صدر عارف علوی اکیلے آہنی دیوار۔۔ حکومت کی کونسی چال ناکام بنا دی؟

 
پاکستان تحریک انصاف کے حکومت ختم ہونے کے باوجود صدر مملکت کے عہدے پر براجمان ڈاکٹر عارف علوی حکومت کے سامنے دیوار بن گئے، حکومت کے کئی منصوبوں اور چالوں پر پانی پھیر دیا۔
 
پی ٹی آئی حکومت اور عارف علوی
تحریک عدم اعتماد کے نتیجے میں اپریل میں پاکستان تحریک انصاف کی حکومت ختم ہونے کے باوجود پی ٹی آئی کے عارف علوی صدر مملکت کے عہدے پر براجمان ہیں جبکہ موجودہ حکومت مواخذے کیلئے اکثریت نہ ہونے کی وجہ سے انہیں عہدے سے ہٹانے سے قاصر ہے۔
 
شیخ زید بن النہیان کا انتقال
وزیر اعظم شہباز شریف اور وزیر خارجہ بلاول بھٹو زرداری کے علاوہ چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ نے متحدہ عرب امارات کا دورہ کر کے سابق صدر شیخ زیدبن النہیان کی وفات پر تعزیت کا اظہار کیا- تاہم بیشتر سیاسی رہنماؤں نے پاکستان میں امارات کے سفارتخانے میں جاکر اظہار افسوس کیا۔
 
 
دفتر خارجہ کی تجویز
متحدہ عرب امارات کے صدر شیخ خلیفہ بن زید النہیان کے انتقال پر دفتر خارجہ نے صدر عارف علوی کو ایک ایڈوائس بھجوائی جس میں کہا گیا کہ پاکستان اور متحدہ عرب امارات کے دیرینہ اور قریبی تعلقات ہیں اور انتقال کر نے والے صدر شیخ خلیفہ بن زید النہیان کے دور میں یہ تعلقات مزید مضبوط ہوئے۔
 
شیخ خلیفہ بن زید النہیان کے انتقال پر کافی ممالک کے صدور وہاں جا کر تعزیت کر رہے ہیں لہٰذا دونوں ممالک کے تعلقات کی نوعیت کے پیش نظر صدر مملکت کو متحدہ عرب امارات جاکر ان کی قیادت کے ساتھ سابق صدر شیخ خلیفہ بن زید النہیان کی وفات پر تعزیت کر نی چاہیے- تاہم صدر مملکت نے دفتر خارجہ کی اس ایڈوائس کو نظر انداز کر دیا اور اسلام آباد میں سفازتخانے جاکر تعزیت کی۔
 
گورنر پنجاب
مرکز اور پنجاب میں حکومت کی تبدیلی کے باوجود پنجاب میں پی ٹی آئی اور مسلم لیگ ن کے درمیان رسہ کشی جاری ہے۔ پی ٹی آئی کے گورنر عمر سرفراز چیمہ نے عدالتی احکامات کے باوجود نئے وزیراعلیٰ حمزہ شہباز سے حلف لینے سے انکار کردیا تھا جس پر عدالت نے اسپیکر قومی اسمبلی کو حلف لینے کا حکم دیا۔
 
حکومت نے وزیراعظم کی جانب سے دو بار عمر سرفراز چیمہ کو گورنر پنجاب کے عہدے سے ہٹانے کی سمری صدر مملکت نے مسترد کردی تھی جس پر حکومت نے گورنر پنجاب کو ازخود عہدے سے ہٹانے کا نوٹیفکیشن جاری کردیا تھا- گو کہ عمر سرفراز چیمہ اس وقت گورنر ہاؤس میں مقیم نہیں ہیں تاہم انہوں نے برطرفی کا نوٹیفکیشن عدالت میں چیلنج کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔
 
 
حکومت کی چال
ملک کی مجموعی سیاسی صورتحال بالخصوص پنجاب میں نئے گورنر کی تعیناتی کے معاملے پر وزیراعظم ہاؤس اور ایوان صدر کے درمیان اتفاق رائے نہ ہونے کی وجہ سے صدر نے غیر ملکی دورہ نہیں کیا اور اگر صدر غیر ملکی دورے پر چلے جاتے تو چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی قائم قام صدر بن جاتے اور گورنر پنجاب بلیغ الرحمن کی تعیناتی کی سمری کی منظوری دے دی جاتی- اس لئے صدر عارف علوی نے دفتر خارجہ کی ایڈوائس کو نظر انداز کر دیا۔
Most Viewed (Last 30 Days | All Time)
20 May, 2022 Views: 1674

Comments

آپ کی رائے