مسلمان اور دہشت گردی

(Dur Re Sadaf Eemaan, )
*ٌدہشت گردی* ایک ایسا لفظ جسے نہ جانے کیوں ہمیشہ سے مسلمانوں سے منسوب کیا جاتا ہے... جیسے دنیا میں کہیں کسی بھی جگہ اگر کوئی ننھا سا پٹاخہ بھی پھاڑا جائے تو اس میں بھی کسی کلمہ گو کا ہاتھ ہوگا....

یہ الگ بات ہے کہ مجھے ہی اس بات کا یقین نہیں کہ سچے مسلمان کبھی بھی دہشت گرد نہیں ہوتے... یہ وہ *عالمگیر صداقت* ہے جس سے پوری دنیا میں موجود دشمنانِ اسلام واقف ہیں....

اسلام وہ مذہب جو پھیلا اس نبی اکرم صلی اللہ علیہ والہ و سلم کی کی ذات مبارک سے جنھوں نے دشمنانِ اسلام، کفرانِ اسلام کو اس وقت بھی معاف فرمایا جب ان پر گرفت تھی... جب ان سے ان کے ان مظالم کا بدلہ جو انہوں نے مسلمانوں پر کیے تھے آرام سے لیا جا سکتا تھا.. لیکن آپ نے کو ئی سزا نہیں دی... سوائے معافی کے.... تو پھر یہ بیان کرنے کی تو ضرورت ہی نہیں کہ اسلام وہ دلنشیں مذہب ہے جو جس کے سورج کی تابناکی..پھیلی ہی امن سے....

اسلام وہ مذہب جس کے دشمن بھی اچھی طرح واقف ہیں کہ اسلام امن و سلامتی کا سکون و امان کا درس دیتا ہے.....

مگر میرا مقصد اسلام کی تعریف کرنا نہیں جو لوگ لفظ اسلام کو جانتے ہیں وہ اس لفظ اسلام کی عطا، وفا، جفا، نکھار، تابندگی، تابناکی، ..طاقت، قوت، عزت، اور حقوق کی پاسداری سے .. بھی خوب آشنا ہیں.....

میرا مقصد تو صرف اتنا سا ہے کہ؛ آخر مسلمانوں کو دہشت گردی سے کیوں منسوب کیا جاتا ہے؟؟؟؟؟ تو بات مختصر ہے صرف اتنی سی کہ جو اسلام کے دشمن ہیں اسلام سے خوفزدہ ہیں وہ ہی دشمنِ اسلام، دشمنوں کو دشمنی نبھانے کے لیے اسلام کے لبادے میں ملبوس کر کے بھیجتے ہیں....

تاریخ گواہ ہے.....کہ کیسے اسرائیل اور دیگر تمام دشمن عناصر کس طرح اسلام کی تعلیمات پر چھپ کر عمل کرتے ہیں اور کامیاب ہو جاتے ہیں.... شاید یاد نہیں آج اسلامی دنیا کے سب سے بڑے دشمن کو کہ کیسے ایک

اسرائیلی عورتیں مدد لی اور اس نے نبی کی قناعت پر عمل کیا..... تو آج وہ آدھی دنیا پر حاوی ہیں....اس کے علاوہ ہر جگہ خوف مسلم ہے اور یہی خوف انہیں مسلمان کو پست سے پست دیکھنے پر مجبور کر رہا ہے... یہی وہ خوف جس کا شکار وہ تمام مسلمان ممالک کے مظلوم.... برداشت کر رہے ہیں فلسطین. غزہ. شام برما.... میں صرف مسلمانوں پر ظلم کیوں؟؟؟؟؟
کیوں اتنی نفرت مسلمانوں سے اسلیے کیونکہ
یہ وہ ڈر ہے اسلام سے
جو ان کا تختہ بھی الٹ سکتا ہے اور انہیں تختہ دار پر لٹکا بھی سکتا ہے....

اور اس بات میں کسی بھی طرح کا شک نہیں کہ *حقیقی مسلمان* اور *دہشت گردی* دو متضاد باتیں ہیں جو کبھی ایک نہیں ہوسکتی *جو مسلمان تعلیمات اسلامی پر عمل کرتے ہوئے پانی نہیں بہاتا.... وہ مسلمان خون کیسے بہا سکتا ہے..؟؟؟؟؟*..

جس سچے مذہب نے خود کی جان لینے پر وعیدیں بیان کیں وہ مذہب کسی دوسرے کی جان لینے کو کیسے معاف کرسکتا ہے یا اجازت دے سکتا ہے؟؟؟؟
مسلمان قرآن کی تعلیمات پر چلتے ہیں اور
*```قرآن فرماتا ہے```*
_وہ شخص جو کسی مومن کو جان بوجھ کر قتل کرے تو اس کی سزا جہنم ہے جس میں وہ ہمیشہ رہے گا۔ اس پر اللہ کا غضب اور لعنت ہے اور الللہ نے اُسکے لیے سخت عذاب مہیا کر رکھا ہے۔(سورۃ النساء)_
اسلام وہ مذہب جو گالی دینے کی عزت خراب کرنے کی اجازت نہیں دیتا... . .

رہی بات ان تنظیموں کی جو کہنے کو تو مسلمان ہے پر کام اسلام کو بدنام کرنے والے کرتے ہیں چاہے پھر *طالبان* ہوں یا *القاعدہ* والے .. *داعش*.ہوں یا پھر کوئی اور تو ان کا تعلق اسلام سے نہیں بلکہ دشمنانِ اسلام سے ہوتا ہے... جو صرف إسلام اور مسلمانوں کو ہی نقصان پہنچا رہی ہیں....... تو کیسے ممکن ہے کہ *مسلمان* بھی ہوں اور دہشت گرد بھی نہیں درحقیقت یہ ہی اصل دشمن ِ اسلام ہیں.... مسلمانوں کی جان، مال عزت کو نہ صرف نقصان پہنچا رہے ہیں...بلکہ ان تمام اعداء کو خوشی سے بھی ہمکنار کررہے ہیں جو کبھی بھی مسلمانوں کی ترقی سے خوش نہیں... اسلام خودکشی کو حرام قرار دیتا ہے اور یہ خود کش حملوں کو جائز.... عجیب ہے نہ.... اسلام وہ مذہب ہے جو عورت کو عزت و احترام دینے کا حکم دیتا ہے.... خواہ کسی بھی مذہب کی ہو اور یہ مسلمان عورتوں کا ہی کھلونا سمجھتے ہیں.... ان کے نزدیک جو جہاد دراصل وہ *دہشت گردی *اور ان کے پسِ پشت جو ہیں وہی حقیقتاً دشمنان ِ اسلام وَمِن خَوف الإسلام ہیں....

اسلام صرف جان لینے دینے میں *امن* کا درس نہیں دیتا اسلام وہ خوبصورت مذہب ہے....

جو اسلام کے دامن میں رہنے والوں کو ہی نہیں کو ہی نہیں نوازتا... اسلام سے کسی بھی طرح کا حق نکلتا ہو تو اسے ملتا ہے..... تاریخ گواہ ہے...

اس لیے صرف اتنا سمجھنا کافی ہوگا کہ جو دہشت گرد ہیں وہ مسلمان نہیں.... جو دہشت گرد ہیں حقیقت میں ان کا کوئی مذہب نہیں.... کیونکہ دنیا کا کوئی مذہب برائی کا حکم نہیں دیتا... نہ ہی خون ریزی کو پسند نہیں کرتا... مگر یہ بات بھی اظہر من الشمس ہے کہ اسلام جیسا خوبصورت..پر امن، حقوق کی پاسداری کروانے والا اور کوئی مذہب نہیں لہذا جو داڑھی رکھ کر مسلمان بن کر اسلام پر انگلیاں اٹھواتے وہ سانجھی ِ مسلم کیسے ہوسکتا ہیں....؟؟؟؟؟؟
Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: Dur Re Sadaf Eemaan

Read More Articles by Dur Re Sadaf Eemaan: 49 Articles with 26227 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
05 Oct, 2016 Views: 630

Comments

آپ کی رائے

مزہبی کالم نگاری میں لکھنے اور تبصرہ کرنے والے احباب سے گزارش ہے کہ دوسرے مسالک کا احترام کرتے ہوئے تنقیدی الفاظ اور تبصروں سے گریز فرمائیں - شکریہ