مندے میں چندہ

(Nusrat Yousuf, )
یار تم لوگوں کو چین نہیں مندے میں بھی چندہ مانگتے ہو، ہتک آمیز
جواب سن کر سوالی کا چہرہ متغیر ہوا، وہ لوٹ جانا چاہتا تھا لیکن
اُمت کا بہتا لہو اس کو گھنٹہ بھر منتیں کرواتا رہا، بلا آخر وہ کامیاب
ہوتا ممنون نگاہوں سے چندہ کی رسید تھماتا چلا گیا۔
اس کے جاتے ہی وہ بھی اُٹھا ،باہر گاڑی تک پہنچا ،
کسی اور نے سوال کیا ،اب کی بار سوالی دیکھ کر وہ دہشت زدہ
تھا، خاموش لب، پھیکے چہرے اور ساکت حوصلے
کے ساتھ اُس نے ایک اشارے پر کئی سو گنا
چندہ مندے میں دیا تھا۔
Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: Nusrat Yousuf

Read More Articles by Nusrat Yousuf: 16 Articles with 9289 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
25 Oct, 2016 Views: 670

Comments

آپ کی رائے
its awesome....real picture of human nature.
By: humera, Karachi on Oct, 26 2016
Reply Reply
0 Like
Touching the wound
By: farhat tahir, karachi on Oct, 26 2016
Reply Reply
0 Like
Excellent Piece of writing... Heart wrenching Story.. :(
By: Saleha Siraj, Karachi on Oct, 25 2016
Reply Reply
0 Like