جنت کو رسوا کیا۔۔

(Imran Mughal, )
 سردیوں کی رات تیسری بار ماں اٹھی اور بیٹے کو صاف کیا اور پھرپیار کیا اور دیر تک اس کے چہرے کو دیکھ کر مسکراتی رہی۔ وقت جلدی سے گزرتا گیا اور بیٹا جوان ہوگیا۔اور ڈاکٹر بن گیا۔آج ماں بیمار ہوئی تو بیٹے نے ماں کو کہا امی آج رات آپ کے کھانسنے کی وجہ سے میں ساری رات آرام سے سو نہیں پایا۔وہ ماں جو کئی راتیں بیٹے کی لئے جاگی تھی آج بیٹا صرف ایک رات ماں کی کھانسی کی آواز برداشت نہیں کر سکا۔ وہ ماں جس کے قدموں میں جنت ہوتی ہے۔
Rate it:
Share Comments Post Comments
Total Views: 3494 Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: MUHAMMAD IMRAN ZAFAR

Read More Articles by MUHAMMAD IMRAN ZAFAR: 27 Articles with 16649 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>

Comments

آپ کی رائے
Allah hamain hadiyat de. Aameen
By: Usman , Lahore on Jan, 14 2020
Reply Reply
0 Like
Imran Mughal,
haqiqt likhe ha ap ni...hum Maa bap ki sari zindagi bhi khedmat karty rahain to bhi hum un ky ek din k bhi asan nhi chuka saktay ......ALLAH pak maa bap ki na farmani se bachae ameen,, or ALLAH PAK hum sub ko maa bap ki khedmat krtay rehne ki tofiq ata farmae ameen .
By: shohaib haneef , karachi on Feb, 15 2018
Reply Reply
1 Like
very nice
By: umama khan, kohat on Jan, 03 2017
Reply Reply
0 Like
Language: