برادرانِ ملت

(Muhammad Arshad Qureshi (Arshi), Karachi)
انہوں نے ’’برادرانِ ملت‘‘ کا لفظ ابھی کہا ہی تھا کہ سامنے سے ٹھاہ ٹھاہ کی آواز آئی اور وہ بایاں ہاتھ دِل پر رکھے ہوئے پیٹھ کے بل گِر پڑے۔ ان کے منہ سے آواز آئی، ’’اﷲ‘‘ پھر انھوں نے کلمہ تین مرتبہ پڑھا، اس کے بعد لیاقت علی خان کی زُبان سے رُک رُک کر یہ الفاظ نکلے پاکستان، پاکستان، خدا، پاکستان کا خدا حافظ۔ حملہ آور کے گولی چلاتے ہی قریبی لوگوں نے اسے پکڑ لیا منتشر ہجوم نے لاتوں، گھونسوں، ڈنڈوں اور برچھیوں کے اتنے وار کیئے کہ قاتل کے جسم کے ٹکڑے ٹکڑے ہوگئے ۔
Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: Muhammad Arshad Qureshi

Read More Articles by Muhammad Arshad Qureshi: 128 Articles with 80423 views »
My name is Muhammad Arshad Qureshi (Arshi) belong to Karachi Pakistan I am
Freelance Journalist, Columnist, Blogger and Poet.​President of Internati
.. View More
16 Oct, 2016 Views: 589

Comments

آپ کی رائے
Masha Allah bohoth umdah ...jazak Allah Hu Khairan Kaseera
By: farah ejaz, Karachi on Oct, 17 2016
Reply Reply
0 Like