ایسے بھی لوگ ہیں زمانے میں

(Mukhtar Ahmed, Islamabad)

بیٹی کی شادی کی بات پکّی ہوئی تو جہیز اور دوسرے اخراجات کی فکر سر پر سوار ہو گئی- شام کو اچانک لڑکے کے ماں باپ آگئے- لڑکے کی ماں نے کہا کہ جہیز کے بارے میں بات کرنے آئے ہیں- اس بات نے سب کو پریشان کردیا- لڑکے کا باپ خاموش تھا، ماں بولی- "بہن ہم غریب لوگ ہیں، ساٹھ گز کے ایک مکان میں رہتے ہیں، کل ملا کر دو کمرے ہیں اور وہ بھی سامان سے بھرے ہوےٴ- ہمیں صرف لڑکی چاہیے، فرنیچر اور دوسرا سامان بالکل بھی نہیں- امید ہے آپ ہماری بات مان لیں گے"-
 

Rate it:
Share Comments Post Comments
Total Views: 129 Print Article Print
About the Author: Mukhtar Ahmed

Read More Articles by Mukhtar Ahmed: 59 Articles with 34699 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language: