ایسا ہی ہوتا ہے

(Mukhtar Ahmed, Islamabad)

عمررسیدہ مرد نے لان میں رکھی کرسی اٹھا کر دور پھینکی اور گرج کر بولا- " میں یہاں آلو لگاؤں گا"-
"یہاں صرف شکرقندی لگے گی"- عورت بھی چنچنا کر چلائی اور میز الٹ دی- چائے کے برتن گھاس پر گر گئے- مرد نے غصے سے اس کا بازو پکڑا اور گھسیٹتا ہوا کوٹھی کے اندر لے گیا-
اگلے روز میں نے دیکھا وہ ہی مرد کدال سے زمین نرم کر رہا ہے- عورت کرسی پر بیٹھی چائے بنا رہی تھی- میں نے چوکیدار سے پوچھا- "صاحب کیا کررہے ہیں؟"-
اس نے جواب دیا "شکرقندی کے بیج لگا رہے ہیں"-

Rate it:
Share Comments Post Comments
Total Views: 206 Print Article Print
About the Author: Mukhtar Ahmed

Read More Articles by Mukhtar Ahmed: 59 Articles with 34347 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language: