رکشہ ڈرائیور۔۔۔

(Muhammad Noman Yousuf, Hyderabad)
رکشہ ڈرائیور" :تمہاری بہن کو بیٹا ہوگا"۔
" آپ کو کیسے پتا؟" ۔میں نے چونکتے ہوئے پوچھا۔
رکشہ ڈرائیور" : بیٹا بات بہت لمبی ہے لیکن ہاں جب بیٹا ہوجائے تو دعا میں یاد ر کھنا"۔
میں آپی کو گھر چھوڑ کر واپس آرہا تھا اور آپی اُس دوران اُمید سے تھی ۔
" آپ کے کتنے بچے ہیں؟"۔ میں نے پوچھا ۔
" میری صرف ایک بیٹی ہے ,اور بس۔دوسری شادی بھی کی مگر اولاد نہ ہوئی"۔
آج جب آپی کو بیٹا ہوا تو مجھے وہ رکشہ ڈرائیور اچانک یاد آگیا ،آخر اُسے اِس بات کا علم کیسے تھا اور وہ کونسی بات تھی جو لمبی تھی۔
Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: Muhammad Nouman

Read More Articles by Muhammad Nouman: 2 Articles with 1053 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
27 Oct, 2016 Views: 577

Comments

آپ کی رائے