پچھلے گیارہ سالوں سے مختلف عیدیں اور رمضان جہاز میں گزاری ہیں… جانیے بحری جہاز کا عملہ سحر و افطار کا اہتمام کیسے کرتا ہے؟

 
روز گھر والوں کے ساتھ مزیدار افطار کا لطف اٹھاتے ہم کبھی سوچتے بھی نہیں کہ دنیا میں ایسے لوگ بھی ہیں جو روزگار کی وجہ سے ان خوبصورت پل سے محروم رہ جاتے ہیں۔ جہاز رانی بھی ایک ایسا ہی شعبہ ہے جس میں کام کرنے والے لوگوں کو رمضان میں چھٹی نہیں ملتی البتہ عملے کے لوگ جذبہ ایمانی سے سرشار پھر بھی روزے رکھتے ہیں اور جہاز پر ہی انوکھے انداز میں رمضان کا مہینہ گزارتے ہیں۔ آئیے جانتے ہیں سمندر کی لہروں پر ڈولتے جہاز میں موجود لوگ رمضان کا مہینہ کس طرح گزارتے ہیں اور افطار کے لئے چیزیں کہاں سے لاتے ہیں۔
 
گھر جیسا ماحول بنانے کی کوشش کرتے ہیں
سید عون نامی ایک سی مین نے نجی چینل سے گفتگو کے دوران بتایا کہ انھوں نے پچھلے گیارہ سالوں سے مختلف عیدیں اور رمضان جہاز میں گزاری ہیں۔ سید عون بتاتے ہیں کہ جہاز کے پورے کی کوشش ہوتی ہے کہ گھر جیسا ماحول بنایا جائے اس کے لئے ایک ساتھ سحری اور افطار کا اہتمام کرتے ہیں۔
 
جہاز کے افطار میں بھی فروٹ چاٹ اور پکوڑوں کا اہتمام
سید عون زیدی کہتے ہیں کہ رمضان سے پہلے وہ جس ملک میں ہوتے ہیں وہاں سے کچے پھل خرید لیتے ہیں اور انھیں پکانے کے لئے مضصوص کمرے میں رکھ دیتے ہیں اس طرح سمندی جہاز کے سفر میں بھی کسی طرح پکوڑے اور فروٹ کا انتظام ہوجاتا ہے۔
 
سحر اور افطار کا وقت کیسے طے کرتے ہیں
اڑنے والے جہاز کی طرح سمندر جہاز میں بھی سحر ، افطار اور نماز کا کوئی مقررہ وقت نہیں ہوتا کیونکہ جہاز مسلسل چلتے ہوئے ایک جگہ سے دوسری جگہ پر جارہا ہوتا ہے جہاں کا ٹائم زون مختلف ہوتا ہے اس لئے نماز اور سحر و افطار کا وقت جہاز کا عملہ خود طے کرکے سحر و افطار کرتے ہیں۔
Most Viewed (Last 30 Days | All Time)
21 Apr, 2021 Views: 1657

Comments

آپ کی رائے