یہ وہ کتاب ہے جسمیں کچھ شک نہیں۔۔۔۔۔!!!

(naila rani, karachi)
دو ستو۔۔۔! قرآن پا ک وہ کتاب ہے جسمیں کچھ شک نہیں ہے یعنی کہ اس میں جو کچھ لکھا ہے وہ سو فیصد سچ ہے -یہ ایک سچی کتا ب ہے -قر آ ن پا ک کی حفا ظت کا ذ مہ اللہ تعا لی نے خود لیا ہے -یہ ہی و جہ ہے کہ چو دہ سو سال گزر جا نے کے با وجود ا سمیں ایک ز یر ز بر یا پیش کی غلطی یا ردو بدل نہ ہو سکا جب کہ با قی جتنی بھی ا لہا می کتا بیں ہیں وہ تبد یل ہو چکی ہیں قرآن پا ک چو نکہ اللہ کے محبو ب کے دل پر نا ز ل ہو ا -ا سی لیئے اس کتاب کا مطا لعہ کر نے والا ہر دل بدل جا تا ہے سنور جا تا ہے ۔زندہ ہو جا تا ہے -مردہ دلی ہی ہر مر ض کو جنم د یتی ہے اور قر آ ن پاک کا مطا لعہ کر نے وا لے کے ا ندر کبھی مر دہ د لی پیدا نہیں ہو سکتی قرآن پا ک کا مو ضو ع ا نسان ہے -اسی لیئے یہ کتا ب ا نسا نیت کا در س بھی د یتی ہے -اور د نیا کے تما م بنی نو ع ا نسا ن کو ا من سلا متی اور ا خوت و بھا ئی چا رے کا پیغام د یتی ہے

دو ستو۔۔۔! قرآن پا ک کو سمجھ کر پڑ ھنے وا لے بے ا ختیار پکار ا ٹھتے ہیں کہ وا قعی یہ کتا ب کی شکل میں ایک معجزہ ہے -وا قعی یہ ایک سچی کتا ب ہے -اس کتاب کی تخلیق کسی انسان کے بس کی با ت نہیں ہے -اس کتاب کا حرف حرف ،لفظ لفظ ،اور ہر ہر جملہ ا پنی مثال آپ ہے د نیا کے بڑے بڑے مصنف بڑے بڑے محقق بڑے بڑے تخلیق کار اس کتاب کو پڑ ھنے کے بعد پکا ر ا ٹھے کہ ہا ں وا قعی اس کتاب میں کو ئی شک نہیں ہے اور یہ کسی ا نسان کا لکھا ہوا کلا م نہیں ہو سکتا -قرآن پا ک میں ایک مکمکل ضا بطہ حیات ہے -جو عین فطر تکے ا صولو ں کے مطا بق ہے -قرآن پا ک پر چو دہ سو سال سے تجر با ت ہو ر ہے ہیں -اس کتاب کے لفظ لفظ پر تحقیق کر نے کی کو شش کی گئی -مگر انسان مکمل طور پر تو کا میاب نہ ہو سکا کیو نکہ اللہ نے بہت سی با تیں ا نسانو ں سے مخفی ر کھی ہیں -جن کے معنی و مطا لب وہ سمجھ نہ پا ئے -اور جہا ں تک سمجھ سکے -و ہا ں تک تو لا جواب ہو کر بیٹھ گئے اور یہ ما ن لینے پر مجبور ہو گئے کہ وا قعی یہ ا للہ کا کلام ہے۔۔۔۔۔۔۔۔

دو ستو ۔۔۔۔! قرآن پاک کو جھٹلا نے وا لو ں نے جب اس کتاب کو جھٹلا نے کی کو شش کی تو وہ خود جھٹلا ئے گئے اس و قت سب سے ز یا دہ بد قسمت قوم مسلمان ہیں -جنہیں اللہ تعا لی نے قرآن پاک جیسی نعمت سے نوازا -جس میں ز ندگی کو جینے کے طر یقے بتا ئے -مگر مسلمان بد قسمتی سے ز ند گی گزار رہے ہیں -اور اس کتاب سے فا ئدہ ا ٹھا نے وا لے ز ند گی کو نی ر ہے ہیں -قرآن پا ک میں یو ں تو تما م علوم اور مخلوق کے با رے میں بات کی گئی ہے مگر کیو نکہ ا نسان اس کا ئنا ت میں اہم تر ین مخلو ق ہے جس کے با رے میں شا عر مشر ق بھی کہ گئے کہ یہ جہا ں ہے تیرے لیئے تو نہیں ہے جہا ں کے لیئے -ا نسان کی ا ہمیت اس کا ئینا ت میں اتنی ہی ہے جتنی جسم میں پا نی کی ہو تی ہے اسی و جہ سے اللہ تعا لی نے اس کتاب کا مو ضو ع ا نسان کو بنا یا ہے اور پھر اسی کتاب میں یہ بھی بتا د یا گیا ہے کہ ا نسان ا شر ف المخلو قات میں سے ہے -اس لیئے تما م مخلو ق سے ز یا دہ ا حترام اور محبت انسان کو انسان سے ہو نا چا ہیئے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

دوستو۔۔۔۔۔۔!قرآن پاک کو اللہ جل شانہ نے ہم تک اپنے محبو ب کے ذر یعے پہنچا یا ہے اور اللہ کے محبو ب محمد صلی اللہ علیہ و سلم اس کتاب کے معلم بن کر ہمیں سمجھا نے ہمیں کھول کھول کر قرآن کی آ ئیتو ں کو بتا نے کے لیئے اس د نیا میں تشر یف لا ئے غور طلب بات ہے اللہ کا ہم پر کس قدر ا حسان ہے کہ اس نے نہ صرف کتاب ہم تک پہنچا ئی بلکہ پہلے ہمیں ز ندگی جیسی نعمت دی پھر اس ز ندگی کو بہتر طر یقے سے گزارنے کے طور طر یقے سکھا نے کے لیئے کتاب قرآن پاک بھیجی اور اس کتاب کے نا ز ل ہو نے سے پہلے ایک سکھا نے والے معلم کو بھیجا جو کہ اللہ کے نز دیک محبو ب تر ین اور معصوم تر ین ہستی تھی اس ہستی نے ہمیں اس کتاب کا حرف حرف کھول کھول کر بتا یا اور سکھا یا اور اس کتاب کی تشر یح ا حا دیث کی صورت میں آج بھی ہما رے پا س بغیر کسی ردوبدل کے جو ں کی تو ں محفو ظ ہے اور تم ا پنے ر ب کی کو ن کو نسی نعمتو ں کو جھٹلا و گے ۔۔۔۔۔۔

دو ستو سنو ۔۔۔۔!یہ کتاب قرآن پا ک تمہا رے لیئے ایک نعمت ہے جو د نیا اور آ خرت میں تمہا رے لیئے فا ئدہ مند ہے اس کتا ب پر عمل کر نے وا لے کی د نیا اور آ خرت دو نو ں سنور جا تی ہے او نہ ما ننے وا لو ں کے لیئے نہ د نیا میں سکو ن ہے نہ آ خرت میں آرا م -قرآن پا ک بے شک د نیا میں سب سے ز یا دہ پڑ ھی جا نے وا لی کتا ب ہے مگر بد قسمتی سے اس دور میں سب سے ز یا دہ نا سمجھ کر پڑ ھی جا نے وا لی کتا ب بھی قرآن پا ک ہے -خدا را اس کتاب کو سمجھ کر پڑ ھیئے -جب تک اس کتا ب کو سمجھ کر نہ پڑ ھیں گے اسو قت تک قرآن پا ک پر عمل کر نا نا ممکن ہے اور ا نسان اسی و قت د نیا اور آ خرت میں کا میا بی حا صل کر سکتا ہے -جب اس کتا ب یعنی قرآن پا ک پر عمل کر ے گا اس کتاب کو ایک مثال سے بخو بی سمجھا جا سکتا ہے مثلا آپ کے پا س آ پ کے کسی دو ست کا خط آ ئے یا میسج آئے تو کیا آپ اسے پڑھ لینا کا فی سمجھیں گے ۔۔۔؟ یا اسے تعو یز بنا کر گلے میں لٹکا نا ضرو ر ی سمجھیں گے ۔۔۔؟ کیا ایسے ا نسان کو ز ہنی مر یض نہ سمجھا جا ئے گا ۔۔۔؟سمجھ دار ا نسان فو ر ی طور پر اسے سمجھنے کی کو شش کر ے گا کہ اس میں میر ے لیئے کیا پیغام ہے یا کسی ا یسے شخص کے پا س جا ئے گا جو وہ ز با ن جا نتا ہو -جو آ پ کو اس کے معنی و مطا لب سمجھا سکتا ہو -اسکے بعد ہی آپ اس دو ست کی کہی گئی با ت پر عمل کر سکیں گے ۔۔۔۔۔۔۔۔

دو ستو ۔۔۔۔! یہ کتاب قرآ ن پا ک بھی تمہا ری طر ف ایک دو ست کیطر ف سے بھیجا گیا خط ہے -ایک اتنا اہم پیغام ہے - جسے سمجھ لینے کے بعد آپ د نیا و آ خر ت کے تما م خزا نو ں کو پا سکتے ہیں درا صل قرآن پاک خزا نو ں کی کنجی ہے بد قسمتی سے مسلما ن اس کتا ب کی اللہ کی اس نعمت کی نا قدری کر رہے ہیں - جسکی و جہ سے د نیا میں بھی ر سوا ہو ر ہے ہیں -اور آ خرت میں بھی ان کا ٹکا نہ جہنم کے سوا کچھ نہ ہو گا صرف و ہی لو گ جنت میں جا سکیں گے جو قرآن و سنت پر عمل کر یں گے اسکو سمجھیں گے اور اسکو ا پنی ز ند گیو ں میں ان طر یقو ں اور ا صو لو ں کو دا خل کر یں گے اور یہ اللہ کی او لین شر طو ں میں سے ایک شر ط ہے کہ جب تک تم ا پنی ز ند گی کو جو تمہا رے پا س میر ی ا ما نت ہے میر ے بتا ئے ہو ئے ا صو لو ں کے مطا بق نہ گزا رو گے اس و قت تک تم جنت میں نہ جا سکو گے -قرآن پا ک ہدا ئیت کا سر چشمہ ہے بھٹکے ہو و ں کو ہدا ئیت سکھا تی ہے اور جو لو گ اس کتا ب یعنی قرآن پا ک کو سمجھ لینے کے با و جود اس پر عمل نہیں کر تے ۔۔۔۔تو جان لیجیئے کہ ان کے د لو ں میں شک ہے ،کھو ٹ ہے ،بیما ری ہے ،حقیقت میں ایسے لو گ منا فق ہیں جو کہتے ہیں کہ ہم جا نتے ہیں ۔۔۔مگر اس پر عمل نہیں کر تے وہ پر لے در جے کے ا حمق ہیں ۔۔۔۔ان سے بڑا بے و قوف کو ئی ہو ہی نہیں سکتا ۔۔۔۔ ایسے لو گ صیح معنو ں میں ذ ہنی مر یض ہیں ۔۔۔۔اور ا یسے ہی شک کر نے والے منا فقین کے کے خیا لا ت کی تر دید کر تے ہو ئے ا للہ تعا لی نے فر ما یا ہے کہ “یہ وہ کتا ب ہے جس میں کچھ شک نہیں “ جس کتا ب کی اللہ خود گو اہی دے ر ہا ہو کہ خا لصتا میرا کلا م ہے اور ا سمیں شک تک کر نے کی کو ئی گنجا ئش نہیں ۔۔۔۔۔تو پھر اسے ما ننے اور اس پر عمل نہ کر نے کی کیا و جہ با قی رہ جا تی ہے
Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: naila rani riasat ali

Read More Articles by naila rani riasat ali: 104 Articles with 110409 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
30 Sep, 2016 Views: 739

Comments

آپ کی رائے

مزہبی کالم نگاری میں لکھنے اور تبصرہ کرنے والے احباب سے گزارش ہے کہ دوسرے مسالک کا احترام کرتے ہوئے تنقیدی الفاظ اور تبصروں سے گریز فرمائیں - شکریہ