بےحجاب

(Kulsoom Bashir, karachi)
رومیسہ حجاب لینے والی نیک لڑکی تھی اور اس کی پڑوسن مائرہ بےباک اور بےپردہ رہنے والی ۔ آج کسی کام سے دونوں کا اکٹھے بازار جانا ہوا۔ وہیں بازار میں ان کے پیچھے سے ایک لڑکے نے مائرہ کی اونچی اور تنگ قمیض دیکھ کر سیٹی مار کر اسے متوجہ کیا ۔ لیکن جب وہ ان کے سامنے کی طرف آیا تو رومیسہ کا حجاب اور وقار دیکھ کے شرمندہ ہوا اور چھیڑنے کا ارادہ ترک کر کے آگے بڑھ گیا ۔ آج مائرہ کو حجاب کی ضرورت اور اہمیت کا احساس ہوگیا تھا۔ وہ بےحجاب رہ کر خود ہی اپنی عزت اور وقار کے تار تار ہونے کی وجہ بنتی تھی ۔
Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: Kulsoom Bashir

Read More Articles by Kulsoom Bashir: 2 Articles with 1481 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
18 Oct, 2016 Views: 736

Comments

آپ کی رائے
Parday ka zikr Quran mai bhi hai. .. welldone
By: Farah, Karachi on Oct, 22 2016
Reply Reply
1 Like
True
By: shaista bashir, karachi on Oct, 21 2016
Reply Reply
1 Like
شکریہ
By: kulsoom bashi4, karachi on Oct, 22 2016
0 Like
True!well said...
By: Khuram Shahzad, Karachi on Oct, 19 2016
Reply Reply
1 Like
G bilkul aurat ka waqar uske hijaab me he.or society me is chez ki behad zarurat b he..aurat ko hijaab me rakhna mard pe depend karta he..isliye society k mardo ko khas tor par smjhna chahye k behijaab aurto ki hasiat kc he ..ye story parhkar i hope unko kuch sabak mila hoga..
By: islam khan, karachi on Oct, 19 2016
Reply Reply
1 Like
Thanks ☺
By: kulsoom Bashir , karachi on Oct, 20 2016
0 Like
True!
By: Khuram Shahzad, karachi on Oct, 19 2016
Reply Reply
1 Like
Thanku
By: kulsoom Bashir , karachi on Oct, 20 2016
0 Like