سو لفظوں کی کہانی - " دوغلا پن "

(عائشہ چودھری, کراچی)
مہمان خصوصی کی جذباتی آواز پورے ہال میں گونج رھی تھی، ساتھ ہی تالیوں کی۔

" اسلام میں اولاد میں برابری کرنا آیا ہے چاھے بیٹا ھو یا بیٹی"

"دونوں کو یکساں حقوق حاصل ہیں۔"

"تاکیدا کہا گیا ہے اپنی اولاد کا احترام و اکرام کرو،انہیں اچھے آداب سکھائو"

" گھر میں جب کوئی چیز لائو پہلے بیٹی کا حصہ الگ کرو پھر بیٹے کو دو۔"

ہال تالیوں سے گونج اٹھا۔ اک دم انکا اسسٹنٹ تقریر کے زیر اثر بولا " میم آپ پوتی کی دادی بن گئیں۔" اور خوبصورت چہرے سے چھلکتی نفرت سب نے دیکھی اور انتقام کی آگ بھی۔
Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: عائشہ چودھری
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
27 Oct, 2016 Views: 501

Comments

آپ کی رائے