ساتھ نہ دینا پڑے

(Mukhtar Ahmed, Islamabad)

دولہا اور دلہن اپنے کمرے میں تھے- رات آدھی سے زیادہ گزر چکی تھی- دولہا کے ماں باپ اپنے کمرے میں باتوں میں مصروف تھے-
"بیگم یاد ہے تم بھی ایک روز ایسے ہی اس گھر میں آئی تھیں"-
دولہا کی ماں مسکرانے لگی-
دولہا کے باپ نے پھر کہا "خدا بخشے اماں کو- ان کا تحقیر آمیز رویہ تمہیں یاد ہے؟"
لڑکے کی ماں کو سب یاد تھا- بولی- "اس برے وقت میں آپ کے ابّا نے میرا بہت ساتھ دیا تھا"-
"بس بیگم تم اس بات کا خیال رکھنا کہ مجھے کبھی بہو کا ساتھ نہ دینا پڑے"-

Rate it:
Share Comments Post Comments
Total Views: 209 Print Article Print
About the Author: Mukhtar Ahmed

Read More Articles by Mukhtar Ahmed: 59 Articles with 34338 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language: