آخر کب تک۔۔

(Muhammad Yousuf Rahi, Hyderabad)
بھائی آلو، پیاز، لہسن ، ادرک ، ہری مرچ، دھنیا اور پودینہ دے دو۔
مجھے کام پر جانا ہے جلدی کرو ۔
گڈو نے سبزی والے سے کہا ۔
ابھی گڈو سبزی کی تھیلی لے کر مڑا ہی تھا کہ زوردار دھماکہ ہوا ۔
اور گھر کا اکلوتا کمانے والا گڈو جس کی عمر کمانے کی نہیں ،
اسکول جانے کی تھی ،دہشتگردی کی نظر ہوگیا۔
آخر کب تک اِس طرح گھروں کے گھر اُجڑتے رہیں گے ۔
کب تک حکومت تعزیت کے دو الفاظ بول کر زخمیوں اور مرنے والوں کے ورثا کو رقم دے کر اِنہیں چپ کرواتی رہے گی ۔
آخر کب تک میرے یاروں۔
Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: Muhammad Yousuf Rahi

Read More Articles by Muhammad Yousuf Rahi: 23 Articles with 11663 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
27 Oct, 2016 Views: 550

Comments

آپ کی رائے