(100 لفظوں کی کہانی ۔۔۔۔غربت کا انجام)

(Nizam Uddin, Shangla)
یتیم رہ جانے والے والے انتہائی غریب احمد کی جب پچیس سال کی عمر میں شادی ہوگئی تو دس فٹ مربع مکان میں صبح وشام کے تلخ لمحات گنتے ہوئے آٹھ سال بعد اس کی گود میں چار پیدائشی نابینا بچے موجود تھے۔ جب اس کو بیوی بچوں کے علاج اور کھانے پینے کے لیے کچھ نہ ملا تو اس نے اپنے سمیت تمام اہل خانہ کو ابدی نیند سلاتے ہوئے یہ جملے پاس رکھ دیے کہ’’میرے اردگرد سوٹ پہن کر مرغن غذائیں کھانے والو! اور سڑک کے کنارے درخت لگا کر خوبصورتی کے دعویدار حکمرانو! تمہیں میری زندگی اور موت دونوں مبارک ہو‘‘
Rate it:
Share Comments Post Comments
Total Views: 1318 Print Article Print
About the Author: Nizam Uddin

Read More Articles by Nizam Uddin: 14 Articles with 7951 views »
Columnist / Reasercher / Story Writer.. View More

Reviews & Comments

ALLAH HO AKBAR........ALLAH pak se dua ha k ALLAH pak maeyus kr dene wali gareebi kise ko na de or gharoor main mubtala kr dene wala maal kise ko na de ....
By: shohaib haneef , karachi on Feb, 15 2018
Reply Reply
0 Like
Language: