی محبت کے حصول کیلئے ہے۔۔معزز قارئین!! اب ہمارے لیئے لمحہ فکریہ یہ ہے کہ ہم کس طرح خود کو دور فتن سے محفوظ بنائیں اس کیلئے ہمارے حکمرانوں کی بھی ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ جلد از جلد ریاست مدینہ کے نظام کو فوری مروج کریں اور نظام مصطفیٰ کو رائج کرنے کیلئے عملی اقدامات پر تیز کام کی ضرورت ہے،دور حاضر اور فتن دور میں پاکستان کواشد ضرورت ہے کہ وطن عزیز میں بیرون ملک اور بیرون طاقتوں کا الہ کار نہ بنیں، میڈیا کا قبلہ درست کرنے کیلئے حکومت پر دباؤ ڈالیں کہ معاشرے کا بگاڑ جس قدر میڈیا سے ہورہا ہے میڈیا کو اسلامی طریقہ کار پر کاربند کیا جائے۔ ہماری نئی نسل کی تباہی کا ذمہ دار میڈیا پر پیش کرنے والے غیر اخلاقی، غیر مہذب اور غیر اسلامی ڈرامے ہیں، اسکرپٹ رائٹرز کی تحریروں کو جانچ پڑتال سے گزارا جائے تاکہ معاشرے کی بربادی اور اخلاقی تباہی کا سبب نہ بنیں، دور حاضر میں کفار و مشرکین نے میڈیا کے ذریعے اپنے مشن کو پہنچانے اور مسلم پاک ذہنوں کو بگاڑ نے کیلئے میڈیا کو استعمال کررہا ہے ، میڈیا کے ذریعے مسلم مخالف قوتیں مکمل ایسے لوگوں کو سپورٹ کررہی ہیں جو ان کے مقاصد کو پورا کرنے کیلئے پیش پیش ہوں ، ہمیں اپنے اندر کے لوگوں پر خاص نظر رکھنی ہوگی اور قادیانیوں کی سرگرمیوں پر نظر رکھنی ہوگی تاکہ قادیانی مسلمانوں کو نا تلافی نقصان سے دوچار نہ کرسکیں ،اللہ پاکستان اور پاکستانی قوم کو مستحکم رکھے، پاکستانی قوم میں دین محمدی کے اصولوں پر کاربند رہنے کی توفیق عطا فرمائے۔۔۔معزز قارئین!! دور فتن میں شوشل میڈیا کے یو ٹیوب میں کئی ایسے گروپ ہیں جو دین اسلام اور پاکستان کے تحفظ اور بہتر مفادات کیلئے کام کررہے ہیں ان میں حقیقت ٹی وی، کھوجی ٹی وی قابل ذکر ہیں اور دیگر بھی بہترین کام کررہے ہیں اللہ انہیں اسی قدر کام کرنے اوراتفاق و اتحادکیساتھ قائم رہنے کی توفیق عطا فرمائے آمین ثما آمین ۔۔۔۔پاکستان زندہ باد، پاکستان پائندہ باد۔۔۔۔!!

Rate it:
Share Comments Post Comments
Total Views: 195 Print Article Print
About the Author: جاوید صدیقی‎

Read More Articles by جاوید صدیقی‎: 306 Articles with 129544 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language: