دل چاہے سفر ختم ہی نہ ہو… ڈرائیونگ کے لیے دنیا کے چند انتہائی خوبصورت راستے

 
دنیا میں کچھ سڑکیں ایسی ہیں، جو شاندار پہاڑوں، سرسبز جنگلات، وسیع و عریض میدانوں، سمندری ساحلوں اور کبھی کبھار اٹھتے ہوئے بادلوں سے گزرتی ہیں۔ ایسے ہی چند خوبصورت راستے یہ ہیں۔
 
روٹ 66
یہ دنیا کی مشہور سڑکوں میں سے ایک ہے۔ روٹ 66 تقریباً چار ہزار کلومیٹر پر محیط ہے۔ اسے امریکا کا ایسا پہلا مسلسل ہموار راستہ سمجھا جاتا ہے، جو مشرق اور مغرب کو ملاتا ہے- یہ شکاگو اور الینوائے کو سانتا مونیکا اور کیلیفورنیا سے جوڑتا ہے۔ یہ راستہ سیاحوں میں خاصا مقبول ہے۔
 
آئسفیلڈز پارک وے
آئسفیلڈز پارک وے کو ہائی وے 93 کے نام سے بھی جانا جاتا ہے۔ کینیڈا کے پہاڑوں سے گزرتا ہوا یہ راستہ دل موہ لینے والا ہے۔ یہ راستہ قدیم گلیشیئرز، آبشاروں، جھاڑیوں اور زمرد جھیلوں سے ہو کر گزرتا ہے۔ لیکن محتاط رہیے، اس راستے پر واقع پٹرول اسٹیشن بہت دور دور واقع ہیں۔
 
پین امریکن ہائی وے
حیران کن طور پر دو لاکھ ستاون ہزار پانچ سو کلومیٹر طویل یہ راستہ پورے امریکی براعظم پر پھیلا ہوا ہے۔ یہ امریکی ریاست الاسکا کو جنوبی امریکی علاقوں سے ملاتا ہے۔ یہ راستہ بیس مختلف ممالک سے ہو کر گزرتا ہے۔ راستے میں آنے والے جنگلات، صحرا، پہاڑ اسے مزید خوبصورت بنا دیتے ہیں، جیسے کہ پیرو کی یہ تصویر۔
 
گرینڈ ایلپس روٹ
پہاڑوں سے گزرتا یہ روٹ جنیوا جھیل سے گزرتا ہوا فرانسیسی علاقوں تک جاتا ہے۔ سات سو کلومیٹر طویل یہ راستہ فرنچ ایلپس سے گزرتا ہے اور کئی شاندار پہاڑی درے راستے میں آتے ہیں۔ پہاڑ بادلوں میں گھرے نظر آتے ہیں اور شاندار مناظر یقینی ہیں۔ یہ راستہ موسم کے حالات دیکھتے ہوئے جون سے اکتوبر کے درمیان کھولا جاتا ہے۔
 
روسفیلڈ پینوراما روڈ
جرمنی کے جنوب مشرقی باویریا کے پہاڑی علاقوں میں ڈرائیونگ یادگار رہتی ہے۔ یہ روڈ الپائن کے انتہائی خوبصورت نظارے پیش کرتا ہے۔ موٹرسائیکل اور سائیکل سواروں میں مشہور یہ راستہ تقریباً سارا سال ہی کھلا رہتا ہے۔ اس سڑک کے علاوہ ہائیکرز بھی شوق سے اس علاقے میں آتے ہیں۔
 
امالفی کوسٹ ڈرائیو
اٹلی کے امالفی ساحل کے ساتھ ساتھ چلنا اور پہاڑوں کو قریب سے گلے لگانا، یہ قدرتی ڈرائیو خلیج سالیرنو کے شاندار نظارے پیش کرتی ہے۔ 50 کلومیٹر کا سفر آپ کو کئی وادیوں کے پار بھی لے جائے گا، جو ایک ناقابل فراموش تجربہ ہے۔
 
چیپمین پیک ڈرائیو
چیپمین پیک ڈرائیو راستہ جنوبی افریقہ میں بحر اوقیانوس کے ساحل کے ساتھ ساتھ چلتا ہے۔ یہ راستہ ہاؤٹبے کی ماہی گیری والی بندرگاہ کو نوردھوک گاؤں سے جوڑتا ہے۔ تیز ہواؤں کے درمیان سے گزرنے والا یہ راستہ بیسویں صدی کے اوائل میں ریت کے نسبتا نرم پتھروں کو تراش کر بنایا گیا تھا۔
 
Partner Content: DW Urdu
Most Viewed (Last 30 Days | All Time)
26 Sep, 2021 Views: 2711

Comments

آپ کی رائے