رمزِ دیرینہ

(Khuram Shahzad, Karachi)
سُرخ جوڑے میں جڑے ہوئے موتی، تمہیں بہت اچھے لگ رہے ہوں گے۔ نیم وا کھڑکی سے کمرے میں بہتی ہوئی چاندنی میں خوب چمک بھی رہے ہوں گے۔ پہلے پہل ایسا ہی ہوتا ہے۔ گزرتے وقت کے ساتھ ساتھ یہ موتی ،یہ نگینے تمھارے جسم میں جَڑ جائیں گے ۔تمہیں اپنے جسم کی عریانی اچھی لگے گی۔ مگرپھر وہ دن آئیں گے جب کروٹ کروٹ یہ موتی تمہیں چھبتے رہیں گے ۔اس رمز میں پوشیدہ راز کی کھوج میں جب تم باطن کے سفر پر نکلو ،مجھے آواز دینا اگرچہ تم نے دیر کردی ہے مگر مجھے تمہارا انتظار کرنا ہے!
Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: Khuram Shahzad
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
22 Oct, 2016 Views: 418

Comments

آپ کی رائے