محدود لفظی فن و مہارت( 20لفظوں کی 20کہانیاں1تا20)

(Prof Talib Ali Awan, Sialkot)
 ٭ صف
ایک ہی صف میں کھڑے ہوگئے محمود و ایاز
ایک جنازہ پڑا،پہلی صفیں محمودوں کی تھیں،باقی ایازوں کیں۔
٭ بچے
گلی میں غریب بچے کھیل رہے تھے ،میں نے ڈانٹا ۔
آگے گیا،امیر بچے کھیل رہے تھے ،میں محظوظ ہوا۔
٭ فرق
چودھری نے مسجد میں 5000 روپے دئیے ،مولوی نے ڈھیروں دعائیں دیں۔
میں نے 100دئیے ،اعلان ہی نہیں ہوا۔
٭ حلال
میں گوشت لینے قصائی کی دکان پر پہنچا ، پوچھا:’’ حلال ہے نا؟‘‘
قصائی نے پیسے پکڑے ،پوچھا: ’’ حلال ہیں نا؟‘‘
٭ عمر
بس میں عورتیں دو اور سیٹ ایک ،جھگڑا ،کنڈیکٹر :
’’ باجی ! جس کی عمر زیادہ ہے بیٹھ جائے ۔‘‘
دونوں کھڑی رہیں ۔
٭ حاجی اور آجی
حاجی: جو حج کرے ،اسے سنبھال کر رکھے ،نیک رہے۔
آجی: جو حج کر لے مگر بد اعمالیاں نہ چھوڑے۔
٭ مشترک
استاد : ہندو مذہب میں مردے اور پاکستان میں سرکاری ریکارڈ جلانے میں کیا چیز مشترک ہے؟
پپو: حساب سے بچنا۔۔۔۔۔
٭ ٹیکس
جو ٹیکس نہیں دیتے انہیں ملک سے شکایت کا کوئی حق نہیں ۔
البتہ ملک پر حکومت کرنے کاحق ہے ۔
٭ ہومیو پیتھک
بعض لوگ ساری زندگی ہومیوپیتھک دوائی کی طرح گزار دیتے ہیں :
نہ کوئی فائدہ ،نہ نقصان ۔صدرِ پاکستان کی طرح ۔
٭ خوشامد
نصیحت وہ سچ ہے جسے ہم غور سے نہیں سنتے۔
خوشامد بدترین دھوکہ ،جسے ہم پوری توجہ سے سنتے ہیں ۔
٭ میک اپ
ایک دلہن شادی کے دن بڑی خوبصورت لگ رہی تھی ۔
صبح اٹھی ،منہ دھویا ،اب وہ خوفصورت لگ رہی تھی ۔
٭ شرم آئندہ
میرا دوست ایم فل میں فیل ہو گیا ۔میں نے پوچھا :’’ شرمندہ نہیں ہوئے ۔‘‘
دوست بولا:’’ نہیں ،شرم آئندہ ہوں۔ ‘‘
٭ عجیب لوگ
سیدھی بات کرو تو بدتمیز،بااخلاق ہوں تو سیاسی،
اختلاف کریں تو بے ادب اور لحاظ کریں تو منافق کہلائیں ۔
٭ سیلفی
دادی : علی بیٹا ذرا دیکھنا تو لڑکی کو فالج ہورہا ہے ۔
علی ـ: نہیں دادی وہ سیلفی لے رہی ہے ۔
٭ نوبل انعام
اگر آپ نوبل انعام یا دیگر بین الاقوامی ایوارڈ حاصل کرنا چاہتے ہیں
تو پاکستان یااسلام کے خلاف کچھ لکھیں ۔
٭ ضد
ساس نے اپنی بہو کی ناک رگڑوانے اور اسے سبق سکھانے کے چکر میں
اپنے ہی بیٹے کو مروا دیا ۔
٭ عقل کا صدقہ
مجھے جب عقل کا صدقہ و خیرات نکالنا ہوتو
کسی جاہل سے سیاسی ایشو پر بحث کر لیتا ہوں۔
٭ ریٹ
رمضان المبارک کے آغاز سے ہی بسم اﷲ کریانہ سٹور،
الحاج جنرل سٹور اور مدینہ بیکری پر ریٹ بڑھ جاتے ہیں ۔
٭ قدر
ایک شخص جرابیں پہنے ،جوتا سر پر ۔
وجہ پوچھنے پر اس نے بتایا:’’ جوتا میرا ہے ،جرابیں کسی کی ہیں ۔‘‘
٭ بیوی
جہاں بھی جاؤ بیوی کے قصے ہیں۔
کوئی لاکر رو رہا ہے ،کوئی لانے کے لئے رو رہا ہے ۔
Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: Prof. Talib Ali Awan

Read More Articles by Prof. Talib Ali Awan: 50 Articles with 53413 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
19 Oct, 2016 Views: 2036

Comments

آپ کی رائے
مجھے اتنی اچھی لگی میں نے کافی کاپی کی ہیں
By: عبدالباسط مغل, مانسہرہ on Jan, 12 2017
Reply Reply
10 Like
Bundles of Thanks for appreciating Janab Abd-ul Basit Sb
By: Prof. Talib Ali Awan, Sialkot on Jan, 13 2017
5 Like
#Superb.._So_CuTe.. <3
By: UsaMa, Lahore on Dec, 31 2016
Reply Reply
6 Like
میرے خیال میں پروفیسر صاحب نے جو کچھ بھی لکھا ہے اس کو “بیس الفاظ کی کہاوتیں“ تو کہا جاسکتا ہےکہانیاں کم از کم نہیں۔۔۔۔
By: Abdullah, Karachi on Nov, 22 2016
Reply Reply
0 Like
محترم جناب پروفیسر صاحب! مدلل اور مفصل جواب کا بہت بہت شکریہ ۔ اب بات یقیناً واضح ہو گئی ہے اور یہ بھی کہ لفظی کہانی میں الفاظ کی قید اور درست گنتی بہت اہمیت رکھتی ہے اسے نظرانداز نہیں کیا جا سکتا ۔ اگر ایک مخصوص صنف کے تحت طبع آزمائی کی جا رہی ہے تو اس کے ضابطے کی پابندی ہونی چاہیئے ورنہ غیر مقید الفاظ میں لکھنے کے لئے تو میدان کُھلا ہؤا ہے ۔
ھماری ویب پر فی الحال یہ سلسلہ چونکہ خالصتاً لفظوں کی ایک مقررہ تعداد پر مبنی تحریروں کے درمیان مقابلے کا ہے لہذٰا اس میں قطعی کوئی رعایت نہیں ہونی چاہیئے ۔ اکثر ہی کہانیوں میں لفظوں کی تعداد کا لحاظ نہیں رکھا گیا ہے ۔ حتیٰ کہ موسٹ ویوڈ کی لسٹ میں جگہ بنانے والی کہانیوں میں بھی لفظوں کی گنتی درست نہیں ہے ۔ ایک کہانی 93 لفظوں اور ایک 105 لفظوں پر مشتمل ہے ۔ اسی طرح کہیں دو لفظوں کو ملا کر لکھا گیا ہے جو درست ہے مگر وہ ایک لفظ نہیں کہلائے گا ۔ مثلاً الحمد اللہ کو ایک لفظ کیسے شمار کیا جا سکتا ہے؟ یہ دو لفظوں پر مشتمل باقاعدہ ایک کلمہ ہے ۔ تو لکھنے والوں کو ان باتوں پر توجہ دینے کی ضرورت ہے ۔ ورنہ تو مقابلہ بھی ریوڑی بتاشہ ہو کے رہ جائے گا ۔
By: Rana Tabassum Pasha(Daur), Dallas, USA on Nov, 01 2016
Reply Reply
2 Like
محترم جناب رانا تبسم پاشا صاحب!
سب سے پہلے تو مدلل اور خوبصورت کمنٹس کرنے کا بہت بہت شکریہ.
الحمداللہ! میں کسی بھی باقاعدہ فورم پر بیس لفظوں کی کہانی لکھنے والا پہلا لکھاری ہوں. باقی میں آپ کی بات سے بلکل متفق ہوں کہ لفظی کہانی میں الفاظ کی گنتی یا قید بڑے معنی رکھتی ہے.
جہاں تک آپ کے سوال کا تعلق ہے تو حرف "و" کوئی لفظ نہیں ہے بلکہ یہ اردو گرائمر کی رو "حرف عطف" ہے. لہذا جب کوئی سے دو الفاظ کے درمیان یہ حرف استعمال ہوگا تو وہ دو ہی الفاظ ہونگے، مثال کے طور پر دل و جان، طول و عرض وغیرہ.
جہاں تک حرف" آ " کا تعلق ہے تو بیشک یہ حرف بذات خود اپنے معنی رکھتا ہے. مگر جب یہ کسی لفظ کے ساتھ لگے گا تو ایک ہی لفظ تصور کیا جائے گا، مثال کے طور پر :
وہ لاہور سے آگیا ہے. اس میں آگیا سے مراد ایک ہی لفظ ہے جو لفظ"آنا" سے ماخوذ ہے.
By: Pro. Talib Ali Awan , Sialkot on Oct, 27 2016
Reply Reply
1 Like
بیس لفظی کہانیاں نہ تو پہلے کبھی نظر سے گذری ہیں نہ ہی ان کا ذکر سنا ہے ۔ پہلی بار پروفیسر صاحب ہی کی قلمی کاوش سے محفوظ ہونے کا اتفاق ہؤا ہے ۔ اگر انہوں نے ہی محدود لفظی مختصر نویسی کی داغ بیل ڈالی ہے تو یقیناً ان کا نام نثر کی اس نئی صنف کے خالق کے طور پر ادب کی دنیا میں ہمیشہ یاد رکھا جائے گا ۔ سو لفظوں پر مشتمل اپنی ایک تحریر میں ہم ناچیز نے ایک سوال پیش کیا ہے ۔ دو لفظوں کے درمیان آنے والا حرف " و " اور " آ " یعنی حرف واحد الف ، مدہ کے ساتھ ، لفظ شمار ہونگے یا نہیں؟ چار دن گذر چکے ہیں ابھی تک تو کہیں سے کوئی جواب نہیں آیا ہے ۔
آپکے اس مضمون کی پہلی کہانی میں حرف " و " بیس لفظوں کے علاوہ ہے ۔ جبکہ ہماری رائے کے مطابق اسے آدھا لفظ شمار کیا جانا چاہیئے ۔ اگر لفظوں کی ایک معین تعداد پر مشتمل کسی تحریر میں یہ حرف استعمال ہو رہا ہے تو اسے ایکبار اور یا " آ " استعمال کر کے ایڈجسٹ کیا جانا چاہیئے ۔ کیونکہ معاملہ درست گنتی اور ایک خاص طرزِ تحریر کا ہے لہذا اس میں کوئی رعایت نہیں ہونی چاہیئے ۔ آپ کیا کہتے ہیں؟
By: Rana Tabassum Pasha(Daur), Dallas, USA on Oct, 26 2016
Reply Reply
1 Like
قیمتی کمنٹس کرنے کا بہت بہت شکریہ
جناب شاہد مبارک صاحب
جناب خادم علی صاحب
By: Pro. Talib Ali Awan , Sialkot on Oct, 25 2016
Reply Reply
1 Like
نہایت زبردست اور منفرد کوشش ہے۔
By: Shahid Mubarik, Sialkot on Oct, 24 2016
Reply Reply
1 Like
La jawab
By: Khadim Ali , Jeddah KSA on Oct, 24 2016
Reply Reply
1 Like
محترم جناب ملک خضر اعوان صاحب
جناب محمد علی صاحب
جناب ایم علی صاحب
ولید خان صاحب
آپ تمام احباب کا قیمتی کرنے کا بہت بہت شکریہ۔۔۔۔۔
By: Prof. Talib Ali Awan, Sialkot on Oct, 22 2016
Reply Reply
2 Like
It's really an achievement.
20 words story....... unbelievable.
By: Muhammad Ali, Islamabad on Oct, 21 2016
Reply Reply
2 Like
Very impressive !
By: M Aamir, Lahore on Oct, 21 2016
Reply Reply
1 Like
Zabardast Janab
By: Waleed Khan, Daska on Oct, 21 2016
Reply Reply
1 Like
ان تمام احباب کا بہت بہت شکریہ جنہوں نے اپنے قیمتی کمنٹس سے نوازا۔
By: Pro. Talib Ali Awan, Sialkot on Oct, 21 2016
Reply Reply
3 Like
Well done brother. Keep it up, We all proud of you.
By: Liaqat Ali Awan, Sialkot on Oct, 20 2016
Reply Reply
1 Like