چاند گرہن قسط نمبر ٣

(Nadia khan, Rawalpindi)
چاند گرہن قسط نمبر ٣

اسرار علی کا بیٹا معسود شروع سے ہی فاطمہ کو پسند کرتا تھا ۔۔۔۔۔۔ لیکن فاطمہ کو سخت نفرت تھا معسود سے ۔۔۔۔۔۔۔کیونکہ سب جانتے تھیں ۔۔۔۔کے معسود کتنا ذلیل انسان ہے ۔۔۔۔۔۔جہاں کہی کوئی غلط کام ہوتا ۔۔۔۔۔معسود سب سے پہلے وہاں پہنچ جاتا تھا۔۔۔۔۔ہر لڑکی کی پیچھے پڑا رہتا تھا ۔۔۔۔۔۔۔فاطمہ نے بہت انتظار کیا کے کسی نا کسی دن معسود سارے برےکام چھوڑ دے گی میری خاطر لیکن یہ سب غلط تھا ایسا کچھ نہیں ہوا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔فاطمہ نے تو بھابھی بھائی ابو ان سب کو بتا دیا تھا کے مجھے معسود سے شادی نہیں کرنی ۔۔۔۔۔۔۔۔لیکن کسی نے بھی ان کی بات نا سنی ۔۔۔۔ امی تو بچپن میں ہی گزر گئی تھی ۔۔۔۔۔اسرار علی نے آکر عباس علی سے کہا کے ہمیں اب فاطمہ اور معسود کی شادی کرنی چاہیی ۔۔۔۔۔۔عباس علی توڑی دیر خاموش ہوا وہ اپنی بیٹی کی وجہ سے شادی سے انکار کرتا تو کیسے کرتا ۔۔۔۔۔۔۔۔وہ اپنے بچو سے ہمیشہ کہتا رہتا تھا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔کے میں کبھی اپنے بڑے بھائی کے سامنے کسی بھی چیز سے انکار نہیں کرسکتا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔،کیونکہ ان کی اتنے سارے احسان ہیں ہم پہ ۔۔۔۔میں نے آج تک کوئی کام نہیں کیا میرا بھائی ہی اٹھاتا رہا میرے گھر کی سارے خرچے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔،۔تو اب میں کیسے شادی سے انکار کردو ۔۔۔۔وہ کچھ سوچتا ہوا۔۔۔ اپنے بھائی سے کہنے لگا ۔۔۔۔بھائی جان جب آپ کی مرضی ہوئی تو آجانا اور لے جانا بارات ۔۔۔۔وہ یہ سنتا ہوا . بہت خوش ہوا۔۔۔۔۔۔اور شادی کی تیاری کرنے لگے ۔۔۔۔۔۔دو دن گزر جانے کے بعدمعسود خود آیا فاطمہ کے پاس اور خوشی سے کہنے لگا کے فاطمہ کچھ دنوں بعد ہماری شادی ہے ۔۔۔۔یہ سنتے ہوئے فاطمہ کو بہت برا لگا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔اور اس نے معسود سے کہا ۔۔۔کے مجھے آپ سے کوئی شادی نہیں کرنی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔اور خدا کا وسط دے رہوں کے جاو اپنے گھر والوں سے کہو کے ہم یہ شادی نہیں کر سکتے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔معسود یہ بات سنتے ہی غصے سے پاگل ہوگیا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔،۔اور تیزی سے اگے بڑا اور فاطمہ کے منہ پر ایک زوردار تپڑ دی ۔۔۔اور وہ لڑکڑاتی ہوئیں۔۔۔، جاکر دیور سے لگی ۔۔۔۔۔۔۔اور معسود فاطمہ کے قریب ایا اور ان کے ہاتھ کو مضبوطی سے پکڑا اور اس کے کان میں سرگوشی کرتی ہوئی کہا ۔۔۔۔کے انتظار کرنا اپنے دلہا کا تین دن بعد بارات لے کر آرہا ہوں تیار رہنا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔؟؟؟؟
 

Rate it:
Share Comments Post Comments
Total Views: 95 Print Article Print
About the Author: Nadia khan

Read More Articles by Nadia khan: 3 Articles with 506 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language: