بلی نماز پڑھ رہی ہے

(Muhammad Atif Imran, Chowk Azam, Layyah)
ضرورت اس امر کی ہے کہ اندھی تقلید کرنے کی بجائے کسی بھی چیز پر یقین اور شیئر کرنے سے پہلے اس بات کو یقینی بنا لیاجائے کہ آیا یہ سچ ہے یا اس کی کوئی حثیت ہے بھی کہ نہیں۔
آیئے جناب،
سوشل میڈیا کی دنیا میں آپ کو خوش آمدید
سوشل میڈیا کی اس وسیع دنیا ،جہاں آپ کو کچھ کام کی باتیں ملے گی وہیں آپ کو انواع اقسام کی خرافات کا بھی سامنا کرنا پڑے گا۔ یہاں آپ کو کبھی کوئی بلی کسی ویڈیو میں نماز پڑھتی نظر آئے گی، کبھی کوئی پرندہ سجدہ کرتا دکھائی دے گا۔

کبھی خانہ کعبہ کے اوپر ایک فرشتہ نمودار ہوگاجو خود بیت اللہ میں کسی کو دکھائی نہیں دے گامگر ہم فیس بکی مسلمانوں کو نظر آئے گا۔

کبھی مائیکل جیکسن زین بھائی کی آواز میں مشہور انگریزی حمد (Say thanks to ALLAH) گا رہاہوگا اور سب اندھا دھند سبحان اللہ سبحان اللہ کہہ رہے ہوں گے۔

یہیں کہیں کسی پوسٹ پوسٹ میں آپ کو حضرت عائشہ رضی اللہ عنہاکی سلائی مشین بھی دکھائی دے گی،
کیا کہا نہیں نظر آئی؟؟

ارے بھائی سبحان اللہ اور ماشااللہ کے کمنٹس ہٹا کر دیکھیں یہیں کہیں پائی جائے گی۔

فیس بکی دنیا میں ہی کبھی کسی دیوار یا صفحے کی کھدائی کریں تو یہ بات بھی آپ کے علم میں آئے گی کہ مشہور خلا باز نیل آرم اسٹرانگ جب چاند پر گئے تو انہیں وہاں صرف ایک آواز سنائی دی جو کہ اذان کی آواز تھی اور انہوں نے چاندسے واپسی پر فی الفور اسلام قبول کرلیا۔

اب اس تفصیل میں کون جائے کہ چاند پر فضا (Atmosphere) زمین جیسا نہیں اور وہاں آواز سنائی نہیں دیتی ، نہ ہی کوئی اس تحقیق میں پڑے گا کہ اس امریکی خلا باز کے چاندپر جانے اور نہ جانے کے بارے میں بھی دو رائے ساتھ ساتھ ہیں۔

کبھی بدھوں کے عظیم رہنما دلائی لاما ہمارے حضور پاک صلی اللہ علیہ وسلم کی عظمت کا اعتراف کرتے ہیں اور کہتے ہیں کہ اسلام امن کا دین ہے تو ہم اپنا ذہنی توازن کھو بیٹھتے ہیں اور کہتے ہیں کہ اس ویڈیو کو اتنا شیئر کرو کہ تمام مسلمانوں کو اس بات کا یقین ہوجائے۔

کوئی مجھے یہ بتائے کہ ہمارے عقیدے اس قدر کمزور کیوں ہیں کہ ہمیں محمد صلی اللہ علیہ وسلم کی ذات اقدس کی عظمت کی گواہی ان غیر مسلموں سے لینی پڑے گی؟

یہیں آپ کو سچے اور پکے مسلم بھائیوں کی طرف سے پیش کی گئی وہ پوسٹ بھی نظر آئے گی کہ اگر آپ نے اگے شئیر نہ کی تو آپ دائرہ اسلام سے خارج ہوجائیں گےاور اگر ماشااللہ اور سبحان اللہ نہ کہا گیا تو آپ دنیا کے سب بڑے کنجوس کہلائے جائیں گے یا پھر لعنتی قرار دیئے جائیں گے۔

اللہ کے بندوکچھ تو زور اپنے ذہن پر بھی ڈالا کرو کہ اسےزنگ نہ لگ جائے،اس بات سے کسے انکار ہے کہ اللہ کی یہ مخلوق چرند پرند سب اس کی حمد میں مصروف ہیں مگر ان کا طریقہ ہم سے مختلف ہے، نماز ہم پر فرض ہے نہ کہ ان بلیوں پر جنہیں مسلمان بنانے کی تگ ودو میں آپ لگے ہوئے ہیں۔

کسی چیز کو شیئر کرنے یا نہ کرنے سے لوگ کافر ہونے لگیں تو ہوگیا کام ، ہم تو دائرہ اسلام سے خارج قرار پائیں گے پھر۔
Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: Muhammad Atif Imran
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
24 Oct, 2016 Views: 627

Comments

آپ کی رائے
BUHT ACHHA KIA AP NY IS MOZU PR LIKH KR JOP LOG SOCHY SAMJHY BGHER JZBATI HO KR SHARE KRNY MEIN SAWAB AUR NA KRNY MEIN KHUD KO GUNHEGAR GUMAN KRNY KA SOCHTAI HAIN KM SY KM AENDA SOCHAENGY ZRUR IS AMAL KO ROKNA CHASHYE APNY AQIDAY O MAZHAB KO YUN PHELANA KOE DANISHMANDI YA DEEN KI KHIDMAT NAHI
JAZAK ALLA HO KHAIRAN KASEERA
By: uzma ahmad, LAHORE on Oct, 25 2016
Reply Reply
0 Like
hahahhahahah aksar hum bhi apnay yaar doston ko yahi sumjhatay rehtay thay kay bhi aqal kay andho zara aqal say bhi kaam lay lo ...jis per humay achi khasi sunnay ko mil jati thin ab band kerdiya hay ... agar koyee post daikhnay may ati bhi hay to khamooshi say guzar jatay hain .... aap nay sahi kaha kay aqal ka istemal kerlaina cha yai magar aqaid ki kumzori or peeri fakheeri may phunsi humari yai khom aqal say ziyada face books ki oout patang posts per ziyada yaqeen rakhti hay ..... mahawra hay na kay aqal bari ya bhains ab isay zara termeem kerkay yun parha jai kay aqal bari ya facebook to saray facebook ko bara kahin gay .... Jazak Allah HU Khairan kaseera
By: farah ejaz, Karachi on Oct, 24 2016
Reply Reply
0 Like
very good agree with u 100% MERA B YEHI NZRYA HAI NZRANDAZ KRDENA AISI POSTS YEHI BEHTR HAI AQAL WALY BINA SOCHAI SAMJHY HAN MEIN HAN MILATAI HAIN NA SHARE KRTAI HAIN MEIN TAU BATOR E KHAS BLACKMAILING WALI POSTS KO SKIP KRJATI HOON NO COMMENT NO SHARE NO LIKE
By: uzma, Lahore on Oct, 25 2016
0 Like
السلام علیکم عزیز بھائی

درست لکھا ہے آپ نے ... اکثر لوگ جذباتیت میں
اور بنا تحقیق کے جانے کیا کچھ شئیر کرتے رہتے ہیں

اللہ آباد و بے مثال رکھے آپ کو ... آمین صد آمین
By: Seen Noon Makhmoor (س ن مخمور), Karachi on Oct, 24 2016
Reply Reply
0 Like