چاند گرہن --- قسط 1

(Nadia khan, Rawalpindi)

رات آدھی سے زیادہ بیت چکی تھی ۔۔۔۔۔۔ دسمبر کی سردی اپنے عروج پر تھی .۔۔,۔ ٹھنڈی ہوائیں چل رہی تھیں ۔۔۔۔. ہلکی ہلکی بوندا باندی ہو رہی تھی ۔۔۔۔. خلیل کسی چیز کی پرواہ کیے بغیر . آگے بڑھا اور دروازے پہ ہاتھ رکھا ۔۔۔۔۔. دروازے پے ہاتھ رکھتی ہی خلیل کو تھوڑا سا قرار آیا ۔۔۔۔۔. کچا مقام اور یہ ٹوٹا پھوٹا دروازہ خلیل کے لئے بہت خاص تھا ۔۔۔۔۔۔اس چار دیواری کے اندر اس کی دنیا بستی تھی ۔۔۔،.صبح سے لے کر شام تک بے قرار روح کی طرح اِدھر اُدھر بھٹکتا رہتا تھا ۔۔۔۔۔۔. رات آنے کے لیے وہ ایک ایک پل گنتا رہتا تھا ۔۔۔۔. خلیل کا حال بھی اس پرندے کی جیسا تھا ۔۔۔۔۔. وہ پرندہ سورج کو قریب سے دیکھنے کی آرزو کر بیٹھی تھی ۔۔۔۔۔۔۔ اس کو جنون تا سورج کے پاس جانے کی ۔۔۔۔۔. وہ سورج کو دیکھنے کے لیے سفر پر نکل جاتی ہے .۔۔۔۔۔۔ وہ کئی دن فضاؤں میں سفر کرتی اڑتی رہتی ہے۔۔۔۔۔۔ اس امید سے کہ کسی نہ کسی دن میں سورج کے پاس پہنچ جاؤں گی ۔۔۔۔۔. لیکن ایسا کیسے ہو سکتا ہے . ۔۔۔۔ سورج کی پاس پہنچنے کی آرزو کس کی پوری ہوتی ہے سورج کی تپش اتنا زیادہ ہوتا ہے . ۔،۔۔ دور سے ہی اس تپش کی وجہ سے پرندے کی پر جل جاتی ہے ۔۔۔۔۔. پرندے کی پر جل کر وہ واپس زمین پر آ کر گر جاتی ہے۔۔۔۔۔۔ . لیکن اس کی ہمت نہیں ہارتی .۔۔۔۔۔۔ وہ سوچتی ہے کہ میں انتظار کر لیتی ہوں۔۔۔۔۔ . جب میری نیا پر نکل آئے گی .۔۔۔۔۔۔ میں دوبارہ سورج کو دیکھنے کے لئے فضاؤں میں اڑ جاؤں گی . ۔۔۔۔۔ لیکن ہر بار ایسا ہوتا ہے .۔۔۔۔۔ سورج کے پاس پہنچنے سے پہلے۔۔۔۔۔ . پرندے کی پر جل جاتی ہے اور وہ واپس آ کر زمین پر گر جاتی ہے .۔۔۔۔۔ لیکن اس کی امید ختم نہیں ہوتی ۔۔۔۔۔. وہ انتظار کرنے بیٹھ جاتی ہے ۔۔۔۔. وہ اپنے پر نکلنے کی انتظار میں بیٹھ جاتی ہے ۔۔۔۔۔. خلیل کا بھی یہی حال تھا .۔۔۔۔وہ ہر رات آتا ہے اس امید سے . ۔۔۔۔ کی کسی نہ کسی طرح سے فاطمہ کو دیکھ لو اور مل لوں . . . . . .
 

Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: Nadia khan

Read More Articles by Nadia khan: 3 Articles with 1423 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
13 Oct, 2019 Views: 796

Comments

آپ کی رائے