مونگ پھلی کے قیمتی فوائد

(Dr Ch Tanweer Sarwar, Lahore)

قارئین!امید ہے آپ سب لوگ خیریت سے ہوں گے ۔دوستو آج میں نے سردی کے حوالے سے آپ کے لئے مونگ پھلی کے فوائد پر مختصر مضمون لکھنے کا ارادہ کیا ہے تاکہ آپ سردیوں میں مونگ پھلی تو کھاتے ہی ہیں اس کے فوائد کو بھی جان جائیں۔ میں امید کرتا ہوں کہ آپ اس مضمون کو بھی ضرور پسند کریں گے۔ چلیں اپنے مضمون کی طرف بڑھتے ہیں۔
 


قارئین!سردی کا موسم شروع ہو چکا ہے اور لوگ سردی کے موسم سے بچنے کے لئے جہاں گرم کپڑوں کا استعمال کرتے ہیں وہاں پر طرح طرح کے پکوان اور میوہ جات کا استعمال بھی کرتے ہیں تاکہ سردی کی شدت سے بچا جا سکے۔ آج میں آپ کے سامنے انہی میوہ جات میں سے ایک میوہ جسے ہم مونگ پھلی کے نام سے جانتے ہیں اس کے فوائد کا ذکر کروں گا۔ مونگ پھلی سردیوں میں استعمال کیا جانے والا سب سے زیادہ پسندیدہ میوہ ہے اور اسے ہر عمر کے خواتین و حضرات پسند کرتے ہیں۔ مونگ پھلی ذائقہ کے لحاظ سے بھی منفرد ہے۔مونگ پھلی کو غریبوں کا بادام بھی کہا جاتا ہے۔مونگ پھلی کسی بھی موسم میں کھائی جا سکتی ہے لیکن خاص طور پر سردیوں میں سورج کے غروب ہوتے ہی لوگ اس کو کھانا پسند کرتے ہیں اس کو سردی میں کھانے کا اپنا ہی ایک الگ مزہ ہے۔

مونگ پھلی ایک پھلی دار پودا ہے لیکن اس کا شمار میوہ جات میں ہی ہوتا ہے۔مونگ پھلی کو کھانے کے علاوہ اس کا تیل بھی نکالا جاتا ہے جو مختلف کھانوں، ڈبل روٹی، کیک اور ادویات وغیرہ میں شامل کیا جاتا ہے۔مونگ پھلی کو لوگ کچا، بھون کر اور ابال کر استعمال کرتے ہیں اس کے علاہ اس کو محتلف پکوانوں میں شامل کر کے ذائقہ دار پکوان بنائے جاتے ہیں۔خاص طور پر میٹھے پکوانوں میں مونگ پھلی کا استعمال بہت زیادہ کیا جاتا ہے۔

اس کے علاوہ اس کے بے شمار طبعی فوائد بھی ہیں جن کا ذکر میں آگے چل کر کروں گا۔ دوستو!مونگ پھلی کو زیادہ پکایا نہ جائے اس سے اس میں موجود کیمائی مادے ضائع ہو جائیں گے۔ مونگ پھلی تمام میوہ جات میں سب سے سستا میوہ ہے جسے امیر و غریب بآسانی خرید سکتا ہے۔ مونگ پھلی اخروٹ کا متبادل ہے جو اخروٹ نہ خرید سکتے ہوں وہ مونگ پھلی خرید کر اخروٹ والے تمام اجزاء کا فائدہ اٹھا سکتے ہیں۔
 


اگر طبعی لحاظ سے دیکھا جائے تو مونگ پھلی میں مندرجہ ذیل خصوصیات ہیں:

٭مونگ پھلی میں پروٹین، کیلشیم، وٹامن ای، وٹامن بی ون، B6، اور فاسفورس شامل ہے۔
٭مونگ پھلی مقوی اعصاب ہے۔
٭مونگ پھلی دبلے اور کمزور افراد کے لئے مفید ہے۔
٭ذیابیطس ٹائپ ٹو میں مونگ پھلی کا استعمال فائدہ مند ہے۔
٭مونگ پھلی کے استعمال سے انسولین کی سطح برقرار رہتی ہے۔
٭مونگ پھلی میں موجود فولاد خون کے نئے خلیئے بنانے میں مددگار ہے۔
٭باڈی بلڈر اس سے بھر پور فائدہ لے سکتے ہیں۔
٭خارش ہونے کی صورت میں مونگ پھلی کا استعمال نہ کیا جائے۔
٭کینسر میں محفوظ رکھنے میں ہماری مدد کرتی ہے۔
٭کچی مونگ پھلی کی بجائے ہمیشہ بھنی ہوئی مونگ پھلی کھائی جائے۔
٭مٹھی بھر مونگ پھلی کافی ہوتی ہے لیکن اگر آپ زیادہ بھی کھا لیتے ہیں تو آپ کا وزن نہیں بڑھے گا۔
٭مونگ پھلی میں موجود وٹامنز ہڈیوں اور دانتوں کو مضبوط بناتے ہیں۔
٭مونگ پھلی معدے اور پھیپھڑے کے لئے فائدہ مند ہے۔دونوں اعضاء کے لئے طاقت کا ذریعہ ہے۔
٭مونگ پھلی میں ایسے اینٹی آکسی ڈنٹ پائے جاتے ہیں جو غذائی لحاظ سے سیب چقندری اور گاجر سے زیادہ ہیں۔
٭اگر آپ کے بال گر رہے ہیں تو مونگ پھلی کا استعمال ضرور کریں۔
٭حاملہ خواتین مونگ پھلی کھانے سے پرہیز کریں۔الرجی ہونے کا خطرہ ہوتا ہے۔

Disclaimer: All information is provided here only for general health education. Please consult your health physician regarding any treatment of health issues.

Reviews & Comments

مونگ پھلی تو میری پسندیدہ چیز ہے میں بہت کھاتا ہوں گھر والے کہتے ہے کہ کم کھایا کرو زیادہ کھانے سے نقصان دہ بھی ہوتی ہے
By: عاصم علی, Haripur on Dec, 05 2018
Reply Reply
0 Like
my facebook page below:
www.facebook/hdrtanweer
By: H/Dr Ch Tanweer Sarwar, Lahore on Nov, 21 2015
Reply Reply
0 Like
yar moong phali se mujhe alergy hai jab bhi khata hoon,khansi start ho jati hai........wese phal umda hai taste ke lehaz se chocolate ke sath bara achha lgta hai mong phali ka taste.
By: azeem, lahore on Nov, 16 2015
Reply Reply
1 Like
Language:    
Delicious, crunchy, and nutty peanuts are one of the popular oil seeds known to humankind since centuries. The kernels are enriched with many noteworthy health-benefiting nutrients essential for optimum health and wellness.They are actually legumes but carry almost all the qualities of other popular edible kernels such as pistachio, almonds, etc.